Book Name:Karamaat e Farooq e Azam رضی اللہ تعالیٰ عنہ

قِیام کروں۔(یعنی رات بھر نفلیں پڑھوں )۔ (موطّا امام مالک ج۱ص۱۳۴حدیث۳۰۰)

میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!دیکھا آپ نے !سیِّدُنا عُمَرفاروقِ اَعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ نے گھر جا کر خبر نکالی، اِس رِوایت سے یہ بھی معلوم ہوا کہ شب بھر نوافِل پڑھنے یا اجتِماعِ ذِکر و نعت یا سنّتوں بھرے اجتماع میں رات گئے تک شرکت کرنے کے سبب صُبح کی نَماز قضا ہو جانا کُجا اگرفَجرْ کی جماعَت بھی چلی جاتی ہو تو لازِم ہے کہ اِس طرح کے مُستَحبّات چھوڑ کر رات آرام کرلے اور باجماعَت نَمازِفَجر ادا کرے۔

محبوبِ فاروقِ اعظم

فرمانِ فاروقِ اَعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ: مجھے وہ شخص محبوب(یعنی پیارا) ہے جو مجھے میرے عیب بتائے۔(الطبقات الکبری لابن سعد ج۳ص۲۲۲)

شَہْد کا پیالہ

حضرت ِسیِّدُنا عُمَرفاروقِ اَعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کی خدمت میں شَہْد کا پیالہ پیش کیا گیا ، اُسے اپنے ہاتھ پر رکھ کر تین مرتبہ فرمایا :’’ اگر میں اُسے پی لوں تو اس کی حلاوت (یعنی لذّت و مٹھاس) ختم ہو جائے گی مگر حساب باقی رہ جائے گا۔‘‘پھر آپ نے کسی اور کو دے دیا ۔(الزھد لابن المبارک ص۲۱۹)

فانی دنیا کانقصان برداشْتْ کر لیا کرو

امیرُالْمُؤمِنِین، حضرت ِسیِّدُنا عمر فاروقِ اعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ فرماتے ہیں : میں نے


 

 



Total Pages: 48

Go To