Book Name:Meethay Bol

شرمندَگی یا گناہوں کے  خَدشات سے بچایئے ۔ مَثَلاً{1}ہاں بھئی کیا ہو رہا ہے ! {2}یار! آج کل دُعا وُعا نہیں کرتے ! {3}ارے بھائی ! ناراض ہو کیا ؟ {4}یار!لگتا ہے آپ کو مزا نہیں آیا!{5} یہ گاڑی کتنے میں خریدی ؟{6} کس سال کا ماڈَل ہے ؟   {7} آپ کے عَلاقے میں مکان کا کیا بھاؤ چل رہا ہے ؟ {8}یار!مہنگائی بَہُت زیادہ ہے {9} فُلا ں جگہ پر موسِم کیسا ہے ؟  {10} اُف ! اتنی گرمی ! {11} آج کل تو کڑ کڑاتی سر دی ہے {12} نہ جانے یہ بارش اب رُکے گی بھی یا نہیں !{13}ذرا بارش آئی کہ بجلی گئی! {14}آپ کے یہاں بجلی تھی یا نہیں ؟ وغیرہ وغیر ہ ۔ عُمُوماً مُتَذَکَّرہ (مُ ۔ تَ ۔ ذَک ۔ کَرَہ) کلمات اور اس طرح کے بے شمار فِقرات بِلا ضَرورت بولے جاتے ہیں  ۔ تاہم اس طرح کے جملے بولنے والے کے مُتَعلِّق کوئی بُری رائے قائم نہ کی جائے ، بلکہ حسنِ ظن ہی سے کام لیا جائے کہ ہو سکتا ہے جو بات فضول لگ رہی ہے اِس میں قائل کی کوئی مصلحت ہو جو میں نہیں سمجھ سکا ۔ بِالفرض وہ سُوال یا جملہ فُضُول بھی ہو تب بھی قائِل گنہگار نہیں ۔  

حج سے لوٹنے والے سے فُضُول سُوالات کی 13مثالیں

          سفرِ مدینہ سے لوٹنے والے حاجیوں سے بھی اکثر دوست اَحباب طرح طرح کے غیر ضَروری سُوالات کرتے ہیں ان کی 13 مثالیں مُلاحَظہ فرمائیے :  {1}سفر میں کوئی تکلیف تو نہیں ہوئی؟{2}بھیڑ توبَہُت ہوگی! {3} مہنگائی تو نہیں تھی؟ {4}مکان صحیح ملایا نہیں ؟ {5}گھر حَرَم سے دور تھا یا قریب ؟ {6} وہاں موسِم کیسا تھا؟{7}زِیادہ گرمی تو نہیں تھی؟{8}روزانہ کتنے طواف کرتے تھے ؟ {9}کتنے عُمرے کئے ؟{ 10}مکّے میں میرے لئے خوب دعائیں مانگی یا نہیں ؟{11}مِنیٰ میں آپ کا خیمہ جَمرات سے قریب تھا یا دور؟ {12}مدینے میں کتنے دن ملے ؟{13}مدینے میں میرا نام لیکرسلام کہا یا نہیں ؟ جن سوالات کی مثالیں دی گئیں وہ اگر چِہ ناجائز نہیں تاہم پوچھنے سے پہلے اس کی مصلحت پر غور کرلیجئے ، اگر حاجت نہ ہو تو نہ پوچھئے کیوں کہ ان میں بعض سُوالات حاجی کو شرمندہ کرنے والے ، بعض تَرَدُّد میں ڈالنے والے اور بعض کے جوابات میں اگر اِحتیاط نہ کی گئی تو جھوٹ کے گُناہ میں پھنسانے والے ہیں ۔ لہٰذ ا’’ ایک چُپ ہزار سکھ‘‘

بُرے یاگناہوں بھرے بکواسوں کی چار مثالیں

          بعض باتونی لوگ بِلا تحقیق گناہوں اور تہمتوں بھرے جُملے بولنے سے بھی گریز نہیں کرتے ، اس کی چار مثالیں سنئے : {1}ہمارا سارا ہی خاندان ( یا سارا گاؤں ) بدمذہب ہو گیا ہے ایک میں ہی بچا ہوا ہوں (حالانکہ عموماً ایسا نہیں ہوتا، بڑے بوڑھے ، خواتین اور بچّے اکثر محفوظ ہوتے ہیں ) {2} ہمارے سارے ہی سرکاری افسر رِشوَت خورہیں {3}الیکڑک سپلائی والے سب کے سب بد معاش ہیں (معاذاللہ ) {4}حکومت میں سب کے سب چور بھرے ہیں وغیرہ ۔

بَقر عید  پر کئے جانے والے فُضُول سُوالات کی 19 مِثالیں

          بقرعید کے موقع پر بِغیر لینے دینے کے کئے جانے والے فُضول سُوالات کی مثالیں مُلاحَظہ فرمائیے :  {1}ہاگائے لینے کب جائیں گے ؟{2}آج کل تو مَنڈی تیز ہوگئی ہو گی!{3}ہاں بھئی ! گائے کتنے میں لائے ؟ {4} یار! گائے ہے تو بڑی جاندار! {5}کتنے دانت کی ہے ؟ {6} ٹکّر تو نہیں مارتی؟ {7}چلا کرلائے یاسُوزُوکی میں ؟ {8}سُوزُوکی والے نے کتنا کرایہ لیا؟ {9}کب کٹے گی؟{10}قصّاب وقت پر آیا یا نہیں ؟ {11}قصاب چُھری پھیر کر چلاگیا پھر بڑی دیر سے آیا {12}ہاں یار! قَصّاب لوگ



Total Pages: 17

Go To