Book Name:Allah Walon Ki Batain Jild 1

تصانیف :  

            آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ کی زندگی درس وتدریس اور تصنیف وتالیف میں   گزری ۔ حضرت سیِّدُنااَحمد بن محمد بن مردویہ  رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہفرماتے ہیں   کہ ’’  حضرت سیِّدُناحافظ اَبُوْنُعَیْمرَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہاپنے وقت کے مرجع الخلائق تھے  ۔  دنیامیں   آپ سے زیادہ مستندحافظ الحدیث کوئی نہ تھاجتنے بھی حُفَّاظِ حدیث ہوتے آپ کی بارگاہ میں   حاضر رہتے ۔  روزانہ ایک جماعت ظہرکے وقت تک پڑھتی اورآپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہجب گھر کی طرف تشریف لے جاتے تولوگ راستہ میں   بھی ان سے کچھ نہ کچھ پڑھ لیا کرتے لیکن پھربھی آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ اکتاہٹ وپریشانی محسوس نہ کرتے  ۔  سماعِ حدیث اورتصنیف وتالیف سے اس قدرلگاؤتھاکہ گویا یہ ان کی غذا میں   شامل ہو  ۔  آپ رَحْمَۃُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہ  نے بہت سی کُتُب تصنیف فرمائیں   ۔  جن میں   سے چندکے نام یہ ہیں :

             ( 1 ) اَ لْاَجْزَاءُ الْوَخْشِیَّات ( 2 ) اَحَادِیْثُ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِاللہ بْن جَعْفَراَلْجَابِرِی ( 3 ) اَحَادِیْثُ مَشَایِخِ اَبِی الْقَاسِمِ عَبْدِالرَّحْمٰنِ بْنِ الْعَبَّاس اَلْبَزَّار اَلاَصَم ( 4 ) اَرْبَعُوْنَ حَدِیْثًا مُنْتَقَاۃً ( 5 ) اَلاَرْبَعِیْن عَلٰی مَذْہَبِ الْمُتَحَقِّقِیْن  ( 6 ) اَطْرَافُ الصَّحِیْحَیْن ( 7 ) کِتَابُ الْاِمَامَۃ ( 8 ) اَ لْاَمْوَال ( 9 ) اَ لْاِیْجَازُوَجَوَامِعُ الْکَلِم ( 10 ) تَارِیْخُ اَصْبِہَان  ( 11 ) تَثْبِیْتُ الرُّؤْیَاللہ ( 12 ) تَسْمِیَۃُ الرُّوَاۃِعَنْ سَعِیْدِبْنِ مَنْصُوْرٍعَالِیًا ( 13 ) تَسْمِیَۃُ مَاانْتَہٰی اِلَیْنَامِنَ الرُّوَاۃِعَنْ اَبِیْ نُعَیْمِ الْفَضْلِ بْنِ دُکَیْن ( 14 ) جُزْئُ صَنَمِ جَاہِلِیْ یُقَالُ لَہُ قَرَاص ( 15 ) حُرْمَۃُ الْمَسَاجِد ( 16 ) حِلْیَۃُ الْاَوْلِیَاء  وَطَبَقَاتُ الْاَصْفِیَاء ( 17 ) دَلَائِلُ النُّبُوَّۃ ( 18 ) ذِکْرُمِنْ اِسْمِہِ شُعْبَۃ ( 19 ) رِیَاضَۃُ الْاَبْدَان ( 20 ) رِیَاضَۃُ الْمُتَعَلِّمِیْن  ( 21 ) اَلرِّیَاضَۃُ وَالْاَدَب ( 22 ) اَلشُّعَرَاء ( 23 ) صِفْۃُ الْجَنَّۃ ( 24 ) صِفَۃُ النِّفَاق وَنَعْتُ الْمُنَافِقِیْن ( 25 ) اَلطِّبُ النَّبَوِی  ( 26 ) طَبَقَاتُ الْمُحَدِّثِیْن وَالرُّوَاۃ ( 27 ) طَرِیْقُ حَدِیْث ( اِنَّ اللہ تَعَالٰی تِسْعَۃٌ وَّتِسْعِیْنَ اِسْمًا )  ( 28 ) طَرِیْقُ حَدِیْث ( زَرْغَبًاتَزْدَدَحُبًا )  ( 29 ) عَمَلُ الْیَوْمِ وَاللَّیْلَۃ ( 30 ) فَضَائِلُ الْخُلَفَائِ الْاَرْبَعَۃ ( 31 ) فَضَائِلُ الصَّحَابَۃ ( 32 ) فَضْلُ السِّوَاک  ( 33 ) فَضْلُ سُوْرَۃِ الْاِخْلَاص ( 34 ) فَضْلُ الْعَالِمِ الْعَفِیْف ( 35 ) فَضْلُ الْعِلْم ( 36 ) فَضِیْلَۃُالْعَادِلِیْن مِنَ الْوُلَاۃوَمَنْ اَنْعَمَ النَّظْرُفِیْ حَالِ الْعُمَّالِ وَالْبُغَاۃ ( 37 ) مَاانْتَفٰی اَبُوْبَکْرِبْنِ مَرْدُوَیَّۃ عَلَی الطَّبْرَانی  ( 38 ) مُسْتَخْرَجُ اَبِیْ نُعَیْم عَلَی التَّوْحَیْدلِاِبْنِ خُزَیْمَۃ ( 39 ) اَلْمُسْتَخْرَجُ عَلَی الْبُخَارِی  ( 40 ) اَلْمُسْتَخْرَجُ عَلٰی کِتَابِ عُلُوْمِ الْحَدِیْثِ لِلْحَاکِم ( 41 ) اَلْمُسْتَخْرَجُ عَلٰی مُسْلِم ( 42 )  مُسَلْسَلَاتُ اَبِیْ نُعَیْم ( 43 ) اَلْمُعْتَقِد  ( 44 ) مُعْجَمُ الشُّیُوْخ ( 45 ) مُعْجَمُ الصَّحَابَۃ ( 46 ) مَعْرِفَۃُ الصَّحَابَۃ ( 47 ) مُنْتَخَبٌ مِّنْ حَدِیْثِ یُوْنُسَ بْنِ عُبَیْدَۃ  ( 48 ) اَلْمَہْدِی ( 49 ) مُسْنَدٌ ( 50 ) کِرَاسْتَانُ فِی الْحَدِیْث وغیرہ ۔

وصال پُرملال :  

          علم وعمل کایہ بحرِ ذَخَّارعلم کے پیاسوں   کوسیراب کرتاہواصحیح قول کے مطابق 94 سال کی عمرمیں   20محرم الحرام 430ھـکو اس فانی دنیاسے باقی رہنے والی زندگی کی طرف کوچ کرگیا ۔ لیکن اہلِ اسلام کے دلوں   میں   ہمیشہ ہمیشہ کے لئے اپنی یادیں   نقش کرگیا ۔  (اِنَّا لِلّٰهِ وَ اِنَّاۤ اِلَیْهِ رٰجِعُوْنَ)       ( ماخوذ ازمعرفۃ الصحابۃوحلیۃ الاولیاء ودلائل النبوۃ وغیرہ )

؎    ہَرْگِزْنَمِیْرَدآں  کہ دِلَشْ زِنْدَہ شُدْ بَعِشْق

ثَبْت اَسْت بَرْ جَرِیْدَۂ عَالَم دَوَامْ  مَا

 ( حَافِظ شِیْرَازِیعَلَیْہ رَحْمَۃُ اللہ الْکَافِی )  

            ترجمہ :  جن کے دل عشقِ الٰہی میں   زندہ ہیں   وہ کبھی نہیں   مرتے ان کانام ہمیشہ کے لئے صحیفۂ  کائنات پرنقش ہوجاتاہے  ۔

٭٭٭٭٭٭

حلیۃ الاولیاء اورالمدینۃ العلمیۃ

 ( 1 )کام کرنے والوں   کااِنتخاب :  

            کسی بھی کام کوبحسن خوبی پایۂ تکمیل تک پہنچانے کے لئے متعلقہ کام کے ماہرین درکارہوتے ہیں  ،   زیرنظر کتاب کے ترجمہ کاکام کس قدراہمیت کاحامل ہے اس کااندازہ اسے پڑھ کرہی کیاجاسکتاہے ۔ اس کتاب کی افادیت کے پیش نظر دنیائے اسلام کی عظیم ہستی سیِّدی ومرشدی حضرت علامہ مولاناابوبلال محمدالیاس عطارؔقادری رضوی ضیائی دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے بارہااس خواہش کااظہارفرمایاکہ حِلْیَۃُ الْاَوْلِیَاء وَطَبَقَاتُ الْاَصْفِیَاء کاترجمہ ہوناچاہئے  ۔  چنانچہ،   مجلس المدینۃ العلمیہ نے اس عظیم المنافع کتاب کے ترجمہ کی ذمہ داری شعبہ تراجم کتب  ( عربی سے اُردُو )  کوسونپی  ۔  اَلْحَمْدُلِلّٰہِ !  المدینۃ العلمیہکے اس شعبہ میں   موجودمدنی عُلمائے کرام کَثَّرَہُمُ اللہ السَّلَام نے اللہتعالیٰ کے فضل و کرم سے حِلْیَۃُ الْاَوْلِیَاء وَطَبَقَاتُ الْاَصْفِیَاء کے ترجمہ کاکام شروع کردیا ۔ جس کانتیجہ پہلی جلدکے ترجمے بنام ’’   اللہوالوں   کی باتیں   ‘‘  کی صورت میں   آپ کے سامنے ہے ۔  دوسری اورتیسری جلدکے ترجمہ کاکام جاری ہے  ۔  اِنْ شَآءَ اللہ اپنے وقت پروہ بھی آپ کے پیش نظرہوگا ۔

 ( 2 )ترجمہ اورکام کااَنداز :  

            اس عظیم الشان ،  کثیرالمنافع کتاب میں   عُلما وطلباکی دلچسپی اورکتاب کی افادیت کے پیش نظر عزم کیا گیا کہ ’’ مکررات کے علاوہ ازاول تاآخرپوری کتاب کا ترجمہ کیاجائے گا ۔ پھر اس اندازپرکام شروع کردیاگیا ۔ ابتدائی طور پریہ طے پایاتھاکہ اس کتاب کوقسط وارشائع کیا جائے اوراس کی پہلی قسط بنام ’’   تذکرۂ خلفائے راشدین ‘‘  شائع بھی کی گئی ۔ اس طرح 10جلدوں   پرمشتمل اس کتاب کی تقریباً40اقساط ہوتیں   ۔ پھرفیصلہ کیاگیاکہ ایک جلدکاترجمہ ایک ہی جلد میں   شائع کیاجائے ۔ اب اسی نہج پرترجمہ کیاجارہاہے ۔  المدینۃ العلمیہ کی



Total Pages: 273

Go To