Book Name:Allah Walon Ki Batain Jild 1

صحابۂ  کرامرِضْوَانُ اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِمْ اَجْمَعِیْنکے فضائل ،  اَقوال اورزُہدوتقویٰ کابیان

                                                                                                                                                               ( جلد1  )

حِلْیَۃُ الْاَوْلِیَاء وَطَبَقَاتُ الْاَصْفِیَاء

ترجمہ بنام

 

 

 اللہ والوں   کی باتیں 

 

 

مُؤَلِّف

امام ابونُـــعَیْماَحمدبن عبد اللہاَ صْفَہانی شافِعِی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہ الْکَافِی

اَلْمُتَوَفّٰی۴۳۰ھ

 

 

پیش کش :   مجلس المدینۃ العلمیۃ  ( دعوتِ اسلامی )

شعبہ تراجم کتب

 

 

ناشر

مکتبۃ المدینہ باب المدینہ کراچی

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ علٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللہ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 ’’  ہمیں   صحابۂ  کرام سے پیارہے   ‘‘  کے21 حُروف کی نسبت سے

اس کتاب کو پڑھنے کی ’’   21  نیّتیں   ‘‘

فرمانِ مصطفی  صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم :   نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌمِّنْ عَمَلِہٖیعنی مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہترہے ۔

 ( المعجم الکبیرللطبرانی،   الحدیث :    ۵۹۴۲،   ج۶،   ص۱۸۵ )

دو مَدَنی پھول :             ( ۱ )  بِغیر اچّھی نیّت کے کسی بھی عملِ خیر کا ثواب نہیں   ملتا ۔

         ( ۲ ) جتنی اچّھی نیّتیں   زِیادہ،   اُتنا ثواب بھی زِیادہ ۔

           ( ۱ ) ہر بارحمد و  ( ۲ ) صلوٰۃ اور ( ۳ ) تعوُّذو ( ۴ ) تَسمِیّہ سے آغاز کروں   گا ۔  ( اسی صَفْحَہ پر اُوپر دی ہوئی دو عَرَبی عبارات پڑھ لینے سے چاروں   نیّتوں   پر عمل ہوجائے گا )  ۔  ( ۵ ) رِضائے الٰہی کے لئے اس کتاب کا اوّل تا آخِر مُطالَعَہ کروں   گا ۔   ( ۶ )  حتَّی الْوَسْعاِس کا باوُضُو اور  ( ۷ ) قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں   گا ( ۸ )  قرآنی آیات اور  ( ۹ ) اَحادیثِ مبارَکہ کی زِیارت کروں   گا  ( ۱۰ ) جہاں   جہاں   ’’  اللہ  ‘‘ کا نام پاک آئے گا وہاں   عَزَّوَجَلَّ اور ( ۱۱ )  جہاں   جہاں   ’’ سرکار ‘‘ کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں  صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم پَڑھوں   گا ۔  ( ۱۲ ) اس کتاب کا مُطَالَعَہ شروع کرنے سے پہلے اس کے مؤلف کو ایصال ثواب کروں   گا ۔  ( ۱۳ )  ( اپنے ذاتی نسخے پر )  عندالضَّرُوْرَت خاص خاص مقامات انڈر لائن کروں   گا ۔   ( ۱۴ )  ( اپنے ذاتی نسخے کے ) ’’ یادداشت ‘‘ والے صَفْحَہ پر ضَروری نِکات لکھوں   گا ۔   ( ۱۵ ) اولیاکی صفات اپناؤں  گا ۔   ( ۱۶ ) دوسروں   کویہ کتاب پڑھنے کی ترغیب دلاؤں   گا ۔  ( ۱۷ )  اس حدیثِ پاک ’’ تَھَادَوْا تَحَابُّوْا ‘‘ ایک دوسرے کو تحفہ دو آپس میں   محبت بڑھے گی  ۔   ( مؤطا امام مالک،   الحدیث :    ۱۷۳۱،   ج۲،   ص۴۰۷ )  پرعمل کی نیت سے ( ایک یا حسبِ توفیق )  یہ کتاب



Total Pages: 273

Go To