Book Name:25 christian Qaidiyon aur padri Ka Qabool e Islam

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِ اللہ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ  اللہ   الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 دُرُود شریف کی فضیلت

        شیخِ طریقت، امیرِاہلسنّت، بانیٔ دعوت ِاسلامی حضرتِ علامہ مولانا ابو بلال  محمد الیاس عطّارؔ قادری  دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ اپنے رسالے ’’ کالے بچھو‘‘میں نقْل فرماتے ہیں  کہسرکار ِمدینہ، راحتِ قلب وسینہ، صاحبِ معطَّرپسینہ صَلَّی  اللہ   تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا :  ’’اے لوگو! بے شک بروزِ قِیامت اسکی دَہشتوں  اورحساب کتاب سے جلد نَجات پانے والا شخص وہ ہوگا جس نے تم میں  سے مجھ پر دنیا کے اندر بکثرت دُرود شریف پڑھے ہوں گے ۔‘‘            (فردوسُ الْاخبار ج۵ ص۳۷۵ حدیث ۸۲۱۰ دارالکتاب العربی بیروت)

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !          صلَّی  اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

(1)  25کرسچین قیدیوں  اور پادری کا قبولِ اسلام

         بر اعظم افریقہ کے ایک ملک زمبیا کے دارالخلافہ لُساکا ( Lusaka )کی  کموالا ( Kamwala)جیل میں 2004 ء میں  دو بھائی کسی غیر قانونی کام کے الزام میں  قید ہوگئے۔اُن کے بُلاوے  پروہاں  پر مُقیم چند اسلامی بھائی ہر دوسرے دن ملاقات کے لئے جاتے ۔ کھانے کے سامان کے ساتھ شیخ طریقت امیر اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کے مَدَنی رسائل بھی تحفۃً دے  آتے۔  خوفِ خدا

  عَزَّ وَجَلَّ   و عشق ِمصطفی صَلَّی اللہُ تَعَالٰی علیہ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم سے تر بتر تحریر پڑھ کے دونوں  بھائیوں  کے دل ودماغ میں  مَدَنی انقلاب برپا ہونا شروع ہو گیا۔ اپنے اندر عمل کا جذبہ پیدا ہوتے دیکھ کروہ رب کریم عَزَّ وَجَلَّ  کا شکر بجا لائے، نماز باجماعت کے ساتھ تَہَجُّد کی پابندی بھی شروع کر دی، مَدَنی انعامات کو اپنے اوپر نافذ کرنے کا ارادہ کر لیا اور امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی لکھی ہوئی بین الاقوامی شہرت یافتہ کتاب  فیضانِ سنت سے درس دینا شروع کردیا۔  

        درس کی ابتداء میں  بتائے جانے والے دُرُود پاک کے فضائل سن کر دیگر مسلمان قیدی بھی کثرت کے ساتھ ُدرُود و سلام پڑھنے لگے ۔اس کی انہیں  کچھ ایسی برکتیں  نصیب ہوئیں  کہ بہت سے قیدیوں  کوجلد رہائی مل گئی۔ کفار قیدی دُرُود پاک کی برکتیں  جاگتی آنکھوں  سے دیکھ کر بہت متاثر ہوتے ، یوں  آہستہ آہستہ وہ  دینِ اسلام کے قریب ہوتے چلے گئے اور  اَلْحَمْدُ للہ  عَزَّ وَجَلَّ   تین سے چار ماہ کے قلیل عرصے میں  25کرسچین قیدی دولت اسلام سے مشرف ہوگئے اور ایک پچاس سالہ عیسائی پادری بھی مسلمان ہوگیا۔ہوا یوں  کہ اس نے دورانِ قید اسلامی کتب کا مطالعہ شروع کیا تو ایک رات خواب میں  انتہائی خوبصورت مسجد دیکھی لیکن جب اس میں  داخل  ہونے کی کوشش کی تو دروازہ بند ہو گیا۔ صبح کسی کے پاس مسجد نبوی علی صاحبھاالصَّلٰوۃُ وَالسَّلام کا طغرہ دیکھ کر پکار اٹھا کہ یہ تو وہی مسجد ہے جو میں  نے خواب میں  دیکھی تھی۔ دین اسلام کے بارے میں  معلومات حاصل کر کے اور صحیح اسلامی تشخص اپنی آنکھوں  سے دیکھ کر ایک دن عیسائیت سے تائب ہو کر وہ پادری بھی مسلمان ہو گیا اور نیت کی کہ قید سے آزاد ہو کر اپنی پوری فیملی کو مسلمان ہونے کی دعوت پیش کروں  گا۔    ؎

مقبول جہاں  بھر میں  ہو دعوتِ اسلامی

صدقہ تجھے اے ربِّ غفَّار مدینے کا

اللہ     عَزَّ  وَجَلَّ  کی  امیرِ اَہلسنّت پَر رَحمت ہو اور ان کے صد قے ہماری مغفِرت ہو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !               صلَّی  اللہ تعالٰی علٰی محمَّد   

عظیم خیرخواہ

        تبلیغِ قراٰن وسنت کی عالمگیر غیر سیاسی تحریک دعوتِ اسلامی جس کا آغاز امیراہلسنّت حضرت علامہ مولانا محمد الیاس عطّاؔر قادری دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے اپنے رفقاء کے ساتھ۱۴۰۱ھ میں  کیا تھا ، کی برکتیں  جہاں  لاکھوں  لاکھ اسلامی بھائیوں  کو نصیب ہوئیں  اور وہ صلوٰۃ وسنّت کی راہ پر گامزن ہوگئے وہیں  اسلامی بہنوں  کو بھی گناہوں  سے توبہ کر نے اور اپنی  زندگی  اللہ



Total Pages: 9

Go To