Book Name:101 Madani Phool

فرمانِ جنّت نشان ہے :  جس نے میری سنّت سے  مَحَبَّت کی اُسنے مجھ سے مَحَبَّت کی اور جس نے مجھ سیمَحَبَّت کی وہ  جنّت  میں میرے ساتھ ہو گا  ۔ (مِشْکاۃُ الْمَصابِیح ، ج۱ ص۵۵ حدیث ۱۷۵ دارالکتب العلمیۃ بیروت )

سینہ تری سنّت کا مدینہ بنے آقا

جنّت میں پڑوسی مجھے تم اپنا بنانا

صَلُّوا  عَلَی الْحَبِیب !                 صلَّی اللہ تعالٰی علٰی محمَّد

’ مدینے کی حاضِری‘ کے بارہ حُرُوف کی نسبت

سے گھر میں آنے جانے  کے 12 مَدَنی پھول

      {1}جب گھرسے باہَر نکلیں تو یہ دُعا پڑھئے  : ’’ بِسْمِ اللہ تَوَکَّلْتُ عَلَی اللہ لَاحَوْلَ وَلَا قُوَّۃَ اِلَّا بِاللّٰہِ‘‘ترجمہ ـ :  اللہ عَزَّ وَجَلَّ  کے نام سے ، میں نے  اللہ عَزَّ وَجَلَّ  پر بھروسہ کیا  ۔ اللہ عَزَّ وَجَلَّ  کے بغیر نہ طاقت ہے نہ قوَّت ۔  (ابوداوٗد، ج۴ ص۴۲۰ حدیث۵۰۹۵)  اِن شائَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّاس دعاکوپڑھنے کی بَرَکت سے سیدھی راہ پر رہیں گے ، آفتوں سے حفاظت ہو گی اور اللہُالصَّمَدعَزَّوَجَلَّکی مدد شاملِ حال رہے گی{2}  گھرمیں داخل ہونے کی دعا : اَللّٰھُمَّ اِنِّیٓ اَسْأَ لُکَ خَیْرَ الْمَوْلَجِ وَ خَیْرَ الْمَخْرَجِ بِسْمِ اللہ وَلَجْنَا وَ بِسْمِ اللہ خَرَجْنَا وَ عَلَی اللہ رَبِّنَا تَوَ کَّلْنَا ۔ (اَیضاً ۔ حدیث۵۰۹۶) (ترجمہ :  اے اللہ عَزَّ وَجَلَّ !میں تجھ سے داخل ہونے  کی اور نکلنے کی بھلائی مانگتاہوں ، اللہ عَزَّ وَجَلَّ  کے نام سے ہم (گھر میں )  داخل ہوئے اور اسی کے نام سے باہر آئے اور اپنے رب اللہ عَزَّ وَجَلَّ   پر ہم نے بھروسہ کیا ) دعا پڑھنے کے بعد گھر والوں کو سلام کرے پھر بارگاہِ رسالت میں سلام عرض کر ے اس کے بعد سورۃُ الِاخلاص شریف پڑھے ۔  اِن شائَ اللّٰہعَزَّوَجَلروزی میں بَرَکت ، اور گھر یلو جھگڑوں سے بچت ہو گی{3} اپنے گھر میں آتے جاتے محارِم ومَحرمات (مَثَلاً ماں ، باپ ، بھائی، بہن، بال بچّے وغیرہ)کوسلام کیجئے {4} اللہ  عَزَّوَجَلَّ  کا نام لئے بغیر مَثَلاً بسم اللہ کہے بِغیر جو گھر میں داخل ہوتا ہے شیطان بھی اُس کے ساتھ داخِل ہو جاتا ہے {5}  اگر ایسے مکان(خواہ اپنے خالی گھر) میں جانا ہو کہ اس میں کوئی نہ ہو تو یہ کہئے :   اَلسَّلَامُ عَلَیْنَا وَعَلیٰ عِبَادِ اللہ الصّٰلِحِیْن (یعنی ہم پر اوراللہ عَزَّ وَجَلَّ   کے نیک بندوں پر سلام )فِرِشتے اس سلام کا جواب دیں گے ۔ ( رَدُّالْمُحتارج۹ ص ۶۸۲) یا اس طرح کہے :  اَلسَّلَامُ عَلَیْکَ اَیُّـھَا النَّبِیُّ(یعنی یا نبی آپ پر سلام ) کیونکہ حضور اقدس صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَکی رُوحِ مبارَک مسلمانوں کے گھروں میں تشریف فرما ہوتی ہے ۔  (بہارِشریعت حصّہ۶ا ص۹۶، شرح الشّفاء للقاری ج۲ص۱۱۸) {6} جب کسی کے گھر میں داخل ہونا چاہیں تو اِس طرح کہئے : السلامُ علیکم کیا میں اندر آسکتا ہوں ؟ {7} اگر داخلے کی اجازت نہ ملے تو بخوشی لوٹ جائیے ہو سکتا ہے کسی مجبوری کے تحت صاحبِ خانہ نے اجازت نہ دی ہو {8}جب آپ کے گھر پر کوئی دستک دے تو سنّت یہ ہے کہ پوچھئے :  کون ہے ؟ باہَر والے کو چاہئے کہ اپنا نام بتائے : مَثَلاً کہے :



Total Pages: 16

Go To