Book Name:Karbala Ka Khooni Manzar

          خالہ زاد ،   ماموں زاد،   پھُوپھی زاد،   چَچا زاد،  تایازاد،   دیور و جیٹھ،   خالو،   پھوپھا،   بہنوئی بلکہ اپنے نامحرم پیرو مرشِد سے بھی پردہ کیجئے  ۔  نیز مرد کا بھی اپنی مُمانی،  چچی،  تائی،  بھابھی اور اپنی زوجہ کی بہن وغیرہ رشتے داروں سے پردہ  ہے ۔  مُنہ بولے بھائی بہن،  منہ بولے ماں بیٹے،   اورمنہ بولے باپ بیٹی میں بھی پردہہے حتّٰی کہ لے پالک بچہ (جب مرد و عورت کے مُعامَلات سمجھنے لگے تو) اس سے بھی پردہہے البتّہ دودھ کے رشتوں میں پردہ نہیں مَثَلاً رَضاعی ماں بیٹے اور رَضاعی بھائی بہن میں پردہ نہیں  ۔  لہٰذا لے پالک بچّے یا بچّی کوہجری سن کے مطابق دو سال کی عمر کے اندر اندر عورت اپنا یا اپنی سگی بہن یاسگی بیٹی یا سگی بھانجی کا کم از کم ایک بار دودھ اس طرح پلا دے کہ اس بچّے  یا بچّی کے حَلْق سے نیچے اُتر جائے ۔  اس طرح اب جن جن سے دودھ کا رِشتہ قائم ہوا اُن سے پردہ واجِب نہ رہا ۔ اعلیٰ حضرت رحمۃ اللہ تعالٰی علیہ فرماتے ہیں  : اور بحالتِ جوانی یا احتمالِ فتنہ پردہ کرنا ہی مناسب ہے کیونکہ عوام کے خیال میں اس (دودھ کے رشتے) کی ہیبت بہت کم ہوتی ہے (ماخوذ ازفتاوٰی رضویہ ج۲۲،   ص۲۳۵ رضا فاؤنڈیشن مرکزالاولیاء لاہور) یہ یاد رہے کہ ہجری سِن کے حساب سے دو برس کے بعد بچّہ یابچّی کو اگرچہ عورت کا دودھ پلانا حرام ہے ۔  مگر ڈھائی برس کے اندر اگر دودھ پلائے گی تو رضاعت (یعنی دودھ کارشتہ) ثابت ہو جائے گی ۔  تفصیلی معلومات کیلئے بہارِ شریعت حصّہ 7سے ’’ دودھ کے رشتے کا بیان‘‘ پڑھ لیجئے ۔  نیز رسالہ ’’ زخمی سانپ‘‘ ( 32صَفحات)کا ضَرورضَرور ضَرورمُطالَعہ فرما لیجئے ۔  گھر کے تمام افراد کو میرا مَدَنی سلام عرض کرکے مجھ گنہگار وں کے سردار کیلئے دعائے مدینہ وبقیع وبے حساب مغفرت کی درخواست کیجئے ۔  آپ بھی ان دعاؤں سے نوازتی رہئے ۔     

والسلام مع الاکرام

                                                                                                                                                                                                                       

                                                                         ۲۶ذوالحجۃ الحرام۱۴۲۹ھ

2008-12-25

8 مَدَ نی کا م(اِسلامی بہنوں کے لئے)

                                                از  :   مرکزی مجلسِ شوری

        {1}اِنفِرادی کوشش{2}گھردرس{3}کیسٹ بیان {4} مدرسۃ المدینہ( بالغات){5}ہفتہ وارسنتوں بھرا اجتماع {6} عَلاقائی دورہ برائے نیکی کی دعوت{7}ہفتہ وار تربیتی حلقہ{8} مدنی انعامات ۔

{1}اِنفِرادی کوشش :

                                                نئی نئی اسلامی بہنوں پر اِنفرادی کوشش کرتے ہوئے اِنھیں مدنی ماحول سے مُنسلک کیجئے،   مُعَلِّمَہ،    مُبَلِّغَہاور مُدَرِّسَہبنا کر دعوتِ اسلامی کا مَدَنی کام بڑھایئے ۔ وہ اسلامی بہنیں جو پہلے آتی تھیں مگراب نہیں آتیں ،  بالخصوص اُن پر اِنفِرادی کوشش کر کے اُنہیں مَدَنی ماحول سے دوبارہ وابَستہ کیجئے ۔  شیخِ طریقت ،  امیرِ اہلسنّت ،  با نیٔ دعوت ِاسلامی حضرتِ علّامہ مولانا ابو بلال محمد الیاس عطارؔ



Total Pages: 14

Go To