Book Name:Islami Behno Ki Namaz

         مُنہ سے اتنا خون نکلا کہ تھو ک سُرخ ہو گیا اور لوٹے یا گلا س سے منہ لگا کرکُلّی کے لئے پانی لیا تو لو ٹا گلا س اورکُل پانی نَجِس ہو گیا لہٰذا ایسے مو قع پر چُلّو میں   پانی لے کر اِحتِیاط سے کُلّی کیجئے اور یہ بھی احتیا ط فر ما ئیے کہ چِھینٹے اُڑ کر آ پکے کپڑوں   وغیرہ پر نہ پڑیں  ۔

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                      صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

  انجکشن لگانے سے وُضو ٹوٹے گا یا نہیں   ؟

             {1} گوشت میں   انجکشن لگانے میں   صِرف اِسی صورت میں   وُضو ٹوٹے گا جب کہ بہنے کی مقدار میں  خون نکلے {2} جب کہ نَس کا انجکشن لگاکر پہلے خون اوپر کی طرف کھینچتے ہیں   جو کہ بہنے کی مقدار میں   ہوتا ہے لھٰذا وُضو ٹوٹ جاتا ہے  {3}  اِسی طرح گلوکوز وغیرہ کی ڈرِپ نَس میں   لگوانے سے وُضو ٹوٹ جائیگا کیوں   کہ بہنے کی مقدار میں   خون نکل کر نلکی میں   آجاتا ہے ۔ہاں   اگر بہنے کی مقدار میں   خون نلکی میں   نہ آئے تو وُضو نہیں   ٹوٹے گا  ۔

دُکھتی آنکھ کے آنسو

             {1}  دُکھتی آنکھ سے جو آنسو بہا وہ ناپاک ہے اور وُضو بھی توڑ د یگا ۔  (بہارِشریعت حصہ۲ص۳۲)  افسوس اکثر اسلامی بہنیں   اِس مسئلہ  (مَس ْ۔ءَ۔ لَہْ)  سے ناواقِف ہوتی ہیں   اور دُکھتی آنکھ سے بوجہِ مرض بہنے والے آنسو کو اور آنسوؤں   کی مانند سمجھ کر آستین یا کرتے کے دامن وغیرہ سے پُونچھ کر کپڑے ناپاک کرڈالتی ہیں    {2}  نابِیناکی آنکھ سے جو رُطُوبت بوجہِ مرض نکلتی ہے وہ ناپاک ہے اور اس سے وُضو بھی ٹوٹ جاتا ہے۔یہ یاد رہے کہ خوفِ خدا عَزَّ وَجَلَّیا عشقِ مصطَفٰے صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ میں   یا ویسے ہی آنسو نکلیں تو وضو نہیں   ٹوٹتا۔

پاک اور ناپاک رطوبت

           جو رُطوبت انسانی بدن سے نکلے اور وُضو نہ توڑے وہ ناپاک نہیں  ۔ مَثَلاًخون یا پیپ بہ کر نہ نکلے یا تھوڑی قے کہ منہ بھر نہ ہو پاک ہے ۔  (بہارِشریعت حصّہ۲ص۳۱)

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                      صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

چھالا اور پُھڑیا

           {1}  چھالا نوچ ڈالا اگر اس کا پانی بہ گیا تو وُضو ٹوٹ گیا ورنہ نہیں   ۔  (ایضاً ص۲۷)   {2} پُھڑیا باِلکل اچّھی ہو گئی اس کی مُردہ کھال باقی ہے جس میں   اوپر منہ اور اندر خَلا ہے اگر اس  میں  پانی بھر گیا اور دبا کر نکالا تو نہ وُضو جائے نہ وہ پانی ناپاک۔ ہاں   اگر اُس کے اندر کچھ تَری خون وغیرہ کی باقی ہے تو وُضو بھی جاتا رہے گا اور وہ پانی بھی ناپاک ہے۔ (فتاوٰی رضویہ مُخَرَّجہ ج ۱ ص ۳۵۵۔۳۵۶)    {3}  خارِش یا پھُڑیوں   میں   اگر بہنے والی رُطوبت نہ ہو صِرف چِپک ہو اور کپڑا اس سے بار بار چھُو کر چاہے کتنا ہی سَن جائے پاک ہے  (بہارِشریعت حصہ۲ص۳۲)   {4 }   ناک صاف کی اس میں   سے جَما ہو ا خون نکلا وُضو نہ ٹوٹا،اَنْسَب  (یعنی زِیادہ مناسِب)  یہ ہے کہ ُوضو کرے ۔  (فتاوٰی رضویہ مُخَرَّجہ ج ۱ص۲۸۱)           

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیْب !                                      صَلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

قَے سے وُضوکب ٹوٹتا ہے ؟

             منہ بھر قے کھانے، پانی یا صَفْرا  (یعنی پیلے رنگ کا کڑوا پانی )  کی وُضو توڑ دیتی ہے ۔جو قَے تَکَلُّف کے بِغیر نہ روکی جا سکے اسے منہ بھر کہتے ہیں  ۔  منہ بھر قَے پیشاب کی طرح ناپاک ہوتی ہے اسکے چِھینٹوں   سے اپنے کپڑے اور بدن کو بچانا ضَروری ہے۔  (بہارِشریعت حصہ۲ص۲۸،۱۱۲ وغیرہ)   

دودھ پیتے بچّے کا پیشاب اور قَے

             {1} ایک دن کے دودھ پیتے بچے کا پیشاب بھی اسی طرح ناپاک ہے جس طرح عام لوگوں   کا ۔ ( ایضاًص۱۱۲)   {2} دودھ پیتے بچّے نے دودھ ڈال دیا اور وہ مُنہ بھر ہے تو ( یہ بھی پیشاب ہی کی طرح)  ناپاک ہے ہاں   اگر یہ دودھ مِعدہ تک نہیں   پہنچا صرف سینے تک پَہُنچ کر پلٹ آیاتو پاک ہے۔  ( ایضاًص۳۲)             

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                      صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

  ’’  مدینہ  ‘‘  کے پانچ حُرُوف کی نسبت سے وُضو میں   شک آنے کے5 اَحکام

             {1}  اگر دَورانِ وُضو کسی عُضْو کے دھونے میں   شک واقِع ہو اور اگر یہ زندگی کا پہلا واقِعہ ہے تو اِس کو دھولیجئے اور اگر اکثر شک پڑا کرتا ہے تو اس کی طرف توجُّہ نہ دیجئے۔ اِسی طرح اگر بعدِ وُضو بھی شک پڑے تو اِس کا کچھ خیال مت کیجئے۔ (بہارِشریعت حصہ۲ص۳۲)   {2}  آپ باوُضو تھیں   اب شک آنے لگا کہ پتا نہیں   وُضو



Total Pages: 92

Go To