Book Name:Islami Behno Ki Namaz

            مغرب کی تین رکعت فرض پڑھنے کے بعد چھ رکعت ایک ہی نیّت سے پڑھئے، ہر دو رکعت پر قعدہ کیجئے اور اس میں   التحیات ، درودِابراھیم اور دعا پڑھئے، پہلی ، تیسری اور پانچویں   رکعت کی ابتداء میں   ثنا ، تعوذ و تسمیہ  ( یعنی اعوذ اور بسم اللہ)  بھی پڑھئے۔ چھٹی رکعت کے قعدے کے بعد سلام پھیر دیجئے۔ پہلی دو رکعتیں    سُنَّتِمُؤَکَّدہ  ہوئیں  اور باقی چار نوافِل۔یہ ہے اوّابین  ( یعنی توبہ کرنے والوں   )  کی نماز۔ (الوظیفۃ الکریمۃ ص۲۴  مُلَخَّصاً )  چاہیں   تو دو دو رکعت کر کے بھی پڑھ سکتے ہیں  ۔بہارِشریعت حصّہ 4 صَفْحَہ 15اور16پر ہے:  بعد مغرب چھ رَکعتیں   مُستحب ہیں   ان کو صلوٰۃُ الاوّابین کہتے ہیں  ، خواہ ایک سلام سے سب پڑھے یا دو سے یا تین سے اور تین سلام سے یعنی ہر دو رَکعت پر سلام پھیرنا افضل ہے۔ (دُرِّمُختَار، رَدُّالْمُحتَارج۲، ص۵۴۷)

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیْب !                                      صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

 تَحِیَّۃُ الْوُضُو

             وُضو کے بعد اعضا خشک ہونے سے پہلے دو رکعت نماز پڑھنا مستحب ہے۔  (دُرِّمُختَار،ج۲، ص۵۶۳) حضرتِ سیِّدُنا عُقبہ بن عامِررَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے،فرماتے ہیں  کہ نبیِّ کریم،رء وفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   نے فرمایا:   ’’ جو شخص وُضو کرے اور اچّھا وُضو کرے اور ظاہِر و باطن کے ساتھمُتَوَجِّہ ہو کر دو رَکعت پڑھے، اس کے لیے جنّت واجب ہو جاتی ہے۔ ‘‘   (صَحِیح مُسلِم،ص۱۴۴ حدیث ۲۳۴)    

  غسل کے بعد بھی دو رَکعت نَمازمُستَحَبہے۔ وُضو کے بعد فرض وغیرہ پڑھے تو قائم مقام تَحِیۃُ الوضُو کے ہوجائیں   گے۔  (رَدُّالْمُحتَار،ج۲ص۵۶۳) مکروہ وَقت میں   تَحِیۃُ الوضُو اور غسل کے بعد والی دو رَکعتیں   نہیں   پڑھ سکتے۔

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                                               صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

صَلٰوۃُالْاَسْرَار

            دعاؤں   کی مقبولیت اور حاجتوں   کے پورا ہونے کے لئے ایک مجرَّب  (یعنی آزمودہ)  نمازصَلٰوۃُالْاَسْرَاربھی ہے جس کو امام ابوالحسن نورُ الدَّین علی بن جَریر لخمی شطنوفی نے بہجۃُ الْاَسرَار میں   اورحضرتِ ملا علی قاریعَلَیْہِ رَحمَۃُ اللّٰہِ الباریاور شیخ عبدالحق محدث دہلوی  عَلیہ ر َحْمَۃ  اللّٰہِ  القَوِی نے حضور غوث اعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت کرتے ہوئے تحریر فرمایا ہے۔ اِس کی ترکیب یہ ہے کہ بعد نماز مغرِب سنّتیں   پڑھ کر دو رَکعت نَماز نفل پڑھے اور بہتر یہ ہے کہ اَلحمد کے بعدہررَکعت میں   گیارہ گیارہ مرتبہ قُل ھُواﷲ پڑھے سلام کے بعد اللّٰہعَزَّوَجَلَّکی حمد وثنا کرے  (مَثَلاً حمد و ثنا کی نیّت سے سورۃ الفاتحہ پڑھ لے ) پھر نبی صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ    پر گیارہ بار درودو سلام عرض کرے اور گیارہ بار یہ کہے:  یَا رَسُوْلَ اﷲِ یَانَبِیَّ اﷲِاَغِثْنِیْ وَامْدُدْنِیْ فِیْ قَضَاءِ حَاجَتِیْ یَا قَاضِیَ الْحَاجَات. ترجمہ:  اے  اللّٰہعَزَّوَجَلَّ  کے رسول! اے  اللّٰہعَزَّوَجَلَّ  کے نبی! میری فریاد کو پہنچئے اور میری مدد کیجیے، میری حاجت پوری ہونے میں  ، اے تمام حاجتوں   کے پورا کرنے والے۔پھر عراق کی جانب گیارہ قدم چلے اور ہر قدم پر یہ کہے:  یَاغَوْثَ الثَّقَلَیْنِ یَا کَرِیْمَ الطَّرَفَیْنِ اَغِثْنِیْ وَامْدُدْنِیْ فِیْ قَضَائِ حَاجَتِیْ یَا قَاضِیَ الْحَاجَاتِ۔

  (ترجمہ:  اے جِنّ و اِنس کے فریاد رس اور اے دونوں   طرف  (یعنی ماں   باپ دونوں   ہی کی جانب ) سے بُزُرگ! میری فریاد کو پہنچئے اور میری مدد کیجیے میری حاجت پوری ہونے میں  ، اے حاجتوں   کے پورا کرنے والے۔)  پھرحُضُورِ اقدس صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کو وَسیلہ بنا کر اﷲتعالیٰ سے اپنی حاجت کے لئے دعا مانگے۔   (عَرَبی دعا ؤں  کے ساتھ ترجَمہ پڑھنا ضروری نہیں  )   (بہارشریعت حصہ۴،ص۳۵،بہجۃ الاسرار،ص۱۹۷)

حُسنِ نیّت ہو، خطا تو کبھی کرتا ہی نہیں

آزمایا ہے یگانہ ہے دُوگانہ تیرا

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیْب!                                        صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

صَلٰوۃُ الْحَاجَات

            حضرتِ سیِّدُنا حُذَیفہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ  ’’ جب حُضُورِ اکرم، نُورِ مُجَسَّم، شاہِ بنی آدم،رسولِ مُحتَشَم،شافِعِ اُمَم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کو کوئی امرِ اَہم پیش آتا تو نَماز پڑھتے۔ ‘‘   (سُنَنِ اَ بُو دَاوٗد ، حدیث۱۳۱۹ج۲ص۵۲)

            اِس کے لیے دو یا چاررَ کعت پڑھے۔ حدیثِ پاک میں   ہے:   ’’ پہلی رَکعت میں   سورۂ فاتِحہ اور تین بار آیۃُ الکُرسی پڑھے اور باقی تین رَکعتوں   میں   سورۂ فاتِحہ اور قُلْ هُوَ اللّٰهُ اور قُلْ اَعُوْذُ بِرَبِّ الْفَلَقِۙ   اور قُلْ اَعُوْذُ بِرَبِّ النَّاسِۙ   ایک ایک بار پڑھے، تو یہ ایسی ہیں   جیسے شب ِ قَدر میں   چار رکعتیں   پڑھیں  ۔ ‘‘   



Total Pages: 92

Go To