Book Name:Islami Behno Ki Namaz

کہ اگر چِہ نَجاست ابتِداء ً پھیلی مگر بِالآخِر اچّھی طرح دُھل گئی اور پاک کرنے کاشَرعی تقاضا پورا ہو گیا تو تہبند پاک ہو جائے گا ۔

        یاربِّمصطَفٰی ! عَزَّوَجَلَّ و صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ ہمیں   بار بار غسل کے مسائل پڑھنے ،سمجھنے اور دوسروں   کو سمجھانے اور سنّتوں   کے مطابِق غسل کرنے کی توفیق عطا فرما۔                   

                                   اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیْب !                                      صلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی علٰی مُحَمَّد

  روزی کا سبب

            نبیِّ کریم صلّی اللہُ تَعَالٰی علَیْہِ واٰلہٖ وسلّم کے دورِاَقدس میں دو بھائی تھے، جن میں ایک تونبیِّ کریم صلّی اللہُ تَعَالٰی علَیْہِ واٰلہٖ وسلّم کی خدمتِ بابَرَکت میں  (علم دین سیکھنے کے لیے)  آتاتھا،  (ایک روز)  کاریگر بھائی نے نبیِّ کریم صلّی اللہُ تَعَالٰی علَیْہِ واٰلہٖ وسلّم سے اپنے بھائی کی شکایت کی  (یعنی اس نے سارا بوجھ مجھ پر ڈال دیا ہے، اس کو میرے کام کاج میں ہاتھ بٹانا چاہیے)  تو اللّٰہ  کے مَحبوب، دانائے غُیُوب، مُنَزَّہٌ عَنِ الْعُیُوب عَزَّوَجَلَّ وَ صلّی اللہُ تَعَالٰی علَیْہِ واٰلہٖ وسلّم نے ارشاد فرمایا:   شاید!   ’’ تجھے اس کی بَرَکت سے روزی مل رہی ہے۔ ‘‘   (سُنَنُ التِّرْمِذِیّ ج۴ ص۱۵۴ حدیث ۲۳۵۲)           

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

                                               تیمم کا طریقہ (حنفی)

                                                                                                                                                                                       دُرُود شریف کی فضیلت

        امامُ الصّابِرین ،سیّدُ الشّاکِرین،سلطانُ الْمُتَوَکِّلِین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ     کا فرمانِ دلنشین ہے:  جِبرئیل  (عَلَیْہِ السَّلَام )  نے مجھ سے عرض کی کہ رب تعالیٰ فرماتا ہے: اے مـحـمّد!  (عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَ السَّلَام) کیاتم اِس بات پر راضی نہیں   کہ تمہارا اُمَّتی تم پر ایک بار دُرُود بھیجے،میں   اُس پر دس رَحمتیں   نازل کروں   اور آپ کی اُمَّت میں   سے جو کوئی ایک سلام بھیجے، میں   اُس پر دس سلام بھیجوں   ۔  (مِشْکَاۃُ الْمَصَابِیح ،ج۱ ص۱۸۹، حدیث ۹۲۸، دارالکتب العلمیۃ بیروت )    

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !                                                              صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

تَیَمُّم کے فرائض

            تَیَمُّم  (تَ۔یَم۔مُم) میں  تین فرض ہیں   {1} نِیّت {۲} سارے منہ پر ہاتھ پھیرنا {۳} کُہنیوں  سَمیت دونوں  ہاتھوں  کامَسح کرنا۔  (بہارِ شریعت، حصّہ۲،ص۷۵۔۷۷)

’’ تَیَمُّم سیکھ لو  ‘‘ کے دس

   حُروف کی نسبت سے تَیَمُّم کی 10سُنّتیں 

           {1} بسم اﷲشریف کہنا {2} ہاتھوں  کوزمین پرمارنا {3} زمین پر ہاتھ مار کرلَوٹ دینا  (یعنی آگے بڑھانااورپیچھے لانا)  {4} اُنگلیاں  کُھلی ہوئی رکھنا  {5} ہاتھوں   کوجھاڑ لینایعنی ایک ہاتھ کے اَنگوٹھے کی جڑکودوسرے ہاتھ کے انگوٹھے کی جڑ پرمارنا نہ اس طرح کہ تالی کی سی آواز نکلے  {6} پہلے مُنہ پھر ہاتھوں   کا مَسح کر نا  {7}  د و نوں  کامسح پے درپے ہونا {8} پہلے سیدھے پھراُلٹے ہاتھ کا مسح کرنا  {9}  (مرد کے لئے) داڑھی کاخِلال کرنا {10} اُنگلیوں  کاخِلال کرناجبکہ غُبار پَہُنچ گیاہو۔اگرغبارنہ پہنچا ہو مَثَلاً پتھروغیرہ کسی ایسی چیزپرہاتھ ماراجس پر غبارنہ ہو تو خِلال فرض ہے خِلال کیلئے دوبا رہ زمین پرہاتھ مارناضَروری نہیں  ۔  (بہارِ شریعت حصہ ۲ص ۷۸)

تَیَمُّم کاطریقہ ( حنفی)

            تَیَمُّمکی نِیّت کیجئے (نیّت دل کے ارادے کا نام ہے ،زَبان سے بھی کہہ لیں   تو بہتر ہے ۔مَثَلاً یوں   کہئے بے وُضوئی یا بے غسلی یا دونوں   سے پاکی حاصل کرنے اور نماز جائز ہونے کے لئیتَیَمُّم کرتی ہوں  ) بسم اﷲپڑھ کردونوں  ہاتھوں  کی اُنگلیاں   کُشاد ہ کر کے کسی ایسی پاک چیزپرجوزمین کی قسم (مَثَلاًپَتّھر،چُونا،اینٹ، دیوار،مٹّی وغیرہ) سے ہومارکرلَوٹ لیجئے (یعنی آگے بڑھائیے اور پیچھے لائیے) اوراگرزِیادہ گَردلگ جائے تو جھاڑ لیجئے اوراُس سے سارے مُنہ کااِس طرح مَسح کیجئے کہ کوئی حِصّہ رہ نہ جائے اگربال



Total Pages: 92

Go To