Book Name:Chanday Kay Baray Main Sawal Jawab

بھائی ہو گئے کیا کریں ؟

جواب : صدرُ الشَّریعہ بدرُ الطَّریقہحضرتِ علّامہ مولانامفتی محمد امجد علی اعظمیعَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ القَوِیفرماتے ہیں  : اِس باب میں  قاعِدۂ کُلِّیَّہ( یعنی اُصول) یہ ہے کہ عَقد   ( یعنی سودا طے کرنے ) کے ذَرِیعے سے جب کسی خاص مَنْفَعَت کا اِستِحقاق( یعنی مخصوص فائدہ حاصِل کرنے کا حق حاصِل ) ہو تو وہ( فائدہ) یا اس کی مِثل ( یعنی اُس کے جیسا) یا اُس سے کم دَرَجہ کا(فائدہ) حاصِل کرنا ، جائز ہے اور زیادہ حاصِل کرنا جائز نہیں  ۔ (بہارِ شریعت ج۳ص۱۳۰)  اس فِقہی جُزْئِیَّہ (جُز ۔ ئی  ۔ یَہ) کی روشنی میں  معلوم ہوا کہ طے شدہ یا اِس سے کم سُواریاں  بٹھانی جائز اور ایک بھی زائد بٹھانی ناجائز ۔ ہاں  جہاں  یہ عرف ہو کہ طے شُدہ سُواریوں  سے دو چار زائد ہو جانے پر اعتراض نہیں  ہوتا وہاں  40کے بجائے 41بٹھانے میں  حَرَج نہیں ۔ ایسے موقع پر آسانی اس میں  ہے کہ سواریوں  کی تعداد بتانے کے بجائے پوری گاڑی کی بکنگ کروالی جائے ۔ جیسا کہ ہمارے ملک میں  بارات وغیرہ کے لئے مکمَّل بس کی بکنگ ہوتی ہے اور اس میں  سواریوں  کی تحدید(یعنی تعداد کی حدبندی) نہیں  ہوتی ۔

 ٹرین میں  بھی طے شدہ سُواریاں  ہی بٹھایئے

سُوال :  اگر ٹرین کی پوری بوگی بُک کروالی جائے تو کیا اب ہم اس میں  اپنی مرضی سے جتنی چاہیں  سُواریاں  بٹھا سکتے ہیں ؟

جواب :  ایک بوگی بک کروائی ہو یا پوری ٹرین، جتنی سُواریوں  کا قانون ہے اور جتنی سُواریوں  کا کِرایہ ادا کیا ہے صِرف اُتنی ہی سُواریاں  بٹھا سکتے ہیں  ۔ طے شدہ سے زائد ایک بھی سُواری مفت بٹھائیں  گے تو گنہگار اور دوزخ کے حقدار ہوں  گے  ۔

 کیا سماجی ادارے اپنے عطیّات دینی کاموں  میں  صَرف کر سکتے ہیں ؟

 سُوال :  سماجی ادارہ کو فلاحی کاموں  کے لئے ملے ہوئے عِطیّات دینی کاموں  میں  استِعمال کئے جا سکتے ہیں  یا نہیں ؟

جواب :  سماجی اداروں  کو لوگ فلاحی کاموں  کیلئے چندہ دیتے ہیں  لہٰذا دینے والے کی اجازت کے بِغیر سماجی ادارے والے عَطِیّات یعنی صَدَقاتِ نافِلہ دینی کاموں  میں  صَرف نہیں  کر سکتے ۔  مَثَلاً ان کو غریبوں  ، محتاجوں اور یتیموں  میں  گوشْتْ بانٹنے کیلئے جو صَدَقے کے بکرے وغیرہ دیئے جاتے ہیں  وہ دینی مدارِس میں  نہیں  دے سکتے ۔ اگر دیں  گے تو تاوان لازِم آئیگا  ۔

            یا ربِّ مصطَفٰے عَزَّ وَجَلَّ ! ہمیں  فرض عُلوم سیکھنے کاجذبہ عطا فرما ۔  یااللہ عَزَّ وَجَلَّ! دین کی خدمت کے لئے بوقتِ ضَرورت بہ نیّتِ سنّت عَین مطابِقِ شریعت ہمیں  خوب خوب چندہ کرنے اور اسے اس کے سو فیصد دُرُست مَصرف میں  



Total Pages: 50

Go To