Book Name:Heroinchi Ki Toba

 

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط         

                 اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہ  الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

پہلے اسے پڑھ لیجئے

        میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!نیکی کی دعوت دینایعنی ’’ اَمْرٌ بِالْمَعْرُوْفِ وَنَہْیٌ عَنِ الْمُنْکَر‘‘ یقینا ہمارے لئے دُنیا وآخرت کی ڈھیروں بھلائیوں کے حُصُول کا بہترین ذریعہ ہے ۔ اللہ  تَعَالٰی نے اِرشاد فرمایا :

كُنْتُمْ  خَیْرَ  اُمَّةٍ  اُخْرِجَتْ  لِلنَّاسِ   تَاْمُرُوْنَ  بِالْمَعْرُوْفِ  وَ  تَنْهَوْنَ  عَنِ  الْمُنْكَرِ   (پ ۴ ، اٰل عمران :  ۱۱۰)

ترجمۂ کنزالایمان : تم بہتر ہوان سب امّتو ں میں جو لوگو ں میں ظاہِر ہوئیں بھلائی کا حکم دیتے ہو اور برائی سے منع کرتے ہو۔

سیِّدُ الْمُرسَلین، خاتَمُ النَّبِیِّین ، جنابِ رحمۃٌ  لِّلْعٰلمِین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے ارشاد فرمایا ، ’’اللّٰہ عَزَّوَجَلَّکی قسم !اگر اللہ  تَعَالٰی تمہارے ذریعے کسی ایک کو بھی ہدایت دے دے تو یہ تمہارے لئے سُرخ اونٹوں سے بہتر ہے ۔‘‘(سنن ابو داؤد ، ج۳، ص ۴۵۰، الحدیث۳۶۶۱)

 حضرت سیِّدُنا کعبُ الاحبار رَضِیَ اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ فرماتے ہیں کہ’’ جنت الفردوس خاص اُس شخص کے لئے ہے جو نیکی کی دعوت دے اور برائی سے منع کرے۔‘‘(تنبیہ المغترّین ص۲۹۰ )

        میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!مسلمانوں تک نیکی کی دعوت پہنچانے کی کوشِش عموماًدو طرح سے ہوتی ہے :

(۱)اِجتِماعی کوشش، (۲) اِنفِرادی کوشش۔ اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّ وَجَلَّ شیخ طریقت امیر اہلسنّت حضرت علّامہ مولانا ابوبلال محمد الیاس عطاؔر قادری دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  کی بنائی ہوئی تحریک ’’دعوتِ اسلامی ‘‘دونوں طرح سے نیکی کی دعوت عام کرنے کے لئے کوشاں ہے ۔ اجتماعی کوشش کے نظارے ہمیں دعوتِ اسلامی کے’’ سنّتوں بھرے اجتماعات‘‘ ، ’’کیسٹ اجتماع‘‘، ’’VCDاجتماع ‘‘، ’’علاقائی دورہ برائے نیکی کی دعوت ‘‘میں نظر آئیں گے اور ِانفِرادی کوشش کے بارے میں امیرِ اہلسنّتدَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ فرماتے ہیں : ’’دعوت ِ اسلامی کا 99.9فیصد کام انفرادی کوشش کے ذریعے ہی ممکن ہے ۔‘‘یہی وجہ ہے کہ آپ دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے نیکی کی دعوت عام کرنے کی ذمہ داری محسوس کرتے ہوئے ایک ایک اسلامی بھائی پر ِانفِرادی کوشش کر کے مسلمانوں کویہ ذہن دینا شروع کیا کہ ’’ان شاء اللّٰہ عَزَّ وَجَلَّ مجھے اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اِصلاح کی کوشش کرنی ہے ۔ ‘‘چنانچہ سوالاً جواباً مرتب کردہ شریعت وطریقت کے جامِع مجموعہ ’’72مَدَنی انعامات ‘‘میں آپ دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے بائیسواں مَدَنی انعام یہ عطاکیا کہ کیا آج آپ نے کم از کم دو اسلامی بھائیوں کو انفرادی کوشش کے ذریعے مَدَنی قافلے ، مَدَنی انعامات اور دیگر مَدَنی کاموں کی ترغیب دِلائی ۔یوں الحمدللّٰہ عَزَّ وَجَلَّ  دعوتِ اسلامی کا ہرمبلغ‘ امیرِاہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی انفرادی کوشش کا تسلسل ہے کہ آپ دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ نے کسی اسلامی بھائی پر انفرادی کوشش کی ، اس نے دوسرے اسلامی بھائی پر انفرادی کوشش کی اور یوں نیکی کی دعوت کا یہ سلسلہ تادمِ تحریر تقریباً 66ممالک تک جاپہنچا ہے۔دعوتِ اسلامی کے اس اہم مَدَنی کام یعنی انفرادی کوشش کی خوب خوب بہاریں ہیں ۔ان میں سے 8 منتخب بہاروں کا پہلاحصہ ’’ہیروئنچی کی توبہ ‘‘کے نام سے شائع کیا جارہا ہے ۔ انفرادی کوشش کا طریقہ سیکھنے کے لئے امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  کی انفرادی کوشش کی VCD ’’عوامی وسوسے اور ان کے جوابات‘‘دیکھنا اور مکتبۃ المدینہ کی مطبوعہ کتاب ’’انفرادی کوشش ‘‘ پڑھنا بے حد مُفید ہے ۔ ہمیں چاہئیے کہ اِس رِسالے کو پڑھنے سے پہلے اچھی اچھی نیتیں کرلیں ، نُور کے پیکر، تمام نبیوں کے سَرْوَر، دو جہاں کے تاجْوَر، سلطانِ بَحرو بَرصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کافرمانِ عالیشان ہے :    نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌ مِّنْ عَمَلِہ مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہتر ہے۔(المعجم الکبیر للطبرانی، الحدیث :  ۵۹۴۲، ج۶، ص۱۸۵)   جتنی اچّھی نیّتیں زِیادہ، اُتنا ثواب بھی زِیادہ۔

      ’’فیضانِ عطار ‘‘ کے نو حُروف کی نسبت سے اس رسالے کو پڑھنے کی 9نیّتیں پیشِ خدمت ہیں :  (۱)ہر بارحَمْد و (۲)صلوٰۃ اور(۳)تعوُّذو (۴)تَسمِیہ سے آغاز کروں گا۔

( صفحہ نمبر 4کے اُوپر دی ہوئی دو عَرَبی عبارات پڑھ لینے سے چاروں نیّتوں پر عمل ہوجائے گا)۔ (۵) حتَّی الْوَسْع اِس کا باوُضُو اور (۶)قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں گا (۷)جہاں جہاں ’’اللہ ‘‘کا نام  پاک آئے گا وہاں  عَزَّ وَجَلَّ  اور(۸) جہاں جہاں ’’سرکار‘‘کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ پڑھوں گا(۹) دوسروں کویہ رسالہ پڑھنے کی ترغیب دلاؤں گااورحسب توفیق اس رسالے کو تقسیم بھی کروں گا۔

        اللہ  تَعَالٰی سے دعا ہے کہ ہمیں ’’اپنی اور ساری دنیا کے لوگوں کی اصلاح کی کوشش‘‘ کرنے کے لئے مَدَنی اِنعامات پر عمل اور مَدَنی قافِلوں کا مسافر بنتے رہنے کی توفیق عطا فرمائے ۔

 اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْن صَلَّی اللہ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم

شعبہ اِصلاحی کتب  مَجلِس اَلْمَدِیْنَۃُ الْعِلْمِیّہ (دعوتِ اسلامی)

 ۱۹ربیع الغوث ۱۴۲۹ ھ، 26اپریل 2008ء     

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط                                         

                      اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہ  الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

 



Total Pages: 8

Go To