Book Name:Karamat e Khuwaja

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

کراماتِ خواجہ

دُعائے عطار : یا ربِّ المصطفےٰ!جوکوئی 16صفحات کارِسالہ ’’کراماتِ خواجہ‘‘پڑھ یا سُن لے اُسےخواجہ غریب نواز ( رَحْمَۃُ اللہِ عَلَیْہ )کی خواب میں زیارت نصیب فرما اور اُسے اپنے آخری نبی صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ  وَآلہ ِوَسَلَّمَ  کے پیچھے پیچھے جنّتُ الفردوس میں داخلہ  اور آپ صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ  وَآلہ ِوَسَلَّمَ  کا بِلا حساب پڑوس عنایت فرما۔ اٰمِین بِجاہِ النَّبِیِّ الْاَمین  صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ  وَآلہ ِوَسَلَّمَ         

دُرُود شریف کی فضیلت  

فرمانِ  سیِّدُنا  عبدُاللہ ابنِ عَمروبن عاص رَضِیَ  اللہُ   عَنْہُمَاہے : جو نبیِّ پاک ، صاحبِ لولاک صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ  وَآلہ ِوَسَلَّمَ  پر ایک بار دُرُود پاک پڑھے گا اُس پر اللہپاک اور اُس کےفرشتے 70 مرتبہ رحمت بھیجیں  گے۔ (مسندامام احمد ، ۲ / ۶۱۴ ، حدیث : ۶۷۶۶ )

صَلُّوا عَلَی الْحَبِیب !                                                                                             صلَّی اللہُ علٰی محمَّد

                             کہتے ہیں ایک بادشاہ بڑا ظالم اوربدمزاج تھا۔ اُس کاشہر کے اَطراف میں ایک نہایت خوبصورت باغ تھا ۔ جس میں صاف وشفاف پانی کا ایک حوض تھا ، ایک اللہوالے کا وہاں سے گُزرہوا تو و ہ اُس باغ میں تشریف لے گئے اورحوض کے پانی سے غسل فرما کر نماز اداکرکےوہیں بیٹھ کر تلاوتِ قرآن میں مصروف ہوگئے کہ اِتنے میں بادشاہ کے آنے کا شور بُلند ہوا ، مگر وہ  اللہ   پاک کا نیک بندہ اطمینان کے  ساتھ یادِ خدا میں مصروف رہا۔ جب وہ ظالم حاکم اپنی شاہی شان و شوکت کے ساتھ باغ میں داخل ہو ا توحوض کےکنارے سادے سے لباس میں ایک نیک صفت شخص کو دیکھ کر آگ بگولہ ہوگیا ، وہ اپنے سپاہیوں پر غضبناک ہوکر بولا کہ اِس شخص کو کِس نے میرے  باغ میں بیٹھنے کی اِجازت دی ؟سپاہی


 

 



Total Pages: 16

Go To