Book Name:Durood Shareef ki Barkatain

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب                                                    صلَّی اللہُ علٰی محمَّد

صحابۂ کرام عَلَیْہمُ الرِّضوان کے5 ارشادات

1۔   فرمانِ سیِّدُناصدّ ِ  یْقِ اکبررَضِیَ اللہ عَنْہُ  ہےکہ  نبیِّ کریم ،رَء ُوْفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ    پر دُرُودِ پاک پڑھنا گناہوں  کو اِس قَدَر جلد مٹاتاہے کہ پانی بھی آگ کو اُتنی جلدی نہیں  بجھاتااورنبی کریمصَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ    پرسلام بھیجنا گردنیں(یعنی غلاموں  کو) آزاد کرنےسےافضل ہے۔(تاریخِ بغداد ،ج۷  ص ۱۷۲)

2۔   فرمانِ سیِّدتناعائشہ صدیقہ رَضِیَ اللہ عَنْہا ہےکہ تم اپنی مجالس کو نبی کریم صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  پر دُرُودِ پاک پڑھ کر آراستہ کرو۔      (تاریخ بغداد، ج۷ ص۲۱۶ )

3۔   فرمانِ سیِّدُنافاروقِ اعظمرَضِیَ اللہ عَنْہ ہے: بے شک دعازمین وآسمان کے درمِیان ٹھہری رہتی ہے اور اُس سے کوئی چیز اوپر کی طرف نہیں  جاتی جب تک تم اپنے نبیِّ  اَکرم صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  پردُرودِ پاک نہ پڑھ لو ۔                                         (تِرمِذی،ج۲ ص۲۸ حدیث:۴۸۶ )

4۔   فرمانِ سیِّدُنامولیٰ علی مشکل کشا کَرَّمَ اللہُ وَجْہَہُ الْکَرِیْم ہے:ہرشخص کی دُعا پردے میں  ہوتی ہے یہاں  تک کہ محمدصَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ اور آلِ محمدپر دُرُودِ پاک پڑھے۔                    

(مُعْجَم اَوسط،ج۱ ص۲۱۱ حدیث۲۷۱ )

5۔   فرمانِ  سیِّدُنا عَبْدُاللہ ابنِ عمروبن عاص رَضِیَ اللہ عَنْہمَاہے:جو نبیِّ کریم ،رَء ُوْفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  پرایک بار دُرُود پاک پڑھےگا اُس پراللہکریم اور اُس کے فِرِشتے 70 مرتبہ رحمت بھیجیں  گے۔(مُسندِ امام احمد،ج۲ ص۶۱۴ حدیث۶۷۶۶ )

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                                                                                                                     صَلَّی اللّٰہُ  عَلٰی مُحَمَّد

’’   اَلصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلَیْکَ یَاسَیِّدَ الْمُرْسَلِیْنَ‘‘کے تیس حُرُوف کی نسبت سے دُرُود شریف کے 30 مَدَنی پھول

                             (1) اللّٰہ کریم کےحکم کی تعمیل ہوتی ہے ۔ (2) ایک مرتبہ دُرود شریف پڑھنے والے پر دس رحمتیں نازل ہوتی ہیں ۔(3) اس کے دس درجات بلند ہوتے ہیں ۔ (4) اس کے لیے دس نیکیاں لکھی جاتی ہیں ۔(5) اس کےدس گناہ مٹائے جاتے ہیں ۔(6) دُعا سے پہلے دُرُود شریف پڑھنا دُعا کی قبولیت کا باعث ہے ۔(7) دُرُود شریف پڑھنا نبی ِ رحمت  صَلَّی  اللہ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کی شفاعت کا سبب ہے ۔(8) دُرُود شریف پڑھنا گناہوں کی بخشش کا باعث ہے ۔(9) دُرُود شریف کے ذَرِیعے اللّٰہ   پاک بندے کے غموں کو دور کرتا ہے ۔  (10) دُرُودشریف پڑھنے کے باعث بندہ قیامت کے دن رسولِ اکرم   صَلَّی  اللہ  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کا قُرب حاصل کرے گا۔(11) دُرُودشریف تنگ دَسْت کے لیے صَدَقہ کے قائم مقام ہے ۔(12) دُرُودشریف قضائےحاجات کا ذَرِیعہ ہے ۔(13) دُرُود شریف اللّٰہ   پاک  کی رحمت اور فرشتوں کی دُعا کا باعث ہے ۔ (14) دُرُود شریف اپنے پڑھنے والے کے لیے پاکیزگی اور طہارت کا باعث ہے ۔(15) دُرُودشریف سے بندے کو موت سے پہلے جنّت کی خوشخبری مل جاتی ہے ۔(16) دُرُودشریف پڑھنا قیامت کے خطرات سے نَجات کا سبب ہے ۔(17) دُرُودشریف پڑھنے سے بندے کو بھولی ہوئی بات یاد آجاتی ہے ۔(18) دُرُودشریف مجلس کی پاکیزگی کا باعث ہے اورقیامت کے دن یہ مجلس باعث حسرت نہیں ہوگی۔ (19) دُرُودشریف پڑھنے سے فقر(تنگدستی )دور ہوتا ہے ۔(20) یہ عمل بندے کو جنَّت کے راستے پر ڈال دیتاہے ۔ (21) دُرُود شریف پل صِراط پربندے کی روشنی میں اِضافہ کا باعث ہے۔ (22)دُرُود شریف کے ذَرِیعے بندہ ظلم وجفا سے نکل جاتاہے ۔(23)دُرُودشریف پڑھنے کی وجہ سے بندہ آسمان اورزمین میں قابلِ تعریف ہو جاتا ہے ۔(24) دُرُودشریف پڑھنے والے کو اس عمل کی وجہ سے اس کی ذات ، عمل ، عُمْر اور بہتری کے اَسباب میں برکت حاصل ہوتی ہے ۔ (25) دُرُود شریف رحمت ِخداوندی کے حُصُول کا ذَرِیعہ ہے ۔(26) دُرُودشریف محبوبِ  رَبُّ الْعِزَّت  صَلَّی  اللہ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   سےدائمی محبّت اور اس میں زِیادت کا سبب ہے اوریہ (محبّت) ایمانی عُقُود میں سے ہے۔ جس کے بغیر ایمان مکمل نہیں ہوتا۔(27)دُرُود شریف پڑھنے والے سےآپ  صَلَّی  اللہ   عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ محبت فرماتے ہیں ۔(28) دُرُود شریف پڑھنا ، بندے کی ہدایت اوراس کی زندہ دلی کا سبب ہے کیونکہ جب وہ آپ   صَلَّی  اللہ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   پرکثرت سے دُرُود شریف پڑھتا ہے اورآپ کا ذکر کرتاہے توآپ صَلَّی  اللہ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   کی محبّت اس کے دل پر غالب آجاتی ہے۔(29) دُرُود شریف پڑھنے والے کا یہ اِعزاز بھی ہے کہ سلطانِ اَنام صَلَّی  اللہ  عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی بارگاہ بےکس پناہ میں اس کا نام پیش کیا جاتاہے اور اس کا ذکر ہوتاہے۔(30) دُرُود شریف پل صراط پر ثابت قَدمی اور سلامتی کے ساتھ گزرنے کا باعث ہے۔

 (جِلَاءُالْاَفْہَامِ  ،ص۲۴۶تا۲۵۳ ملتقطًا)

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب                                                    صلَّی اللہُ علٰی محمَّد

سرکار  صَلَّی  اللہ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   کے د یدار کے طلبگار کیلئے تحفہ

اَللّٰہُمَّ صَلِّ عَلٰی رُوْحِ مُحَمَّدٍ فِی الْاَرْوَاحِ وَعَلٰی

جَسَدِہٖ فِی الْاَجْسَادِ وَعَلٰی قَبْرِہٖ فِی الْقُبُوْرِ

                                                نبیِّ اکرم، نُورِ مُجَسَّم صَلَّی  اللہ   عَلَیْہِ وَاٰ لِہٖ وَسَلَّمَ  کافرمانِ شفاعت نشان ہے: جوشخص یہ دُرُودِ پاک پڑھے اس کو خواب میں میری زِیارت ہوگی اورجس نے خواب میں مجھےدیکھا وہ مجھے قیامت کے دن بھی دیکھے گا اورجو مجھے قیامت کے دن دیکھ لے گا میں اس کی شفاعت کروں گا اورمیں جس کی شفاعت کروں گا وہ حوض کوثرسے پانی پئے گا اوراس کےجسم کواللّٰہ  پا  ک دوزخ پر



Total Pages: 6

Go To