Book Name:Khushnaseeb Mareez

                                                چکوال(پنجاب) کے ایک اِسلامی بھائی کا بیان کچھ اس طرح ہے کہ میری چھوٹی بہن (عمر تقریباً 5سال) کو کان میں تکلیف شروع ہوئی ۔ بہت علاج کروایا مگر آرام نہ آیا ۔ اس کے کان سے خون اور پیپ بہتی رہتی ۔ بعض اوقات درداتنا شدید ہوجاتا کہ میری بہن رونا شروع کردیتی ۔ علاقے کے ڈاکٹروں نے مشورہ دیا کہ اسے کسی بڑے اسپتال میں دکھائیے۔چنانچہ ہم نے راولپنڈی اور اسلام آباد کے بڑے بڑے ہسپتالوں سے علاج کروایا لیکن میری بہن صحت یاب نہ ہوسکی۔

                                                اِسی دوران 2002ء میں مدرس کورس کیلئے دعوتِ اِسلامی کے عالَمی مَدَنی مرکز فیضانِ مدینہ باب المدینہ کراچی آیا۔جب واپس گھر جانا ہوا تو مجلسِ مکتوبات وتعویذاتِ عطّارِیہ کے بستے سے چھوٹی بہن کے لئے تعویذ لیااور چھوٹی بہن کو پہنا دیا ۔ اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ اس کی بَرَکت سے میری بہن کے کان کا درد ختم ہوچکا ہے ۔

اللّٰہ  عَزّوَجَلَّ کی  امیرِ اَہلسنّت پَر رَحْمت ہو اور ان کے صدْقے ہماری مغفِرت ہو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !   صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد   

(10)   جِنّ سے جان چھوٹ گئی

                                                ایک اِسلامی بھائی کا بیان کچھ یوں ہے کہ میری چھوٹی بہن (عمر تقریباً 4سال)پر جنات کے اثرات تھے ۔ ہفتے میں تین یاچار مرتبہ رات کے آخری پہر میں اُس پر جن ظاہر ہوتا ۔جیسے ہی وہ جن ظاہر ہوتا میری بہن اٹھ کر شور مچانا شروع کردیتی۔ اس کا چہرہ بالخصوص آنکھیں خوفناک ہوجاتیں ۔وہ اِدھر اُدھر بھاگنا شروع کردیتی ، گھر والے بڑی مشکل سے اسے سنبھالتے ۔ اس کے جسم میں اتنی طاقت نہ جانے کہاں سے آجاتی تھی ۔کچھ دیر تک وہ عجیب وغریب زبان بولتی رہتی جس کی ہمیں کچھ سمجھ نہ پڑتی تھی ۔پھر جب وہ جن چلاجاتا تو وہ بے سدھ ہوکر گر جاتی اور نیندکی آغوش میں پہنچ جاتی ۔ اس کے جسم میں ہروقت درد رہتا تھا ۔

                                                اِسی دوران میں دعوتِ اِسلامی کے عالمی مَدَنی مرکز فیضانِ مدینہ باب المدینہ کراچی مدرس کورس کرنے کیلئے حاضر ہوا۔ جب با ب المدینہ کراچی سے واپسی ہوئی تو میں مجلسِ مکتوبات وتعویذاتِ عطّارِیہ سے جنات سے حفاظت کا تعویذ لیتا آیا ۔گھر پہنچ کر وہ تعویذ اپنی چھوٹی بہن (جو امیرِ اہلسنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ  سے مرید ہوکر عطاریہ بھی بن چکی تھی)کے گلے میں ڈال دیا ۔ وہ دن اورآج کا دن !  اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّوَجَل جنات کبھی اس کے قریب نہیں آئے اور اس کے جسم کا درد بھی ختم ہوچکا ہے ۔اللّٰہ عَزّوَجَلَّ کی  امیرِ اَہلسنّت پَر رَحْمت ہو اور ان کے صدْقے ہماری مغفِرت ہو  

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !  صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(11)  بائی پاس آپریشن سے بچ گئے

                        ایک اِسلامی بھائی کا بیان کچھ اس طرح ہے کہ میرے والد صاحب کو ایک دن اچانک دل میں درداٹھا۔انہیں ڈاکٹر کے پاس لے جایاگیا۔ ڈاکٹر نے مختلف ٹیسٹ کروائے اور بتایا کہ ان کے دل کی اکثرنالیاں بند ہیں ۔میں نے سوال کیا : ’’ اس کا کیا علاج ہے؟‘‘کہنے لگے : ’’ بائی پاس آپریشن ۔‘‘یہ سن کر گھر کے افراد پریشان ہوگئے اور رونے لگے ۔ میں نے مجلسِ مکتوبات وتعویذاتِ عطّارِیہ کے بستے پر اِسلامی بھائی کو والد صاحب کی بیماری سے آگاہ کیا ۔ انہوں نے مجھے ایک تعویذ دیا اور پہنانے کا طریقہ بھی بتایا ۔میں نے ان کے بتائے ہوئے طریقے کے مطابق وہ تعویذ والد صاحب کو پہنادیا۔ جب دوبارہ ڈاکٹر کو چیک کروایا تو انہوں نے E.C.Gکی رپورٹ کو دیکھا تو مسکرائے اور والد صاحب سے کہنے لگے کہ اب آپ کو اجازت ہے پیدل سفر کریں ، اپنے کام پر بھی جائیں ۔   

 اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّ وَجَلَّ  تعویذاتِ عطّارِیہ کی بَرَکت سے میرے والد صاحب اب تندرست ہیں ۔ وہ روزانہ گھر سے دکان اور دکان سے گھر2کلومیٹر کا فاصلہ پیدل طے کرتے ہیں اور دکان کا پورا کام خود کرتے ہیں ۔

اللّٰہ عَزّوَجَلَّ کی  امیرِ اَہلسنّت پَر رَحْمت ہو اور ان کے صدْقے ہماری مغفِرت ہو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !  صلَّی اللّٰہُ تعالٰی علٰی محمَّد

(12)  پُرانابُخار جاتا رہا

                        باب الاسلام سندھ  کے اِسلامی بھائی کا بیان کچھ اس طرح ہے کہمیرا بھانجا تقریباً4سال سے بیمار تھا۔ مختلف ڈاکٹروں سے علاج کروایا مگر وہ مکمل طور پر صحت مند نہیں ہوپارہا تھا۔کبھی کبھی تو اسے ہفتہ بھر بخاررہتا۔مسلسل بخار رہنے کی وجہ سے اسے T.Bہوگئی ۔ گھر والے سخت پریشان تھے۔اسی دوران ضلع خیرپور میں مجلسِ مکتوبات وتعویذاتِ عطّارِیہ کا بستہ لگناشروع ہوا۔میں نے وہاں سے تعویذاتِ عطّارِیہ حاصل کئے اور بھانجے کو استعمال کروائے ۔اَلْحَمْدُلِلّٰہ عَزَّ وَجَلَّ  تعویذاتِ عطّارِیہ کی بَرَکت سے اس کا پرانا بخار اور T.Bختم ہوگئی۔

اللّٰہ عَزّوَجَلَّ کی  امیرِ اَہلسنّت پَر رَحْمت ہو اور ان کے صدْقے ہماری مغفِرت ہو

صَلُّو ا عَلَی الْحَبِیب !  صلَّی اللّٰہُ تعالٰی عَلٰی محمَّد   

(13)   گلے کی تکلیف سے پیچھا چھوٹ گیا

                        باب الاسلام سندھ کے ایک اِسلامی بھائی کا بیان کچھ یوں ہے کہمیری ہمشیرہ 3سال سے گلے کی تکلیف میں مبتلاتھیں ۔ان کے گلے کے غدود بڑھے ہوئے تھے۔ مختلف ڈاکٹروں



Total Pages: 8

Go To