Book Name:Uyun ul Hikayaat Hissa 1

پھر میں نے اس سے پوچھا:’’ اے راہب! تو کہا ں سے کھاتا ہے ؟‘‘ کہنے لگا:’’ میں ایسی کھیتی سے اپنا رزق حاصل کرتاہو ں جسے میں نے کاشت نہیں کیا بلکہ اسے تو اس ذات نے پیدا فرمایا ہے جس نے یہ چکّی یعنی داڑھیں میرے منہ میں نصب کیں ،میں اسی کا دیا ہوا رزق کھاتا ہوں۔‘‘ میں نے پوچھا:’’ تم اپنے آپ کو کیسا محسو س کرتے ہو؟‘‘ کہنے لگا:’’ اس مسافر کا کیا حال ہوگا جو بہت دشوار گزار سفر کے لئے بغیر زادِراہ کے روانہ ہوا ہو ، او راس شخص کا کیا حال ہوگا جو اندھیری اور وحشت ناک قبر میں اکیلا رہے گا، وہاں کوئی غم خوار ومو نِس نہ ہوگا پھر اس کا سامنا اس عظیم و قہار ذات سے ہوگا جو احکمُ الحاکمین ہے جس کی بادشاہی تمام جہانوں میں ہے۔‘‘ اتنا کہنے کے بعد وہ راہب زار وقطار رونے لگا۔

             میں نے پوچھا:’’ تجھے کس چیز نے رلایا ؟‘‘ کہنے لگا:’’مجھے جوانی کے گزرے ہوئے وہ ایام رُلا رہے ہیں جن میں ،مَیں کچھ نیکی نہ کرسکا اور سفرِ آخرت میں زادِ راہ کی کمی مجھے رُلا رہی ہے، کیا معلوم میرا ٹھکانا جہنم ہے یا جنت؟‘‘

            میں نے پوچھا:’’ غریب کون ہے ؟‘‘ کہنے لگا:’’ غریب اور قابلِ رحم وہ شخص نہیں جو روزی کے لئے شہربہ شہر پھرے بلکہ غریب (اور قابلِ رحم) تو وہ شخص ہے جو نیک ہو اور فاسقوں میں پھنس جائے ۔‘‘

             بار بارصرف(زبان سے) استغفار کرنا (اور دل سے توبہ نہ کرنا) توجھوٹو ں کا طریقہ ہے ، اگر زبان کو معلوم ہوجاتا کہ کس عظیم ذات سے مغفرت طلب کی جارہی ہے تو وہ منہ میں خشک ہوجاتی۔ جب کوئی دنیا سے تعلق قائم کرتا ہے توموت اس کا تعلق ختم کردیتی ہے ۔

            پھرکہنے لگا:’’اگر انسان سچے دل سے تو بہ کرے تواللہ عزوجل اس کے بڑے بڑے گناہوں کو بھی معاف فرمادیتا ہے ، اور جب بندہ گناہوں کو چھوڑنے کا عزمِ مصمّم کرلے تو اس کے لئے آسمانوں سے فتوحات اترتی ہیں ،اور اس کی دعائیں قبول کی جاتی ہے ، او ر ان دعاؤں کی برکت سے اس کے سارے غم کافور ہوجاتے ہیں۔‘‘راہب کی حکمت بھری باتیں سن کرمیں نے اس سے کہا:’’ میں تمہارے ساتھ رہنا چاہتا ہوں ،کیا تم اس بات کو پسند کر وگے ؟‘‘تو وہ راہب کہنے لگا:’’میں تمہارے ساتھ رہ کر کیا کروں گا، مجھے تو اس خدا عزوجل کا قرب نصیب ہے جو رزّاق ہے اورروحوں کو قبض کر نے والا ہے ،وہی موت وحیات دینے والا ہے ، وہی مجھے رزق دیتا ہے ،کوئی اور ایسی صفات کا مالک ہو ہی نہیں سکتا (یعنی مجھے وہ ذات کا فی ہے ، میں کسی غیر کا محتاج نہیں )

 

 

 

 

۷ ۷ ۷ ۷ ۷ ۷ ۷ ۷ ۷

 

 

 

 

 



Total Pages: 412

Go To