Book Name:Jahannam Kay Khatrat

         حضرت ابن عمر رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  روایت کرتے ہیں کہ حضور نبی کریم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے ارشاد فرمایا جو گھمنڈ سے اپنے کپڑے کو زمین پر گھسیٹتا ہوا چلے،   اللہ  تَعَالٰی اس کو اپنی رحمت کی نظر سے نہیں دیکھے گا۔  (صحیح البخاری، کتاب اللباس، باب من جرازارہ من غیرخیلائ، الحدیث ۵۷۸۴، ج۴، ص۴۵)

حدیث : ۳

         حضرت ابن عمر رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے کہ رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا کہ ایک شخص گھمنڈ سے اپنے تہبند کو گھسیٹتا ہوا چلاجا رہا تھا تو وہ زمین میں دھنسا دیا گیا اور وہ اسی طرح قیامت تک زمین میں دھنستا چلا جائے گا۔        (صحیح البخاری، کتاب احادیث الانبیاء علیہم السلام، باب ۵۶، الحدیث :  ۳۴۸۵، ج۲، ص۴۷۱)

حدیث : ۴

        حضرت ابوہریرہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے انہوں نے کہا کہ  رَسُولَ  اللہ  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جو کپڑا ٹخنوں کے نیچے ہے وہ جہنم میں ہے۔

(صحیح البخاری، کتاب اللباس ، باب ماأسفل من الکعبین...الخ، الحدیث :  ۵۷۸۷، ج۴، ص۴۶)

حدیث : ۵

         امیر المومنین حضرت عمر و انس و ابن زبیر و ابو امامہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُم حضور نبی کریم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  سے روایت کرتے ہیں کہ حضور  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا :  جو     

ریشمی لباس دنیا میں پہنے گا وہ آخرت میں اس لباس کو نہیں پہنے گا۔ (صحیح البخاری، کتاب اللباس ، باب لبس الحریر...الخ، الحدیث :  ۵۸۳۴، ج۴، ص۵۹)

حدیث : ۶

         امیر المومنین حضرت علیرَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے انہوں نے کہا کہ  رَسُولَ  اللہ  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کے پاس کسی نے ریشمی لباس بطور ہدیہ کے بھیج دیا تو حضور  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے اس کو میرے پاس بھیج دیا۔ اور میں نے اس کو پہن لیا۔ تو میں نے حضور   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  کے چہرے پر غضب کے آثار کو پہچانا۔ پھر حضور    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا کہ میں نے اس کپڑے کو تمہارے پاس اس لئے نہیں بھیجا تھا کہ تم اس کو پہنو بلکہ اس لئے بھیجا تھا کہ تم اس کو پھاڑ کر عورتوں کی اوڑھنی بنا لو۔

 (صحیح مسلم، کتاب اللباس و الزینۃ، باب تحریم استعمال اناء الذھب...الخ، الحدیث۲۰۷۱، ص۱۱۴۹)

حدیث : ۷

         حضرت ابو ریحانہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے دس چیزوں سے منع فرمایا :

(۱) دانتوں کو ریتی سے ریت کر پتلا کرنے سے (۲)گودنا گدوانے سے (۳) بھنووں اور چہرے کے بال نوچنے سے (۴) ننگے بدن مرد کو مرد کے ساتھ لپٹ کر سونے سے  (۵)ننگے بدن عورت کو عورت کے ساتھ لپٹ کر سونے سے (۶) اپنے کپڑوں کے نیچے ریشمی کپڑا اس طرح رکھنے سے جیسے عجمی لوگ رکھتے ہیں (۷) اپنے کندھوں پر ریشمی کپڑا رکھنے سے جیسے عجمی لوگ رکھا کرتے ہیں ۔(۸) لوٹ مار کرنے سے   (۹)چیتے کی کھال پر بیٹھنے اور سوار ہونے سے ۰) انگوٹھی پہننے سے مگر حاکم کیلئے۔  (سنن ابی داود، کتاب اللباس، باب من کرھہ، الحدیث۴۰۴۹، ج۴، ص۶۸)

حدیث : ۸

         حضرت عبد  اللہ  بن عمرو رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے کہ ایک شخص سرخ رنگ کا جوڑا پہن کر حضور    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ کے پاس سے گزرا اور سلام کیا تو حضور    صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے اس کے سلام کا جواب نہیں دیا۔(سنن الترمذی، کتاب الادب، باب ماجاء فی کراہیۃ...الخ، الحدیث :  ۲۸۱۶، ج۴، ص۳۶۸)

حدیث : ۹

         حضرت ابو موسیٰ اشعری رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ نبی کریم  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا ہے کہ میں نے سونا اور ریشمی کپڑا اپنی امت کی عورتوں کیلئے حلال کیا ہے اور اپنی امت کے مردوں پر ان دونوں کو حرام کیا ہے۔(المسند للامام احمد بن حنبل، حدیث ابی موسیٰ الاشعری، الحدیث۱۹۵۲۰، ج۷، ص۱۲۶)

حدیث : ۱۰

         حضرت ابن عمر  رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا