Book Name:Jahannam Kay Khatrat

حدیث : ۱

         حضرت ابوہریرہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ   سے روایت ہے کہ ایک چیونٹی نے ایک نبی علیہ السلام   کو کاٹ لیا تو انہوں نے چیونٹیوں کے مسکن کو جلا دینے کا حکم دے دیا، اور وہ   جلا دیا تو   اللہ  تَعَالٰی نے اس نبی  علیہ السلام پر یہ وحی اتاری کہ تم کو تو ایک چیونٹی نے کاٹا تھا۔ مگر تم نے ایک ایسی امت کو جلا دیا جو خدا کی تسبیح پڑھتی تھی ۔  (صحیح البخاری، کتاب الجھاد والسیر، باب۱۵۳ ، الحدیث : ۳۰۱۹، ج۲، ص۳۱۵)   

حدیث : ۲

         حضرت عبد   اللہ   بن عمر رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُمَا    سے روایت ہے کہ حضور نبی ٔکریم    صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ    نے فرمایا کہ ایک عورت ایک بلی کے معاملہ میں جہنم کے اندرداخل کی گئی۔اس نے ایک بلی کو باندھ رکھا تھا ، نہ اس کو کچھ کھلایا پلایانہ اس کو چھوڑا کہ وہ کیڑے مکوڑوں کو کھاتی یہاں تک کہ وہ مر گئی۔(صحیح البخاری، کتاب بدء الخلق ، باب خمس من الدوّاب...الخ، الحدیث :  ۳۳۱۸، ج۲، ص۴۰۸)

حدیث : ۳

         حضرت ابن عمر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے انہوں نے کہا کہ رسول   اللہ    صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  سے میں نے سنا ہے کہ جو کسی جاندار کو لٹکا کر اس پر نشانہ لگائے وہ ملعون ہے۔      

 (صحیح مسلم، کتاب الصید والذبائح...الخ، باب النھی عن صبر البھائم، الحدیث۱۹۵۸، ص۱۰۸۱)

حدیث : ۴

         حضرت شداد بن اوس رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ رسو ل   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا کہ  اللہ  تَعَالٰی  نے ہر چیز میں بھلائی کرنے کا حکم فرمایا ہے۔لہٰذا تم جب کسی کو قتل کرو تو اچھے طریقے سے قتل کرو اور جب تم کسی جانور کو ذبح کرو تو اچھے طریقے سے ذبح کرو چھری تیز کرو اور ذبیحہ کو راحت پہنچاؤ۔     

(صحیح مسلم، کتاب الصیدوالذبائح...الخ، باب الأمرباحسان...الخ، الحدیث :  ۱۹۵۵، ص۱۰۸۰)

حدیث : ۵

         حضرت جابر  رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ       سے روایت ہے کہ رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے جانوروں کو ان کے چہروں پر مارنے اور داغ لگانے سے منع فرمایا ہے۔  

(صحیح مسلم، کتاب اللباس والزینۃ، باب النھی عن ضرب الحیوان...الخ، الحدیث : ۲۱۱۶، ص۱۱۷۱)

حدیث : ۶

        حضرت جابر رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ   سے مروی ہے کہ ایک دفعہ ایک گدھا  رَسُولَ  اللہ  صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ   کے سامنے سے گزرا جس کے چہرے پر داغ لگایا گیا تھاتو آپ صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا کہ اس شخص پر   اللہ  کی لعنت ہو جس نے اس کے چہرے پر داغ لگایا ہے۔ (صحیح مسلم، کتاب اللباس والزینۃ، باب النھی عن ضرب الحیوان ...الخ، الحدیث : ۲۱۱۷، ص۱۱۷۲)

حدیث : ۷

         حضرت عبد   اللہ   بن عمرو بن العاص رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا  سے روایت ہے کہ رسول   اللہ   صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  نے فرمایا کہ جو شخص ایک گُوریا(چڑیا)کو یا اس سے بڑے پرندے کو ناحق قتل کر دے تو   اللہ  تَعَالٰی اُس سے اُس کے قتل کے بارے میں پوچھ گچھ فرمائے گا تو کسی نے کہا کہ یا رسول    اللہ   ! صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ  اس کا حق کیا ہے؟ تو فرمایاکہ یہ ہے کہ اس کو ذبح کرے اور کھائے، نہ یہ کہ اس کا سر کاٹ کر پھینک دے۔(مشکوٰۃ المصابیح، کتاب الصید والذبائح، الفصل الثانی، الحدیث : ۴۰۹۴ج۲ ،  ص۴۲۹۔سنن النسائی، کتاب الضحایا، باب من قتل عصفورابغیرحقھا، ج۷، ص۲۳۹)

حدیث : ۸

         حضرت سہل بن الحنظلیہ رَضِیَ  اللہ  تَعَالٰی عَنْہُ   سے روایت ہے کہ رسول   اللہ    صَلَّی  اللہ  تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ        ایک ایسے اونٹ کے پاس سے گزرے جس کی پیٹھ اُس کے پیٹ سے (بھوک کی وجہ سے) مل گئی تھی۔ تو حضور  صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے فرمایا کہ تم لوگ اِن  بے زبان جانوروں کے بارے میں ا ﷲ تَعَالٰی  سے ڈر و ان پر اُس وقت سوار ہوا کرو جب کہ وہ اچھی حالت میں ہوں اور جب انہیں چھوڑو تو اُس وقت بھی انہیں اچھی حالت میں چھوڑو ۔

(مشکوٰۃ المصابیح، کتاب النکاح، باب النفقات وحق المملوک، الفصل الثانی، الحدیث :  ۳۳۷۰، ج۲ ، ص

Total Pages: 57

Go To