Book Name:Munkar Nakeer Kay Suwalat Main Asani Ka Wazifa

 

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

مُنکر نکیر کے سُوالات میں آسانی کا وَظیفہ ([1])

شیطان لاکھ سُستی دِلائے یہ رِسالہ(۱۵ صَفحات) مکمل پڑھ لیجیے اِنْ  شَآءَ اللّٰہ  معلومات کا اَنمول خزانہ  ہاتھ آئے  گا۔

دُرُود شریف کی فضیلت

فرمانِ مصطفےٰصَلَّی اللّٰہُ عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم!اے لوگو! بےشک بروزِ قیامت اس کی دہشتوں(یعنی گھبراہٹوں )اور حساب کتاب سے جلد نجات پانے والا شخص وہ ہو گا جس نے تم میں  سے مجھ پر دُنیا کے اندر بکثرت دُرُود شریف پڑھے ہوں  گے۔([2])    

صَلُّوْا عَلَی الْحَبِیْب!                                                صَلَّی اللہُ عَلٰی مُحَمَّد

کسی فرد سے بَدظن  ہو کر دعوتِ اسلامی کو نہ چھوڑا جائے

عالمی مَدَنی مَرکز فیضانِ مدینہ کے تربیتی اِعتکاف میں روزانہ رات مَدَنی مذاکرے سے پہلے چند مُعْتَکِفِیْن کے ریکارڈ شُدہ تأثرات سنائے جاتے ہیں۔انہیں میں سے ایک اعلیٰ دُنیوی تعلیم یافتہ مُعْتَکِف نے اپنے تأثرات دیتے ہوئے دعوتِ اسلامی والوں کے اچھے اَخلاق کی بہت تعریف کی اور مُعاشرے کی بے راہ روی، کِردار کی پستی اور امن وسکون کی بَربادی کو ختم کرنے میں دعوتِ اسلامی کی مثبت کوششوں پر روشنی ڈالی اور پھر ہمیشہ دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول سے وابستہ رہنے اور دَرسِ نظامی میں داخلہ لے کر عالِم کورس کرنے کی نیت بھی کی۔جس پر امیرِ اہلسنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہنے ان کے جَذبات کو سراہا اور پھر اِس طرح کے مَدَنی پُھول دیتے ہوئے  اِرشاد فرمایا :   

مَاشَآءَ اللّٰہ! یہ دعوتِ اسلامی والوں کے اچھے اَخلاق سے مُتأثر ہوئے اور ہمیشہ مَدَنی ماحول سے وابستہ رہنے بلکہ دَرسِ نظامی(یعنی عالِم کورس) کرنے کی بھی نیت کی۔اللہپاک انہیں اِستقامت عطا فرمائے۔ یہاں یہ عرض کرتا چلوں کہ مَدَنی ماحول میں جہاں ملنسار اور اچھے اَخلاق والے اسلامی بھائی ہوتے ہیں وہاں بعض بَداخلاق اور اَڑیل بھی آ جاتے ہیں۔ جو غصہ آنے پر اس قسم کی گفتگو بھی کرتے ہوں گے کہ تیرا مُنہ توڑ دوں گا، خود کو کىا سمجھتا ہے؟ رَمَضَان کا مہىنا ہے اور مىرے سر پر عمامہ ہے ، ابھی مىں تم کو کچھ نہىں بولتا ، چاند ہونے پر باہر نکلو پھر میں بتاتا ہوں، اِعتکاف مىں بھى ایسے لوگ بىٹھ جاتے ہىں اور بعض اوقات تو بَرسوں سے بىٹھنے والے  ہوتے ہىں لیکن مَدَنى پُھول سنتے نہیں اور اگر سنتے ہىں تو قبول کرنے کى صَلاحىت نہىں ہوتى۔بہرحال  اگر آپ کو ایسا کوئی اَڑیل مل  جائے تو اس کے لیے ذہنی طور پر تیار رہیے گا اور اس ایک کی وجہ سے ہمیں  چھوڑ کر مَت جائىے گا۔اَلْحَمْدُ لِلّٰہ! ہم تو پىار والے لوگ ہىں ۔کاش! سارا مُعاشرہ حُسنِ اَخلاق کا پىکر بن جائے لىکن ظاہر ہے کہ پانچوں اُنگلىاں برابر نہىں ہوتى ۔ مارا مارى والے بھى آتے ہىں، جىب کترے بھى پہنچ جاتے ہىں، موبائل فون بھى چورى کر لىتے ہىں ۔قاتل اور  طرح طرح کے لوگ بھى  اِعتکاف میں بىٹھ جاتے ہىں۔ بعض اوقات پولىس آ کر اپنا مطلوبہ بندہ پکڑ کر لے جاتى ہے۔چونکہ یہ سمندر ہے جال ڈالىں گے تو بہترىن مچھلىاں بھى آئىں گى ، کىکڑے بھى آ جائىں گے اور کہیں سے دَرىائی سانپ بھى گھس جائے گا ۔گر جینے کی تمنا ہے تو پہچان پیدا کر۔

بہرحال مىٹھے مىٹھے اسلامى بھائى آپ کو مل رہے ہىں ، اگر کہیں كوئی کڑوا مل جائے تو مجھے اور مىرى دعوتِ اسلامى کو چھوڑ کر مَت جانا ۔ دعوتِ اسلامى دِین کى خدمت کر رہى ہے، سنَّتوں کا پىغام دے رہى ہے، بے نمازىوں کو نمازى بنا رہى ہے ۔ اگر ایسا کوئی بَداخلاق مل جائے تو آپ غصّے میں آنے کے بجائے اس پر اِنفرادی کوشش کیجئے گا کہ ىار! مىں تو بالکل نىا ہوں اور مىں نے ىہاں آکر بہت اچھا  Feel(محسوس)کىا ہے۔ آپ تو مجھ سے کچھ سىنئر معلوم ہو رہے ہىں لیکن آپ جو تو تڑاک والی Language(زبان) بول رہے ہىں کىا ىہ دعوتِ اسلامى کى Language(زبان)ہے ؟کىا مىں ىہاں سے چلا جاؤں؟ اُمّید ہے اس کی  غىرت جاگ جائے اور آپ سے مُعافی تلافی کر لے۔پھر بھى اگر کوئی اُلٹى سىدھى بات کرے تو آپ اس کی وجہ سے دعوتِ اسلامی کے مَدَنی ماحول کو  چھوڑ کر مَت جانا۔

منکر نکیر کے سُوالات میں آسانی کا وَظیفہ

سُوال :  قبر میں سُوالات میں آسانی ہو اِس کا کوئی وَظیفہ بتا دیجیے ۔     

جواب : جو شخص ہر رات سورہ ٔ ملک یعنی ”تَبٰرَکَ الَّذِیۡ“پڑھتا رہے وہ فتنۂ قبر(قبر کی آزمائش) سے محفوظ ہو جاتا ہے۔([3]) حضرتِ سَیِّدُنا عبدُاللہ بِن مَسعود رَضِیَ اللّٰہُ عَنْہُ فرماتے ہىں :  جو شخص ہر رات سورہ ٔ ملک کى تلاوت کا عادى ہو گا ىعنى پابند ہو گا وہ قبر کى آزمائش  سے بچا لىا جائے گا۔([4])اور جو پابندى سے پارہ 23 سورہ ٔیٰسىن کى آىت نمبر 25

  )اِنِّیْۤ اٰمَنْتُ بِرَبِّكُمْ فَاسْمَعُوْنِؕ(۲۵)(

 



[1]   یہ رِسالہ ۶رَمَضَانُ الْمُبَارَک ۱۴۴۰ھ بمطابق11مئی 2019 کو عالمی مَدَنی مَرکز فیضانِ مدینہ بابُ المدینہ(کراچی) میں ہونے والے مَدَنی مذاکرے کا تحریری گلدستہ ہے، جسے اَلْمَدِیْنَۃُ الْعِلْمِیَّۃ کے شعبے’’فیضانِ مَدَنی مذاکرہ‘‘نے مُرتَّب کیا ہے۔ (شعبہ فیضانِ  مَدَنی مذاکرہ)       

[2]    فِردَوس الاخبار، باب الیاء، ۲/ ۴۷۱، حدیث۸۲۱۰ دار الفکر بیروت 

[3]   التذکرة للقرطبی، باب ما ينجی المومن من اهوال القبر و فتنته و عذابه، ص۱۴۳ دار السلام القاهرة  مصر

[4]   سنن الکبری للنسائی، کتاب عمل الیوم واللیلة، باب الفضل فی قراءة تبارک الذی بیدہ الملک، ۶/ ۱۷۹، حدیث : ۱۰۵۴۷ دار الکتب العلمية بیروت



Total Pages: 6

Go To