Book Name:Intiqal Par Sabar Ka Tariqa

صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم کى محبت اور عشق مىں لوگ لگاتے ہىں، اسے  دىکھنے کو جى چاہتا ہے ۔

اچھی اچھی نیتوں کے ساتھ چَراغاں کیجیے

سُوال : چَراغاں کرتے وقت کیا کیا نیتیں ہونی چاہئیں؟ ([1])

جواب : چَراغاں کرنے کے لیے اچھى نىتىں کرنی چاہئیں مثلاً عظمتِ رَسول کی خاطِر چَراغاں کر رہا  ہوں، محبوب کا جَشنِ وِلادت مَناکر اللہ پاک کی بڑى نعمت کا چرچا کروں گا، سرکار صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم کى محبت مزىد بڑھنے کا سامان کروں گا، اِس طرح کی اچھى اچھى نىتیں کرنی چاہئیں ۔  جتنى  نىتیں زیادہ ہوں گی اتنا ہی ثواب بھی زیادہ ملے گا ۔  بہت سے لوگ جَشنِ وِلادت تو مَناتے ہیں لیکن اچھی نیتوں کی طرف توجہ نہیں ہوتی یا پھر دِکھانے اور اپنی  واہ وا کروانے کی بُری نیتیں کر کے اپنا ثواب ضائع کر دیتے ہیں ۔  

سڑکوں اور گلیوں میں گیٹ وغیرہ بنانا کیسا؟

سُوال : سڑکوں اور گلیوں میں گیٹ اور نعلینِ پاک  وغیرہ بنا کر سجاوٹ کرنا کیسا؟ ([2])

جواب : جب میں (13 رَبیع الاوّل ۱۴۴۰؁ ھ بمطابق 2018ء کو)سجاوٹ دیکھنے کے لیے نکلا تو بعض جگہ سڑکوں پر گىٹ اور کمانىں بنی دىکھىں ۔ بعض جگہ بڑے بڑے نقشِ نعلینِ پاک ڈنڈے گاڑ کر لگائے گئے تھے  ۔ اىک تو وىسے ہى گلى چھوٹى اور پھر ىہ سب بھی لگا دیں گے تو چلنے والوں کے لیے راستہ تنگ ہو جائے گا ۔ پھر یہ چیزیں لگانے کے لیے روڈوں ، گلىوں اور فٹ پاتھ کو کھودا جاتا ہے  ۔ اگر کوئی کہے کہ گورنمنٹ کى زمىن ىا فٹ پاتھ ٹوٹتى ہے تو کیا ہوا؟ گورنمنٹ عوام کى ہے تو یوں زمین ہماری  ہی ہوئی  ۔ تو ایسوں کو یہی کہا جا سکتا ہے کہ پھر روڈ کے بىچ مىں مکان بنا  کر دیکھ لو! گورنمنٹ تو بعد مىں آئے گی، عوام خود ہی سمجھا دے گى  کہ زمین کس کی ہے ؟

عوام کی بھلائی پر مشتمل اَحکامات

بہرحال گورنمنٹ کے اِس طرح کے جو بھی اَحکامات ہوتے ہیں کہ راستہ مَت گھیریں، فُٹ پاتھ نہ توڑیں، تو یہ عوام کی بھلائی کے لىے ہی ہوتے ہیں ۔  ظاہر ہے کہ  فُٹ پاتھ پر صَدر ىا وزىر اعظم تو چہل قدمی کرنے نہیں آتے ، عوام ہی گزرتی ہے ۔ اب اگر فُٹ پاتھ کو توڑ ىں گے یا گڑھا  کھودىں گے تو گِرنے سے چوٹ صَدر یا وزىر اعظم کو نہیں بلکہ مجھے اور آپ کو ہی لگے گى ۔  ىہ سب راستے مىرے اور آپ کے لىے ہوتے ہىں ۔ ان راستوں میں اِس طرح کے اقدامات کرنے سے خود آپ  کو بھى تکلىف پہنچ سکتی ہے مثلاً جو گڑھا کھودا، بعد میں اس میں پانى جمع ہوگىا تو مچھر پىدا ہوں گے جو طرح طرح کی بىماریوں کا سبب بنیں گے  ۔ یوں ہی اگر چلتے ہوئے آپ کی گھڑی وغیرہ کوئى چىز پانی میں گر گئى تو آپ کا نقصان ہوسکتا ہے ۔  

قبر پر جھنڈے لگانے کے بجائے پودے لگائیے

سُوال : ميلاد شریف کے موقع پر اپنے مَرحومین کی قبروں پر میلاد کے جھنڈے یا جھنڈیاں لگانا کیسا؟

جواب : میرا مشورہ یہ ہے کہ ایسی بات کو  رَواج نہ دیں تو اچھا ہے کیونکہ قبرستان میں کتے بلیاں بھی گھومتے ہیں، ممکن ہے کہ جھنڈے یا جھنڈیاں بچے ہی اُکھاڑ کر لے جائیں یا پھر بارش اور دھوپ پڑنے سے بوسیدہ ہو کر اُڑ جائیں اور یوں ان کی بے اَدَبی ہو لہٰذا قبر پر میلاد کے جھنڈے لگانے کے بجائے پودے لگائے جائیں کیونکہ یہ جب تک تروتازہ رہیں گے تو  ذِکر کریں گے جس سے مَیِّت کا دِل بہلتا ہے ۔ میری والدہ کی قبر پر بعض لوگ جھنڈے لگا جاتے ہیں، بعض لوگ پھول ڈال دیتے ہیں تو مجھے ان خدمت گاروں کا تعارف نہیں ہے لیکن جو پھول ڈالتے ہیں وہ  صحیح کرتے ہیں ۔  

قبر پر پھول ڈالنا کیسا؟

سُوال : قبر پر پھول ڈالنا کیسا؟([3])

جواب : قبر پر پھول اِس نىت سے ڈالنا کہ یہ جب تک تَر رہیں گے تو ذِکر کریں گے جو عذاب مىں تخفىف اور مَىِّت کا دِل بہلنے کا سبب ہے تو یہ صحیح ہے  ۔ ([4])ہاں  اگر قبر کی خوبصورتی اور زىنت کے لىے پھول ڈالے جیساکہ کم علمی کی بِناپر بہت سے لوگ اِس نیت سے ڈالتے ہىں تو پھر کراہت والى صورت بن جائے گى ۔ یعنی زینت کی



[1]    یہ سُوال شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ کی طرف سے قائم کیا گیا ہے جبکہ جواب امیرِاہلسنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کا عطا فرمودہ  ہی ہے ۔ (شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ)

[2]    یہ سُوال شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ کی طرف سے قائم کیا گیا ہے جبکہ جواب امیرِاہلسنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کا عطا فرمودہ  ہی ہے ۔ (شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ)

[3]    یہ سُوال شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ کی طرف سے قائم کیا گیا ہے جبکہ جواب امیرِاہلسنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کا عطا فرمودہ  ہی ہے ۔  (شعبہ فیضانِ مَدَنی مذاکرہ)

[4]    ردالمحتار، کتاب الصلاة، باب صلاة الجنازة، ۳ / ۱۸۴ دار المعرفة بیروت



Total Pages: 14

Go To