Book Name:Ummahatul Momineen

روزے رکھنے والی اورجنت میں آپ کی زوجہ ہیں ۔

                                  (المعجم الکبیرللطبرانی،الحدیث۳۰۶،ج۲۳،ص۱۸۸)     

          سیدہ حفصہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا سے ساٹھ حدیثیں مروی ہیں ، ان میں سے چار تو متفق علیہ ،صرف مسلم میں چھ اور پچاس دیگر تمام کتابوں میں مروی ہیں ۔

    (مدارج النبوت،قسم پنجم،باب دوم،درذکر ازواج مطہرات وی،ج۲،ص۴۷۴)

وصال

          سیدہ حضرت حفصہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کا وصال زمانۂ امارتِ حضرتِ امیر معاویہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ میں  ۴۵ھ؁ یا  ۴۱ھ؁ یا ۴۷ھ؁ میں ہوا۔ بعض خلافت حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ میں بتاتے ہیں لیکن پہلا قول صحیح تر ہے۔ (المرجع السابق)

{۵}ام المؤمنین سیدہ زینب بنت خزیمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا

سلسلہ نسب

          زینب بنت خزیمہ بن حارث بن عبداللہ بن عمرو بن عبد مناف بن ہلال بن عامر بن صعصعہ۔ (الطبقات الکبریٰ لابن سعد،ذکر ازواج رسول اللہ،ج۸،ص۹۱)

      آ پ رضی اللہ تعالیٰ عنہافقرا و مساکین پر نہایت ہی مہربان تھیں ۔ انہیں کھانا کھلاتیں اور ان پر بڑی شفقت فرماتی تھیں ۔ لہٰذا زمانہ جاہلیت میں بھی ’’ ام المساکین‘‘ کے لقب سے مشہور تھیں ۔آپ کا پہلا نکاح حضرت عبداللہ بن جحش رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے ہوا جو نہایت بہادری سے لڑتے ہوئے غزوۂ احد میں شہید ہوئے۔ ہجرت کے تیسرے سال حضرت عبداللہ بن جحش رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی شہادت کے بعد آپ رضی اللہ تعالیٰ عنہاازواج


 

 



Total Pages: 58

Go To