Book Name:Bachon Ko Dhoop Laganay Kay Fawaid

بھائیوں کے ایسے کیس سُننے میں آئے ہیں کہ ایک لیڈی ڈاکٹر نے کہہ دیا کہ آپریشن ہو گا تو دوسری لیڈی ڈاکٹر نے کہا کہ آپریشن کی ضَرورت نہیں ہے اور  میں بغیر آپریشن کے ڈلیوری (Delivery) کر دوں گی اور پھر جب  اس نے بغیر آپریشن کے ڈلیوری  کر دی تو جس ڈاکٹر  نے آپریشن کا کہا تھا اس کی Insult(یعنی بے عزتی) ہوئی اور یہ اس لیڈی ڈاکٹر پر بَرہم ہوئی کہ تم نے بغیر آپریشن کے ڈلیوری کیوں کی؟

اِسی طرح ایک کیس یہ بھی ہوا  کہ جب ایک ہسپتال گئے تو کہا گیا کہ آپریشن ہو گا اور اتنی رَقم لگے گی اور  پھر جب دوسرے ہسپتال گئے تو پہلے والے ہسپتال سے زیادہ رَقم بتائی گئی اور کہا گیا کہ اتنا اتنا خرچہ ہو گا مگر ہم نارمل ڈلیوری کر دیں گے اور پھر زیادہ پیسے لے کر نارمل ڈلیوری کر دی گئی  ۔ یہ دونوں کیس میرے بالکل قریبی لوگوں کے ساتھ پیش آئے ہیں ۔  

پیسوں کی خاطِر کسی کی جان تکلیف میں نہ ڈالیے

بَدقسمتی سے آج کل یہ Business(یعنی کاروبار)چل رہا ہے اور ڈاکٹر ، لوگوں کی جانوں سے کھیل رہے ہیں ۔ چوروں اور ڈاکوؤں کو سب بُرا بولتے ہیں لیکن حقیقت میں وہ ڈاکٹر اِن سب سے بُرے ڈاکو ہیں  جو پیسوں کی خاطر  لوگوں کی جانوں سے کھیلتے ہیں ۔  یاد رہے  سب ڈاکٹر  ایسے نہیں ہوتے ، ان میں آپ کو  رحم دِل بھی ملیں گے  جیسا کہ ایک لیڈی  ڈاکٹر نے آپریشن کا کہا تھا جبکہ دوسری نے زیادہ پیسے بھی نہیں لیے تھے اور شاید خوفِ خُدا کی وجہ سے نارمل ڈلیوری بھی کر دی تھی جس کی بِنا پر پہلی ڈاکٹر اس سے بگڑ گئی کہ تو نے میرا گاہک کیوں خَراب کیا؟البتہ جو ڈاکٹر لوگوں کی جانوں سے کھیلتے ہیں یہ سفید پوش ڈاکو ہیں اور  میرے پاس ڈاکو سے بڑا کوئی  لقب نہیں ہے  جو میں انہیں دے سکوں ۔  آپریشن فیل ہونے کے سبب اگر  بندہ مَر بھی جائے تب بھی ان کا کوئی کچھ نہیں  بگاڑ سکتا کیونکہ  یہ ہر آپریشن میں  پہلے سے ہی اس بات پرسرپرست سے سائن کروا لیتے ہیں کہ ” اگر دَورانِ آپریشن مریض فوت ہو گیا تو ہماری کچھ ذِمَّہ داری نہیں ۔  “ ہسپتالوں میں اِس طرح کیFormality(یعنی رَسم) رائج ہے لیکن  اس  کے ساتھ ساتھ دیانت داری سے آپریشن بھی  کیا جائے ، مگر اَب تو بَددِیانتیاں ہو رہی ہیں ۔ اگر کوئی ڈاکٹروں پر کیس بھی کرے گا تو جیتیں  گے یہی ، کیس کرنے والا ہار جائے گا ۔  میں ڈاکٹروں کو یہی مشورہ دوں گا کہ اللہ پاک روزی دینے والا ہے لہٰذا آپ اللہ پاک سے ڈریں اور چند سِکوں کی خاطر کسی کی جان تکلیف میں مَت ڈالیں !

بِلاضَرورت آپریشن اور ٹیسٹ کے اَخراجات

اگر ڈاکٹر کہیں کہ ہم نارمل   ڈلیوری کرتے ہیں لیکن پیسے آپریشن جتنے لیں گے تو شاید لوگ  کم ہی تیار ہوں اس لیے یہ آپریشن کر کے پیسے لیتے ہیں ۔  اگر کوئی واقعی انہیں زیادہ پیسے دینا شروع کر دے تو ہو سکتا ہے کہ آپریشن نہ کریں مگر یہ صورت بھی کیسے ہو کہ جس  لیڈی ڈاکٹر نے آپریشن کا کہا ہے اگر ا سے کہا جائے پچاس ہزار لے لو اور بغیر آپریشن کے ڈلیوری کر دو  تو وہ پچاس ہزار میں نارمل نہیں کرے گی بلکہ وہ بولے گی کہ نہیں چالیس ہزار میں آپریشن کے ساتھ ہی کروں گی کیونکہ اسے پتا ہے کہ اگر میں نے پچاس ہزار میں آپریشن کے بغیر ڈلیوری (Delivery) کر دی تو میں ڈی گریڈ اور بَدنام ہو جاؤں گی لہٰذا عزت بچانے کے لیے اُس نے آپریشن ہی کرنا ہے ۔  خالی ڈلیوری کیس کا ہی مسئلہ نہیں بلکہ مہنگی دوائیں لکھ کر دینا  اور پیسوں کی خاطربلاضَرورت  مختلف  ٹیسٹ کروا کر ہزاروں لاکھوں روپے کے اَخراجات کروا دینا وغیرہ بے شمار مَسائل ہیں ۔  عام طور پر ڈاکٹروں کے کمیشن بندھے ہوئے ہوتے ہیں اور  لیبارٹری بھی ان کی فکس ہوتی ہے کہ دوسری لیبارٹری  کی رِپورٹ کو یہ دُرُست نہیں مانتے اور مریض کو کہتے ہیں کہ  فُلاں لیبارٹری سے ہی ٹیسٹ کروا کر لاؤ  کیونکہ وہاں سے ان کا کمیشن بندھا ہوتا ہے ۔  اِسی طرح ڈاکٹر مریض کو یہ بھی کہتے ہیں کہ فُلاں کمپنی کی دوا کیوں اُٹھا کر لے آئے ؟ یہ دوا  صحیح نہیں ہے اور جس کمپنی کی دوا میں نے لکھی تھی اُسی کی لے کر آؤ کیونکہ اس کمپنی سے ان کی تَرکیب ہوتی ہے اور انہیں وہاں سے کمیشن ملنا ہوتا ہے حالانکہ اس طرح کا کمیشن رِشوت ہے  ۔

بندہ  رہے یا نہ رہے مگر اپنی جیب بھری رہے

نزلہ ہو یا  کھانسی  یا مَعَاذَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ  کینسر  جتنے بھی اَمراض ہیں ان سب میں  یہ گیم چل رہے ہوتے ہیں اور بائی پاس کے آپریشن اور نہ جانے کیا کیا



Total Pages: 8

Go To