Book Name:Saman-e-Bakhsish

یہ مرحبا کی نداؤں میں آج زَور ہے کیوں

کہا جواب میں ہاتف نے لو مبارک ہو

اُٹھو خدا کے حبیب آئے مژدہ ہو تم کو

وہ آئے آنے کی جن کے خبر تھی مدت سے

دعا خلیل کی عیسیٰ کی جو بشارت تھے

بڑھو  اَدَب  سے  کرو  عرض  اَلسَّلَامُ  عَلَیْک

وَ اَھْلِ  بَیْتِکَ  وَ الْاٰلِ  وَ الَّذِیْنَ   لَدَیْک

سلام تم پہ خدا کا اور اس کی رحمت ہو

تحیت اس کی ثناء اس کی اس کی نعمت ہو

دُرُود آپ پہ ہر آن بھیجے ربِ وَدُوْد

اور اس کی برکتوں کا روز آپ پر ہو وُرُود

سلام آپ پر نازل کرے صلاۃ و سلام

بلند ذِکر کرے آپ کا ہمیشہ مُدام

یہی ہیں جن کو ملائک سلام کرتے ہیں

انہی کی مَدْح و ثنا صبح و شام کرتے ہیں

 

رُسل اُنہیں کا تو مژدہ سنانے آئے ہیں

رُسل اُنہیں کا تو مژدہ سنانے آئے ہیں

انہیں کے آنے کی خوشیاں منانے آئے ہیں

فرشتے آج جو دُھومیں مچانے آئے ہیں

انہیں کے آنے کی شادی رَچانے آئے ہیں

فلک کے حور و مَلک گیت گانے آئے ہیں

کہ دو جہاں میں یہ ڈَنکے بجانے آئے ہیں

یہ سیدھا راستہ حق کا بتانے آئے ہیں

یہ حق کے بندوں کو حق سے ملانے آئے ہیں

یہ بھولے بچھڑوں کو رَستے پہ لانے آئے ہیں

یہ بھولے بھٹکوں کو ہادی بنانے آئے ہیں

خدائے پاک کے جلوے دِکھانے آئے ہیں

 



Total Pages: 123

Go To