Book Name:Saman-e-Bakhsish

اے وہ جس کا رب ہے حامد اور وہ محمود ہے

اے وہ جس کا رب ہے قاصد اور وہ مقصود ہے

اے کہ جس کا جود ایسا ہے کہ لامقصود ہے

 

اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام   اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام

اے نبیوں کے نبی اور اے رسولوں کے امام

قبلۂ  کونین    ہیں    سرکار    اِمَامُ    الْقِبْلَتَیْن

آپ ہیں فتحِ خدا سے فاتح بدر وحنین

دُور دَر سے جو ہوا تو پھر کہاں یہ امن و چین

ہم پہ بھی چشمِ کرم ہو سیدی بہر حسین

اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام   اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام

اے نبیوں کے نبی اور اے رسولوں کے امام

اے شہنشاہِ دوعالم شافعِ روزِ قیام

زِینتِ گلزارِ طیبہ مرجعِ ہر خاص و عام

حاضرِ دَر آج ہیں سرکار کے رَضوی غلام

اَز پئے اَحمد رضا مقبول ہو ان کا سلام

اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام   اَلصَّلٰوۃُ   وَ  السَّلَام

اے نبیوں کے نبی اور اے رسولوں کے امام

 

تیرا جلوہ نورِ خدا غوثِ اعظم

ترا جلوہ نورِ خدا غوثِ اعظم

ترا چہرہ اِیماں فزا غوثِ اعظم

مجھے بے گماں دے گما غوثِ اعظم

نہ پاؤں میں اپنا پتا غوثِ اعظم

خودی کو مٹادے خدا سے مِلادے

دے ایسی فنا و بقا غوثِ اعظم

خودی کو گماؤں تو میں حق کو پاؤں

مجھے جامِ عرفاں پلا غوثِ اعظم

 



Total Pages: 123

Go To