Book Name:Islami Bheno Kay 8 Madani Kam

نجاستوں کا بیان(14)رفیق الحرمین (15)رفیق المعتمرین(16)حلال طریقے سے کمانے کے 50 مدنی پھول ۔

   نیز یاد رکھئے کہ شَیْخِ طَرِیْقَت ، اَمِیْرِ اَھْلِسُنَّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعالِیَہ کی کُتُب  و رسائل کے عِلاوہ کسی اور کتاب سے درس دینے کی مرکزی مجْلس ِ شوریٰ کی طرف سے اِجازت نہیں ۔

صَلُّوا عَلَی الْحَبیب!                       صَلَّی اللّٰہُتَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

گھر درس کے 14 مدنی پھول

(1)فرمانِ مصطفیٰ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم جو شخص میری اُمّت تک کوئی اِسلامی بات پہنچائے تاکہ اُس سے سُنّت قائم کی جائے یا اُس سے بدمذہبی دور کی جائے تو وہ جنّتی ہے ۔ [1]

(2)سرکارِ مدینہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے اِرشَاد فرمایا :  اللہ تعالیٰ اس کو تر و تازہ رکھے جو میری حدیث سُنے ، یاد رکھے اور دوسروں تک پہنچائے ۔ [2]

(3)حضرتِ سَیِّدُنا اِدْریس عَلٰی نَبِیِّنَاوَعَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام کے مُبارَک نام کی ایک حِکْمَت یہ بھی ہے کہ آپ عَلَیْہِ السَّلَام اللہ پاک کے عطا کردہ صحیفے لوگوں کو کَثْرَت سے سُنایا کرتے تھے لہٰذاآپ عَلَیْہِ السَّلَام کا نام ہی اِدْریس(یعنی دَرْس دینے والا)ہوگیا ۔

(4)حضورِ غوثِ پاک رَحْمَۃُ اللّٰہ ِتَعَالٰی عَلَیْہ فر ماتے ہیں :  دَرَستُ العِلمَ حَتّٰی صِرْتُ قُطْباً ۔ (یعنی میں نے علم کا درس لیا  ، یہاں تک کہ مقامِ قطبیت پر فائز ہوگیا)

(5)درس دینا بھی دعوتِ اسلامی کا ایک مَدَنی کام ہے ۔ گھر ، مدرسہ ، اسکول ، کالج وغیرہ میں (پردے کی اِحْتِیاط کے ساتھ)وَقْت مُقَرَّر کر کے درس کے ذَرِیعے خوب خوب سُنّتوں کے مَدَنی پھول لٹائیے اور ڈھیروں ثواب کمائیے ۔

(6)روزانہ کم از کم دو۲ مَدَنی درس دینے یا سُننے کی سَعَادت حاصِل کیجیے ۔ (ان دو۲ میں ایک گھر درس ضرور ہو)

(7)پارہ 28 سُورۃ التّحریم کی چھٹی آیت میں اِرشَاد  ہو تا ہے ۔

یٰۤاَیُّهَا الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا قُوْۤا اَنْفُسَكُمْ وَ اَهْلِیْكُمْ نَارًا وَّ قُوْدُهَا النَّاسُ وَ الْحِجَارَةُ

ترجمہٴکنز الایمان : اے ایمان والو!اپنی جا نوں اور گھر والوں کو اُس آگ سے بچاؤ جس کے ایندھن آدمی اور پتھر ہیں ۔

اپنے آپ کو اور اپنے گھر والوں کو دوزخ کی آگ سے بچانے کا ایک ذَرِیْعَہ  گھر درس بھی ہے ۔

(8)تمام اسلامی بہنیں اپنے  گھروالوں کو(جن میں نامحرم نہ ہوں)پر انفرادی کوشش کرکے گھر درس میں شِرْکَت کرنے کے لئے تیّار کریں ، مگر اس کے لئے ضد نہ کی جائے کیونکہ بے جا ضد اور غصّے سے کام بگڑ جاتا ہے ۔

ہے فلاح و کامرانی نرمی و آسانی میں       ہر بنا کام بگڑ جاتا ہے نادانی میں

٭گھر درس شروع کرنے کیلئے گھر کے اس مَحْرَم فرد پر پہلے کوشش کی جا ئے ، جسکے دل میں آپ کیلئے کچھ نَرْم گوشہ ہو ، اگر وہ شامِل ہو جائے گا تو آہِسْتَہ  آہِسْتَہ دوسرا بھی شامل ہوگا یوں تعداد بڑھتی جا ئے گی لیکن یہ مُعَامَلہ صَبْر آزما ہے ، اس میں صَبْر کا دامن تھامے رکھنا ہوگا ۔

(9)دَرْس ہمیشہ ٹھہر ٹھہر کر اور دھیمے انداز میں دیجیئے ۔

(10)جو کچھ دَرْس دینا ہے ، پہلے اُس کا کم از کم ایک بار مُطالعہ کرلیجیئے تاکہ غَلَطیاں نہ ہوں ۔

 



[1]   حلیة الاولیاء ، طبقات اهل المشرق ، ۴۵۸-ابراهيم الهروی ، ۱ / ۴۵ ، رقم۱۴۴۶۶

[2]    ترمذی  ، ابواب العلم ، باب جاء فی الحث  علی التبلیغ السماع ، ص۶۲۶ ، حدیث۲۶۵۶



Total Pages: 19

Go To