Book Name:Islami Bheno Kay 8 Madani Kam

کہ کچھ بھی ہوجائے نہ لاؤڈ اسپیکر میں بیان کرنا ہے اور نہ ہی اس میں نعت شریف پڑھنی ہے یاد رہے !غیر مردوں تک آواز پہنچتی  ہو اس کے باوُجُود بے باکی کے ساتھ بیان فرمانے اور نعتیں سنانے والی گناہگاراور ثواب کے بجائے عذاب ِ نار کی حقدار ہے (آواز کی بے پردگی کی وجہ سے اسلامی بہنوں کو نعرے لگانے کی اِجازَت نہیں اس لیے اجتماع میں غیبت کے خلاف جنگ کا نعرہ بھی نہ لگایا جائے ۔ )

٭اجتماع کے بعد نئی آنے والی اسلامی بہنوں سے آگے بڑھ کر پُرتپاک طریقے سے مُلَاقَات و انفرادی کوشش کرکے اپنے پاس نام رابطہ نمبر لکھ کر بعد میں رابطہ بھی رکھا جائے اور مَوْقَع  کی مُنَاسَبَت سے ترغیب دلائی  جائے ۔

ہفتہ وار سُنّتوں بھرے اجتماع کا جدول

1

تِلاوَت

3 منٹ

2

نعت

6 منٹ

3

دَرْس

7 منٹ

4

دُعا یاد کروانا

7منٹ

5

بیان مع سنت واعلانات

63منٹ

6

درودِ پاک

7 منٹ

7

ذکرو دُعا

20منٹ

8

صلوٰۃ وسلام

4منٹ

9

مَـجْلِس کے اِخْتِتام کی دعا

3منٹ

10

کل دورانیہ

120 منٹ ) 2گھنٹے (

 

سُنّتوں  کی  لُوٹنا   جا  کے مَتاع            ہوجہاں بھی سُنّتوں کا  اجتماع[1]

دعائے عطار

جو   پابند  ہے   اجتماعات   کا   بھی            میں دیتا ہوں اس کو دُعائے مدینہ[2]

(6)مدنی دورہ

(ہدف مَدَنی دورہ : فی ذیلی حلقہ ہفتہ وار1مَدَنی دورہ ۔ ہدف :  شرکا :  کم از کم 2 یا 3 اسلامی بہنیں)

          ہفتہ وار سُنّتوں بھرے اجتماع سے ایک دن قَبْل مَدَنی  پھول برائے مَدَنی  دورہ میں دیئے گئے طریقہٴ  کار کے مُطابِق 72 منٹ کے دورانیے میں جان پہچان والی گلیوں میں پردے کی رعایتوں کے ساتھ گھر گھر جا کر اسلامی بہنوں کو نیکی کی دَعْوَت پیش کی جاتی ہے اِسے مَدَنی  دور ہ کہا جا تا ہے  ۔

کرم سے نیکی کی دعوت کا خوب جذبہ دے                  دُھوم      سُنَّتِ    مَحبوب     کی    مچا      یا   ربّ [3]

صَلُّوا عَلَی الْحَبیب!                       صَلَّی اللّٰہُتَعَالٰی عَلٰی مُحَمَّد

پیاری پیاری اِسْلَامی بہنو!نیکی کی دَعْوت حقیقت میں دَعْوتِ اسلامی کے مَدَنی  مَاحَول میں اِستعمال ہونے والی ایک خاص اِصْطِلَاح ہے ، جس سے مُراد نیکی کی دَعْوت دینا اور بُرائی سے روکنا ہے اور اس کے مُتَعَلِّق مَشْہُور مُفَسِّر قرآن ، حکیم الاُمَّت مفتی احمد یار خان عَلَیْہِ رَحمَۃُ الْحَنَّان فر ماتے ہیں :  (نیکی کی



[1]   وسائل بخشش(مُرَمَّم) ، ص۷۱۵

[2]    وسائل بخشش(مُرَمَّم) ، ص۳۶۹

[3]    وسائل بخشش(مُرَمَّم) ، ص۷۷



Total Pages: 19

Go To