Book Name:Zoq-e-Naat

تم کو مژدہ نار کا اے دُشمنانِ اَہلِ بیت

 

کس زباں سے ہو بیاں عز و شانِ اَہل بیت

مَدح گوئے مصطفی ہے مَدح خوانِ اَہل بیت

 

ان کی پاکی کا خدائے پاک کرتا ہے بیاں

آیۂ تطہیر سے ظاہر ہے شانِ اَہل بیت

 

مصطفیٰ عزت بڑھانے کے لیے تعظیم دیں

ہے بلند اِقبال تیرا دُودمانِ اَہل بیت

 

اُن کے گھرمیں بے اجازت جبرئیل آتے نہیں

قدر والے جانتے ہیں قدر و شانِ اَہل بیت

 

مصطفی   بائع   خریدار    اس   کا      اَللّٰہ     مشتری

خوب چاندی کر رہا ہے کاروانِ اَہل بیت

 

رَزم کا میداں بنا ہے جلوہ گاہِ ُحسن و عشق

کربلا میں ہو رہا ہے اِمتحانِ اَہل بیت

 

پھول زخموں کے کھلائے ہیں ہوائے دوست نے

خون سے سینچا گیا ہے گلستانِ اَہل بیت

 

حوریں کرتی ہے عروسانِ شہادت کا سنگار

خوبرو دولھا بنا ہے ہر جوانِ اَہل بیت

 

ہو گئی تحقیق عید دید آبِ تیغ سے

اپنے روزے کھولتے ہیں صائمانِ اَہل بیت

 

جمعہ کا دن ہے کتابیں زِیست کی طے کر کے آج

کھیلتے ہیں جان پر شہزادگان اَہل بیت

 

اے شبابِ فصلِ گل یہ چل گئی کیسی ہوا

کٹ رہا ہے لہلہاتا بوستانِ اَہل بیت

 

کس شقی کی ہے حکومت ہائے کیا اَندھیر ہے

دن دِہاڑے لٹ رہا ہے کاروانِ اَہل بیت

 

 

خشک ہو جا خاک ہو کر خاک میں مل جا فرات

 



Total Pages: 158

Go To