Book Name:Zoq-e-Naat

مہر و مہ ذَرّے ہیں ان کی راہ کے

کون دے نقشِ کفِ پا کا جواب

 

تم سے اس بیمار کو صحت ملے

جس کو دے دیں حضرتِ عیسیٰ جواب

 

دیکھ رِضواں دَشتِ طیبہ کی بہار

میری جنت کا نہ پائے گا جواب

 

شور ہے لطف و عطا کا شور ہے

مانگنے والا نہیں سنتا جواب

 

جرم کی پاداش پاتے اَہلِ جرم

اُلٹی باتوں کا نہ ہو سیدھا جواب

 

پر تمہارے لطف آڑے آگئے

دے دیا محشر میں پرسش کا جواب

 

ہے حسنؔ محوِ جمالِ رُوئے دوست

اے نکیرین اس سے پھر لینا جواب

جانب مغرب وہ چمکا آفتاب

جانبِ مغرب وہ چمکا آفتاب

بھیک کا مشرق سے نکلا آفتاب

 

جلوہ فرما ہو جو میرا آفتاب

ذَرَّہ ذَرَّہ سے ہو پیدا آفتاب

 

عارضِ پرنور کا صاف آئینہ

جلوۂ حق کا چمکتا آفتاب

 

یہ تجلی گاہِ ذاتِ بحت ہے

زُلف اَنور ہے شب آسا آفتاب

 

دیکھنے والوں کے دل ٹھنڈے کیے

عارِضِ اَنور ہے ٹھنڈا آفتاب

 

ہے شبِ دیجورِ طیبہ نور سے

ہم سیہ کاروں کا کالا آفتاب

 

 

 



Total Pages: 158

Go To