Book Name:Zoq-e-Naat

میں نے کہی یہ تاریخ رحلت

قطب المشائخ اصل مطالب

۹۶ ۱۲ھ

تاریخ طبع وتالیف رسالہ نگارستان

لَطافت مصنفۂ خود

ہوگیا ختم یہ رسالہ آج

شکر خالق کریں نہ کیونکر ہم

سنِ تالیف اے حسنؔ سن لے

مَنبعِ وَصف شہر یارِ حرم

۲ ۰ ۱۳ ھ

دیگر

یہ چند وَرق نعت کے لایا ہے غلام آج

اِنعام کچھ اس کا مجھے اے بحرِ سخا دو

میں کیا کہوں میری ہے یہ حسرت یہ تمنا

میں کیا کہوں مجھ کو یہ صلا دو یہ صلا دو

تم آپ مرے دل کی مرادوں سے ہو واقف

خیرات کچھ اپنی مجھے اے بحرِ عطا دو

ہیں یہ سن تالیف فقیرانہ صدا میں

والی میں تصدق مجھے مِدحت کی جزا دو

۲ ۰ ۱۳ھ

تاریخ طبع دیوانِ حضور احمد خان صاحب آثم بریلوی

ہے یہ دیوان اُس کی مدحت میں                        جس کی ہر بات ہے خدا کو قبول

جس کے قبضہ میں دو جہاں کا ملک               جسکے بندوں میں تاجدار شمول

جس پہ قرباں جناں جناں کے چمن             جس پہ پیارا خدا خدا کے رسول

جسکے صدقے میں اہل ایماں پر                        ہر گھڑی رحمتِ خدا کا نزول

جس کی سرکار قاضی حاجات                           جس کا دربار معطی مامول

یہ ضیائیں اسی کے دم کی ہیں                                 یہ سخائیں اسی کے ہیں معمول

دن کو ملتا ہے روشنی کا چراغ                                شب کو کھلتا ہے چاندنی کا پھول

اُس کے در سے ملے گدا کو بھیک                             اسکے گھر سے ملے دعا کو قبول

اے حسنؔ کیا حسن ہے مصرعِ سال                                باغِ اسلام کے کھلے کیا پھول

                                                                          ۴ ۱۳۰ھ

قطعہ تاریخ وِصالِ اعلٰی حضرت عظیم البرکت سیدی و ملجائی مرشدی ومولائی عالی جناب مولانا مولوی سید شاہ ابوالحسین احمد نوری میاں صاحب رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ

شیخِ زمانہ حضرتِ سید ابوالحسین

جانِ مراد کانِ ہدیٰ شانِ اِہتدا

 

نورِ نگاہ حضرتِ آلِ رسول کے

اچھے میاں کے لخت جگر آنکھوں کی ضیا

 



Total Pages: 158

Go To