Book Name:Zoq-e-Naat

اے سحابِ رحمت حق سوکھے دھانوں پر برس

روئے رحمت برمتاب اے کام جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

فصلِ گل آئی عروسانِ چمن ہیں سبز پوش

شادمانی کا نوا سنجانِ گلشن میں ہے جوش

جوبنوں پر آگیا حسن بہارِ گل فروش

ہائے یہ رنگ اور میں یوں دام میں گم کردہ ہوش

روئے رحمت برمتاب اے کامِ جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

منکشف کس پر نہیں شانِ ُمعلی کا عروج

آفتابِ حق نما ہو تم کو ہے زیبا عروج

میں حضیض غم میں ہوں اِمداد ہو شاہا عروج

ہر ترقی پر ترقی ہو بڑھے دُونا عروج

روئے رحمت برمتاب اے کام جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

تاُکجا ہو پائمالِ لشکر اَفکارِ رُوح

تابکے ترساں رہے بے مونس و غمخوارِ رُوح

ہو چلی ہے کاوِشِ غم سے نہایت زَار رُوح

طالب اِمداد ہے ہر وقت اے دِلدار رُوح

روئے رحمت برمتاب اے کامِ جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

دَبدبہ میں ہے فلک شوکت ترا اے ماہِ کاخ

دیکھتے ہیں ٹوپیاں تھامے گدا و شاہِ کاخ

قصر جنت سے فزوں رکھتا ہے عزو جاہِ کاخ

اب  دکھا  دے  دیدۂ  مشتاق کو  لِلّٰہ  کاخ

روئے رحمت برمتاب اے کام جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

ُتو  َبہ سائل اور تیرے دَر سے پلٹے نامراد

ہم نے کیا دیکھے نہیں غمگین آتے جاتے شاد

آستانے کے گدا ہیں قیصر و کسریٰ قباد

ہو کبھی لطف و کرم سے بندۂ مضطر بھی یاد

روئے رحمت برمتاب اے کامِ جاں اَز رُوئے من

حرمتِ روحِ پیمبر یک نظر ُکن سوئے من

 

 



Total Pages: 158

Go To