Book Name:Zoq-e-Naat

خدا کو ہے جتنی محبت کسی کی

 

دَمِ حشر عاصی مزے لے رہے ہیں

شفاعت کسی کی ہے رحمت کسی کی

 

رہے دِل کسی کی محبت میں ہر دَم

رہے دل میں ہر دَم محبت کسی کی

 

ترا    قبضہ   کونین  و   مَا فِیْہِمَا   پر

ہوئی ہے نہ ہو یوں حکومت کسی کی

 

خدا کا دِیا ہے ترے پاس سب کچھ

ترے ہوتے کیا ہم کو حاجت کسی کی

 

زمانہ کی دولت نہیں پاس پھر بھی

زمانہ میں بٹتی ہے دولت کسی کی

 

نہ پہنچیں کبھی عقل کل کے فرشتے

خدا جانتا ہے حقیقت کسی کی

 

ہمارا بھروسہ ہمارا سہارا

شفاعت کسی کی حمایت کسی کی

 

قمر اِک اِشارے میں دو ٹکڑے دیکھا

زمانہ پہ روشن ہے طاقت کسی کی

 

ہمیں ہیں کسی کی شفاعت کی خاطر

ہماری ہی خاطر شفاعت کسی کی

 

مصیبت زَدو شاد ہو تم کہ ان سے

نہیں دیکھی جاتی مصیبت کسی کی

 

نہ پہنچیں گے جب تک گنہگار اُن کے

نہ جائے گی جنت میں اُمت کسی کی

 

ہم ایسے گنہگار ہیں زُہد والو

ہماری مَدد پر ہے رحمت کسی کی

 

مدینہ کا جنگل ہو اور ہم ہوں زاہد

نہیں چاہیے ہم کو جنت کسی کی

 



Total Pages: 158

Go To