Book Name:Jannati Zevar

مبارک وہ شہ دنیا ودیں تشریف لاتے ہیں

امام انبیاء ومرسلیں تشریف لاتے ہیں

سکوں بخش دل اندوہ گیں تشریف لاتے ہیں

بہار گلشن علم و یقیں تشریف لاتے ہیں

سلاطین جہاں جس کے قدم پر سر جھکائیں گے

وہی محبوب رب العالمیں تشریف لاتے ہیں

   

نبوت کے رسالت کے شریعت کے طریقت کے

مقدس تاجدار اولیں تشریف لاتے ہیں

فقیروبے نوا اب دل شکستہ رہ نہیں سکتے

دو عالم جس کے ہے زیر نگیں تشریف لاتے ہیں

زمیں سے آسماں تک روشنی ہی روشنی ہوگی

کہ شمع پر ضیاء نورمبیں تشریف لاتے ہیں

ہزاروں عیدہے قربان اس پر نور ساعت پر

کہ جس میں رحمۃ للعالمیں تشریف لاتے ہیں

جہان حسن کے مسند نشیں کی آمد آمد ہے

شہ خوبان ورشک مہ جبیں تشریف لاتے ہیں

نسیم آواز دو جن و بشر بہر سلام آئیں

سریر آرائے بزم مرسلیں تشریف لاتے ہیں

سلام

فخرعیسی ناز آدم الصلوٰۃ و السّلام

روح ایماں جان عالم الصلوٰۃ و السّلام

تاجدار عرش اعظم الصلوٰۃ و السّلام

شمع حق نور مجسم الصلوٰۃ و السّلام

سرور ارض وسما سلطان بزم انبیاء

خلق میں سب سے مکرم الصلوٰۃ و السّلام

   

رنج وغم کی شام ہو یا لطف وراحت کی سحر

باادب پڑھتے رہیں ہم الصلوٰۃ و السّلام

جب شب معراج رکھا عرش پر تم نے قدم

مسکرائی روح آدم الصلوٰۃ و السّلام

راحت قلب حزیں ہے آپ کا ذکر جمیل

اے سکون چشم پر نم الصلوٰۃ و السّلام

ہم اسیران غم وافکار پر بہر خدا

ہو کرم سلطان اکرم الصلوٰۃ و السّلام

ہر گھڑی آغوش رحمت میں وہ رہتا ہے نسیم

جو پڑھا کرتا ہے ہر دم الصلوٰۃ و السّلام

دیگر

 



Total Pages: 188

Go To