Book Name:Jannati Zevar

جمال اقدس روضہ بسا ہے ان کی آنکھوں میں            حقیقت میں ہیں یہ جنت کا نقشہ دیکھنے والے

کمال شوق سے ہم ان کو سوسوباردیکھیں گے      بڑے پیارے ہیں یہ مکہ مدینہ دیکھنے والے

مبارک ہیں مبارک ہیں خداشاہدمبار ک ہیں      یہ مکہ دیکھنے والے مدینہ دیکھنے والے

ملا ہے اعظمی مکہ مدینہ سے شرف ان کو    

  نگاہ دل سے دیکھیں ان کارتبہ دیکھنے والے

دیگر

مبارک مرحبا مکہ مدینہ دیکھنے والے

زمیں پرعرش کی منزل کا زینہ دیکھنے والے

حطیم کعبہ میں سجدے وہ بوسے سنگ اسود کے

در کعبہ پہ رونا گڑگڑانا دیکھنے والے

مقام ملتزم میزاب اوررکن یمانی پر

ہمیشہ ابررحمت کابرسنادیکھنے والے

وہ پیاسوں کاہجوم عاشقانہ کیف کاعالم

وہ پیمانوں میں زمزم کاچھلکنادیکھنے والے

طواف کعبہ کی مستی صفامروہ کے منظرمیں

شراب معرفت کاجام ومینادیکھنے والے

منٰی میں عید قربانی کامنظردیکھ کر آئے

سرعرفات پروانوں کا میلہ دیکھنے والے

   

فرشتے پربچھاتے ہیں جہاں تیرے قدم پہنچے

خداکاگھررسول حق کا روضہ دیکھنے والے

ستارہ تیری قسمت کاثریاسے بھی اونچاہے

جمال گنبدخضراء کا جلوہ دیکھنے والے

مبارک ہیں مبارک اعظمی بیشک مبارک ہیں

خدا کاگھرنبی کے درکاجلوہ  دیکھنے والے

حسن یوسف اورہے طٰہٰ کاجلوہ اور ہے

ماہ کنعاں اور ہے مہرمدینہ اورہے

آسمانوں پرگئے ادریس وعیسٰی شک نہیں

دم میں سیر لامکاں معراج اسرٰی اور ہے

ہے خلیل اللہ  حبیب اللہ  میں فرق عظیم

شان خلت اور ہے تاج فترضٰی اور ہے

انفلاق بحر برہان عظیم الشان تھا

انشقاق بدر کالیکن نتیجہ اور ہے

مفت بھی لیتے نہیں عاشق حیات خضر کو

خالی جینا اور ہے مرمر کے جینااور ہے

جنتی پھولوں کی خوشبوتومسلم ہے مگر

نکہت گل اور ہے ان کاپسینہ اور ہے   

اعظمی تھی نوح کی کشتی میں عالم کی نجات

اہل بیت پاک کالیکن سفینہ اور ہے

 



Total Pages: 188

Go To