Book Name:Jannati Zevar

(۲۲)کھانا کھانے کے بعد اس دعا کو پڑھے اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ اَطْعَمَنَا وَسَقَانَا وَھَدَانَا وَجَعَلَنَا مِنَ المُسْلِمِیْنَ (ابوداود، کتاب الاطعمہ، باب ما یقول الرجل اذا طعم، الحدیث۳۸۴۹، ج۳، ص۵۱۳)

(۲۳)جب کوئی نعمت ملے تو یہ پڑھے اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ الَّذِیْ بِنِعْمَتِہٖ تَتِمُّ الصَّالِحَاتُ

   (سنن ابن ماجہ، کتاب الادب ، باب فضل الحامدین، الحدیث۳۸۰۳، ج۴، ص۲۵۰)

(۲۴)ہر بلا ہر نقصان سے امان ملنے کے لئے صبح کو اور شام کو تین تین مرتبہ اس دعا کو پڑھ لے اِنْ شَآءَ اﷲ   تَعَالٰی ہر بلا اور ہر نقصان سے محفوظ رہے گا۔

بِسْمِ اﷲ  الَّذِیْ لَا یَضُرُّ مَعَ اسْمِہٖ شَیْئُٗ فِی الْاَرْضِ وَلَا فِی السَّمَآئِ وَھُوَ السَّمِیْعُ الُعَلِیْمُ

  (سنن ابن ماجہ، کتاب الدعائ، باب مایدعوبہ الرجل...الخ، الحدیث۳۸۶۹، ج۴، ص۲۸۴)

(۲۵)جب آندھی چلے تو یہ دعا پڑھے۔

اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَسْئَلُکَ مِنْ خَیْرِ ھَا وَ خَیْرِ مَا فِیْھَا وَ خَیْرِ مَا اُرْسِلَتْ بِہٖ    وَاَعُوْذُبِکَ مِنْ شَرِّھَا وَشَرِّ مَافِیْھَا وَشَرِّ مَا اُرْسِلَتْ بِہٖ

 (صحیح مسلم، کتاب صلوۃ الاستسقائ، باب التعوذ عند رؤیۃ الریح...الخ، الحدیث۸۹۹، ص۴۴۶)

(۲۶)بادلوں کی گرج اور بجلی کی کڑک کے وقت یہ دعا پڑھنی چاہیے۔

اَللّٰھُمَّ لَا تَقْتُلْنَا بِغَضَبِکَ وَلَا تُھْلِکْنَا بِعَذَابِکَ وَعَافِنَا قَبْلَ ذٰلِکَ

         (جامع ترمذی، کتاب الدعوات، باب مایقول اذا سمع الرعد، الحدیث۳۴۶۱، ج۵، ص۲۸۱)

   

(۲۷)اگر کسی قوم یا کسی گروہ سے جان و مال کا خوف ہو تو یہ دعا پڑھے۔

اَللّٰھُمَّ اِنَّا نَجْعَلُکَ فِیْ نُحُوْرِھِمْ   وَنَعُوْذُبِکَ مِنْ شُرُوْرِھِمْ

    (سنن ابی داود، کتاب الوتر، باب ما یقول الرجل اذا خاف قوما، الحدیث۱۵۳۷، ج۲، ص۱۲۷)

(۲۸)مرغ کی آواز سن کر یہ پڑھے۔

        اَسْئَلُ اﷲ  مِنْ فَضْلِہٖ الْعَظِیْمِ    (صحیح مسلم، کتاب الذکرو الدعاء ...الخ، باب استحباب الدعائ...الخ، الحدیث۲۷۲۹، ص۱۴۶۱)

(۲۹)گدھا بولے تو یہ دعا پڑھیں ۔

لَاحَوْلَ وَلَا قُوَّۃَ اِلَّا بِاﷲ   

(۱۰)میلادو نعت

میلادشریف منظوم

از مولانا حسن بریلوی علیہ الرحمۃ

صبا نے کس کی آمد کی سنائی                 مرادِبلبل بے تاب لائی

مچی ہیں شادیاں کیسی گلوں میں              مبارکبادیاں ہیں بلبلوں میں

       یہ نرگس کس کا رستہ دیکھتی ہے                   یہ سوسن کس کی مدحت کر رہی ہے

کھلے پڑتے ہیں سب غنچے یہ کیا ہے                انہیں کس پھول کا شوق لقا ہے

نئی پوشاک بدلی ہے گلوں نے                  مچایاشورہے کیوں بلبلوں نے

نہیں معلوم ہے یہ ماجرا کیا           یہ کیسا حکم ہے رضواں کو آیا

بنا دے تو چمن ہر ایک بن کو                 نہ ہو جنت سے کچھ نسبت دلہن کو

ہوا مالک کو یہ حکمِ خداوند                     کہ دروازے جہنم کے ہوں سب بند

قریشی جانور کیوں بولتے ہیں                 یہ کس کے وصف میں لب کھولتے ہیں

زمین کی سمت کیوں مائل ہیں تارے               یہ کس کی دید کے سائل ہیں تارے

یہ بت کس واسطے اوندھے پڑے ہیں               زمیں پہ کیوں خجالت سے گرے ہیں

زمیں پر کیوں ملائک آرہے ہیں              یہ کیوں تحفے پہ تحفے لا رہے ہیں

یہ آمد کون سے ذیشان کی ہے              یہ آمد کون سے سلطان کی ہے

اسی حیرت میں تھے اہل تماشہ     کہ ناگہ ہاتفِ غیبی یہ بولا   

وہ اٹھی دیکھ لو گردِ سواری                  عیاں ہونے لگے انوار باری

نقیبوں کی صدائیں آرہی ہیں                کسی کی جان کو تڑپا رہی ہیں

 



Total Pages: 188

Go To