Book Name:Rah e Ilm

حصولِ علمِ دین میں مصروف طالب علموں کے لئے ایک رہنماتحریر

تَعْلِیْمُ الْمُتَعَلِّم طَرِیْقَ التَّعَلُّم

ترجمہ بنام

راہِ علم

مؤلِّف :

حضرت سیِّدُنااِمام برہان الدین ابراہیم زرنوجی  عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہِ الْوَلِی

(اَلْ متو فّٰی ۶۱۰ھـ  )

پیش کش :    مجلس المدینۃ العلمیۃ(دعوتِ اسلامی)

شعبہ تراجمِ کتب

ناشر

مکتبۃ المدینہ باب المدینہ کراچی   

         اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

’’راہِ علم راہِ جنت ہے‘‘کے 14حُروف کی نسبت سے

اس کتاب کو پڑھنے کی’’14 نیّتیں ‘‘

فرمانِ مصطفی  صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم :  ’’  نِیَّۃُ الْمُؤْمِنِ خَیْرٌ مِّنْ عَمَلِہٖیعنی مسلمان کی نیّت اس کے عمل سے بہتر ہے۔‘‘ (المعجم الکبیرللطبرانی، الحدیث : ۵۹۴۲، ج۶، ص۱۸۵)

 دو مَدَنی پھول :

 (۱) بغیر اچّھی نیّت کے کسی بھی عملِ خیر کا ثواب نہیں ملتا۔

(۲)جتنی اچّھی نیّتیں زِیادہ، اُتنا ثواب بھی زِیادہ۔

        (۱)ہر بارحمد و (۲)صلوٰۃ اور(۳)تعوُّذو(۴)تَسمِیَہ سے آغاز کروں گا(اسی صَفْحَہ پر اُوپر دی ہوئی دو عَرَبی عبارات پڑھ لینے سے چاروں نیّتوں پر عمل ہوجائے گا)۔ (۵)قرآنی آیات اور(۶)احادیث مبارکہ کی زیارت کروں گا(۷)رِضائے الٰہی کے لئے اس کتاب کا اوّل تا آخِر مُطَالَعہ کروں گا۔ (۸)حتَّی الْوَسْع اِس کا باوُضُو اور قِبلہ رُو مُطالَعَہ کروں گا۔(۹)جہاں جہاں ’’ اللہ ‘‘ کا نامِ پاک آئے گا وہاں  عَزَّ وَجَلَّ  اور (۱۰) جہاں جہاں ’’سرکار‘‘کا اِسْمِ مبارَک آئے گا وہاں صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم پَڑھوں گا۔(۱۱)(اپنے ذاتی نسخے پر)عندالضرورت خاص خاص مقامات انڈرلائن کروں گا(۱۲)دوسروں کویہ کتاب پڑھنے کی ترغیب دلاؤں گا۔ (۱۳)اس حدیثِ پاک ’’تَھَادَوْا تَحَابُّوْا‘‘ ایک دوسرے کو تحفہ دو آپس میں محبت بڑھے گی ۔ (مؤطاامام مالک، ج۲، ص۴۰۷، الحدیث : ۱۷۳۱)پر عمل کی نیت سے (ایک یا حسبِ توفیق) یہ کتاب خرید کر دوسروں کو تحفۃً دوں گا۔ (۱۴) کتابت وغیرہ   میں شَرْعی غلَطی ملی تو نا شرین کو تحریری طور پَر مُطَّلع کروں گا ۔(مصنّف یاناشِرین وغیرہ کو کتابوں کی اَغلاط صِرْف زبانی بتاناخاص مفید نہیں ہوتا)   

         اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ وَ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَامُ عَلٰی سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللّٰہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط  بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّ حِیْم ط

المد ینۃ العلمیۃ

از : شیخِ طریقت، امیرِ اہلسنّت ، بانیٔ دعوتِ اسلامی حضرت علّامہ

مولانا ابوبلال محمد الیاس عطاؔر قادری رضوی ضیائی  دَامَتْ بَرَکَاتُہُمُ الْعَالِیَہ

 



Total Pages: 32

Go To