Book Name:Bad Fajar Madani Halqa

سوال 3  : دوران ِمَدَنی حَلْقَہ سَلامَ کا جواب دے سکتےہیں یانہیں؟

جواب  : فقہائے کِرام رَحِمَہُمُ اللّٰہ ُ السَّلَام نے بعض جگہوں پر سلام نہ کرنے اور ان کے جواب کے مُتَعَلِّق کچھ صورتیں بیان کی ہیں ان میں سے ایک یہ ہے کہ جو لوگ مَسْجِد میں تِلاوَتِ قرآن اور تسبیح ودُرُود میں مَشْغُول ہیں یا اِنتِظارِ نَماز میں بیٹھے ہیں انہیں سلام نہیں کرنا چاہیے کہ یہ سلام کا وَقْت نہیں۔ البتہ! کسی نے انہیں سلام کر دیا تو انہیں اِخْتِیار ہے کہ سلام کا جواب دیں یا نہ دیں۔[1]

سوال 4  : مدنی حلقہ جاری تھا کہ کسی دن نَمازیوں (مسافروں)کی اتنی تعداد اچانک آ جائے کہ مَسْجِد کے چھوٹے ہونے کی وجہ سے جگہ تنگ پڑ جائے تو اب کیا کیا جائے؟ کیا نَمازیوں کو نَماز پڑھنے کے لئے جگہ دے دی جائے یا مدنی حلقہ جاری رکھا جائے؟

جواب  : یہ نادِر صُورَت ہے کیونکہ مَدَنی حلقہ بَعْدِ فَجْر ہوتا ہے ، پھر بھی اگر ایسا ہو تو نَماز کے لئے نَمازیوں کو جگہ دی جائے کہ وَقْت پر نَماز ادا کرنا ضَروری ہے اور ویسے بھی فتاویٰ ہندیہ میں ہے کہ مَسْجِد میں جگہ تنگ ہو گئی تو جو نَماز پڑھنا چاہتا ہے وہ بیٹھے ہوئے کو کہہ سکتا ہے کہ سرک جاؤ ، نَماز پڑھنے کی جگہ دے دو۔ اگرچہ وہ شخص ذِکْر و دَرْس یا تِلاوَتِ قرآن میں مَشْغُول ہو یا مُعْتَکِف ہو۔[2]

سوال 5  : مدنی حلقے کے لئےمَسْجِد کی اَشیا مَثَلًا بجلی اور چٹائیاں وغیرہ اِسْتِعمال کرنا کیسا؟

جواب  : مدنی حلقہ اگرچہ دعوتِ اسلامی کا ایک مَدَنی کام ہے ، مگر حقیقت میں اس کا بُنْیَادِی مَقْصَدقرآن فہمی ، عِلْمِ دین کی اِشاعت اور ذِکر اذکار کے عِلاوہ نَمازِ اِشْرَاق و چاشت کی ادائیگی تک کے وَقْت کو کارآمد بنانا اور فُضُول گوئی سے بچنا و بچانا ہے اور یہ سب کام عِبَادَت ہی ہیں۔ لِہٰذا اس دوران ضرورتاً بجلی و چٹائیاں وغیرہ اِسْتِعمال کرنے میں کوئی حَرَج نہیں ، البتہ! شرکائے مدنی حلقہ اس بات کا ضَرور خَیال رکھیں کہ بِلا وجہ فالتو لائٹیں اور پنکھے وغیرہ نہ چلائیں۔

سوال 6  : مَدَنی حَلْقےکےبعداگر کوئی شَرْعِی مسئلہ پوچھےتو کیاکیاجائے؟

جواب  : اگر100فیصد دُرست مسئلہ مَعْلُوم ہوتوبتانے میں حَرَج نہیں وگرنہ دارُ الافتا اَھْلِسُنّت میں رَابِطَہ کرنے کا مَشْوَرَہ دیا جائے۔

سوال 7  : وَقْت مُقَرَّر کر کے شجرہ شریف پڑھنا کیسا؟

جواب  : یہ صُوفیا کا طریقہ ہے کہ وہ ایک وَقْت مُقَرَّر  کر کے حلقہ بنا کر ذِکْر اَذکار کرتے ، شجرہ پڑھتے تھے۔

سوال 8  : بعدِ فَجْر مدنی حلقے کا اِخْتِتام چونکہ نَمازِ اِشْرَاق و چاشت کی ادائیگی پر ہوتا ہے ، لِہٰذا اگر کوئی اِسْلَامی بھائی نَماز اِشْرَاق کی جَمَاعَت میں شریک نہ ہو تو کیا وہ چاشت کی نماز جَمَاعَت کے ساتھ ادا کر سکتا ہے یا نہیں؟

جواب  : کر سکتا ہے۔

تنظیمی احتیاطیں

سوال 1  : کیافیضانِ سنّت کے علاوہ شَیْخِ طَرِیْقَت ، اَمِیْـرِ اَھْلِسُنّت دَامَتْ بَرَکاتُہُمُ الْعَالِیَہ کی کسی اور کتاب یا رسالے کے 4 صفحات پڑھ کر سنائے جاسکتے ہیں؟

جواب  : بعدِ فجر ِمَدَنی حَلْقے میں فیضانِ سنّت کے 4صفحات ہی پڑھے جائیں۔

سوال 2  : وَقْت کی کمی کے باعِث کیا 4 صفحات سے کم بھی پڑھے جاسکتے ہیں؟

جواب  : فیضانِ سنّت جِلْد اوّل سے 4 صفحات مُکَمَّل پڑھے جائیں جبکہ جِلْددُوُّم کے اَبواب یعنی نیکی کی دعوت اور غیبت کی تباہ کاریاں کے صفحات میں کمی کی جاسکتی ہے کیونکہ جِلْد دُوم کے صفحات سائز میں بہ نِسْبَت جِلْد اوّل کے بڑے ہیں۔

سوال 3  : بعدِ فَجْر مدنی حلقوں کی تعداد بڑھانے کے لئے کیا اقدامات کیے جائیں؟

جواب  : بِالْخُصُوص”مدنی“اِسْلَامی بھائیوں اور بالعموم ہر سَطْح کے ذِمَّہ داران کو بَعْدِ فَجْر مدنی حلقے میں شِرْکَت کرنے یا مدنی حلقہ لگانے کی ترکیب کرنی چاہیئے۔جتنی بڑی سَطْح کا تنظیمی ذِمَّہ داربعدِ فَجْر مدنی حلقہ لگائے گا ، اُسی قَدْر مدنی حلقوں کی تعداد بڑھنے کےساتھ ساتھ شرکا کی تعداد میں بھی اِضافہ ہوگا۔تمام ذیلی حلقوں کا



[1]     فتاوی  ھندیه ، کتاب الکراھیة ، الباب السابع فی السلام و تشمیت العاطس ، ۵ / ۴۰۲

[2]     فتاوی  ھندیه ، کتاب الکراھیة ، الباب الخامس فی آداب المسجد والقبلة...الخ ، ۵ / ۳۹۷



Total Pages: 15

Go To