Book Name:Mufti e Dawateislami

ہرکام میں نرمی :

مفتی ٔ دعوتِ اسلامی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہکی والدہ محترمہ کا بیان ہے کہ ہم نے ان کو کبھی غصّہ کرتے نہیں دیکھا،نہ بہن ،بھائیوں پر، نہ اپنی بچی کی امّی پر غصّہ کرتے، ہمیشہ نرمی سے گفتگو فرماتے تھے۔

مکتب ِ مجلس ِ افتاء میں ان کی رفاقت میں سنتوں کی خدمت کرنے والے ایک مفتی صاحب مدظلہ العالی کا بیان ہے کہ

’’مفتی دعوت ِ اسلامی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ اپنے ساتھ کام کرنے والوں پر کمال شفقت فرماتے اور ہر دم خیر خواہی پیش نظر ہوتی ،تکلف نام کی کوئی چیز نہ تھی ۔مجھ سے کبھی یہ نہیں فرمایا’:’ یہ کام کیوں نہیں کیا ‘‘ اور مجھے کبھی بھی نہیں ڈانٹا اور نہ ہی کسی کو ڈانٹتے دیکھا۔

مجلس افتاء ہی کے ایک مفتی صاحب مدظلہ العالی کا بیان ہے کہ

’’ جب میں تخصص فی الفقہ سالِ دوم میں تھا مجھے مفتی صاحب کے ماتحت ’’دارالافتاء نورُالعرفان ‘‘میں 18اگست 2003ء سے ۱۹جون ۲۰۰۴ء تک فتویٰ نویسی کی سعادت حاصل ہوئی ۔مفتی صاحبرحمۃ اللہ تعالیٰ علیہبہت مُشْفِق تھے جب بھی فتویٰ ان کی خدمت میں پیش کرتا تو وہ میری تربیت کے لئے اس پر اشکالات وَارِد کرکے ان کے جوابات طلب کرتے۔ پھر میں ان کے جوابات دے دیتا تو بے حد خوش ہوتے اور اگر ناکام رہتا تو نرمی کے ساتھ خود جواب ارشاد فرما دیتے اور اگر فتویٰ میں تبدیلی کرنا ہوتی تو


 

 



Total Pages: 89

Go To