Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

جواب     مشہور ومعروف قول یہ ہے کہ آپ نجف شریف میں مَدْفُون ہیں  ۔  (  [1])

عَشَرَۂ مُبَشَّرَہ

سوال      راہِ خدا میں سب سے پہلا تیر کس نے چلایا؟

جواب     اللہ عَزَّ  وَجَلَّ کی راہ میں سب سے پہلا تیرحضرت سیدنا سعد بن ابی وقاص رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہنے کفار کی طرف پھینکا ۔  (  [2])

سوال      حضرت سعد بن ابی وقاص رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  نے کس عمر میں اسلام قبول کیا؟

جواب     قبولِ اسلام کے وقت آپ کی عمر17یا19 سال تھی ۔  (  [3])

سوال      اَلْفَیَّاض ، اَلْجُوْد اور اَلْخَیْر کے القاب کس صحابی کو عطا ہوئے ؟

جواب     حضور جانِ عالَم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّم کی زَبانِ حق سے یہ القاب حضرت سیدنا طلحہ بن عُبَیْدُاللہ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  کوعطا ہوئے ۔  (  [4])  علامہ عبدالرَّءُوْف مَناوِی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی فرماتے ہیں  : آپ کی بکثرت سخاوت کی وجہ سے یہ القابات عطافرمائے گئے ۔  (  [5])

سوال      حضرت طلحہ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ کن آٹھ خوش نصیب افراد میں سے ایک ہیں ؟

جواب     حضرت سیدنا طلحہ بن عُبیدُاللہ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ اُن آٹھ افراد میں  سے ایک ہیں  جنہوں  نے سب سے پہلے اسلام قبول کیا ۔  (  [6])

سوال      حمایتِ رسول میں سب سے پہلے تلوار اٹھانے والے مردِ مجاہد کون تھے ؟

جواب     حضور نبیِ اکرم ، نورِ مجسّم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کی حفاظت و حمایت میں سب سے پہلے تلوار اُٹھانے والے حضرتِ سَیِّدُنا زبیر بن عَوَّام رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  ہیں ۔  (  [7])

سوال      اسلام کا ستون کس شخصیت کو کہا گیا ہے ؟

جواب     حضرت سیدنا عمر فاروقِ اعظم رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  نے حضرت سیدنا زبیر بن عَوَّام رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  کے بارے میں فرمایا  : وہ اسلام کے ستونوں میں سے ایک ستون ہیں ۔  (  [8])

سوال      غزوۂ اُحد میں حضرت ابو عبیدہ بن جَرَّاح رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے کس انداز میں عشقِ رسول کا عَمَلِی مُظَاہرہ کیا؟

جواب     غزوۂ احد میں جب حضور تاجدارِ ختمِ نبوت صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کے رخسارِ مبارک ’’خود‘‘ کی کڑیاں  پَیْوسْت ہونے سے زخمی ہوئے تو حضرت سیدنا ابو عبیدہ بن جراح رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  یہ دیکھ کر تڑپ اٹھے اور عشقِ رسول کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے آپ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کے پاس پہنچ کر فوراً ہی اُن کڑیوں  کو اپنے دانتوں  سے نکالنے لگے ، پہلی کڑی نکلی تو ساتھ ہی آپ کا سامنے کا ایک دانت ٹوٹ گیا اور دوسری کڑی نکلی تو دوسرا دانت بھی ٹوٹ گیا ۔  (  [9])

سوال      حضرت سَیِّدُنا ابو عبیدہ بن جرّاح رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ کا وصالِ ظاہری کب اور کس سبب سے ہوا؟

جواب     آپ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ کا وصالِ ظاہری 18 سن ہجری میں اُردن  (  جوپہلے ملک شام کاشہر تھا) میں مرضِ طاعون کی وجہ سے ہوا ، اس وقت آپ کی عمر58 سال تھی ، حضرت سَیِّدُنا معاذ بن جبل رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ نے آپ کی نمازِ جنازہ پڑھائی ۔  (  [10])

سوال       کون سے صحابی جنت میں حضرت موسیٰ عَلَیْہِ السَّلَام کے رفیق ہوں گے ؟

جواب     حضرت سیدنا سعید بن زید رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  ۔  (  [11])

سوال      عشرۂ مبشرہ میں سے کس شخصیت کو دمشق کا حاکم مقرر کیاگیا؟

جواب     حضرت سَیِّدُناابو عبیدہ بن جراح رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  نے حضرت سَیِّدُنا سعید بن زید رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  کودمشق کا حاکم مقررکیا ۔  (  [12])

سوال      حضرت سَیِّدُنا عبد الرحمٰن بن عوف رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ   کی سیادت (  یعنی سرداری) کے متعلق حدیث شریف میں کیا فرمایا گیا؟

جواب   حضورتاجدارِمدینہ ، راحتِ قَلْب وسینہصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَنے ارشاد فرمایا :  عبدُ الرَّحمٰنِ بْنِ عَوْف سَیِّدٌ مِنْ سَادَاتِ الْمُسْلِمِیْنْ یعنی حضرت عبد الرحمٰن بن عوفرَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی



[1]     اجمال ترجمہ اکمال ہامش علی مرآۃ المناجیح ، علی بن ابی طالب ، ۸ /  ۴۷ ، شرح شجرہ قادریہ ، ص۴۳ ۔

[2]     تاریخ ابن عساکر ، ابو اسحاق سعد بن ابی وقاص ، ۲۰ /  ۲۹۱ ، رقم۲۴۲۶ ۔

[3]     تاریخ ابن عساکر ، ابو اسحاق سعد بن ابی وقاص ، ۲۰ /  ۲۹۳ ، رقم۲۴۲۶ ۔

[4]     معجم کبیر ، ۱ /  ۱۱۲