Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

سوال      غزوہ ٔفتحِ مکہ کے موقع پر اسلامی لشکرکی تعداد کتنی تھی ؟

جواب     غزوۂ فتحِ مکہ کے لئے حضورِاَکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم مدینۂ منورہ سے بار ہ ہزار کا لشکرِ جرارساتھ لے کر روانہ ہوئے ۔  (  [1])

سوال      مکہ مکرمہ میں داخلے کے وقت حضور نبی کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کون سی سورۂ مبارکہ تلاوت فرمارہے تھے ؟

جواب     اُس وقت حضورتاجدارِ ختمِ نبوّت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم’’سورۂ فتح‘‘ کی تلاوت فرمارہے تھے ۔  (  [2])

سوال      وہ کون  سا پہلوان تھا جسے حضورنبیٔ رحمت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے تین بار زمین پر پچھاڑاتو وہ اسلام لے آیا؟

جواب     اس پہلوان کا نام  ’’یزید بن رُکانہ‘‘رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہہے ۔  (  [3])

سیدنا صدیقِ اکبر رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ 

سوال      اسلام کے خطیبِ اوّل کون ہیں؟

جواب     خطیبِ اوّل حضرت سیدناابوبکر صدیق رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ ہیں کہ آپ نے سب سے پہلے مسجد الحرام شریف میں خطبہ دیا ۔  (  [4])

سوال      کیا سیدناصدیق اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کا شجرۂ نسب حضور رحمتِ عالم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے شجرۂ مبارکہ سے ملتا ہے ؟

جواب     جی ہاں ! ساتویں پشت میں آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کاشجرۂ نسب امامُ الانبیاء والمرسلین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے خاندانی شجرہ سے مل جاتا ہے ۔  (  [5])

سوال      حضرت سیدنا صدیق اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کے والدین  کا نام اور کنیت بتائیے ؟

جواب     آپ کے والد ماجد کا نام عثمان اور ان کی کنیت ابو قحافہ تھی جبکہ والدۂ ماجدہ کا نام  سلمیٰ بنت صخر اور کنیت اُمُّ الخیر تھی ۔  (  [6])

سوال      صحابۂ کرام  میں شیخین سے کون مراد ہیں ؟

جواب     شیخین سے مراد امیر المؤمنین حضرت سیدنا ابو بکر صدیق اور امیر المؤمنین حضرت سیدنا عمرفاروقِ اعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمَا ہیں  ۔  (  [7])

سوال      سیدنا صدیق اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ کے مال کے متعلق حضورِاکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے کیا فرمایا ؟

جواب     حضورنبیِ پاک ، صاحبِ لولاک صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا :  مَا نَفَعَنِیْ مَالٌ قَطُّ مَا نَفَعَنِیْ مَالُ اَبِیْ بَکْریعنی مجھے کبھی کسی کے مال نے وہ فائدہ نہ دیا جو ابو بکر کے مال نے دیا ۔  [8])

سوال      حضرت سَیِّدُناابو بکر صدّیق رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کو کون سی تین باتیں پسندتھیں ؟

جواب     سیدنا صدیقِ اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ فرماتے ہیں  : مجھے تین باتیں پسند ہیں :  (  1) حضورِ اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے چہرۂ اَنور کا دیدار کرتے رہنا   (  2) آپ پر اپنا مال خرچ کرنااور (  3) آپ کی بارگاہ میں حاضر رہنا ۔  (  [9])

سوال      سیدناصدیق اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہنے کتنے غلام آزاد کئے ؟

جواب     آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ نے سات غلام خرید کرآزاد فرمائے ۔  (  [10])

سوال      سیدنا صدیق اکبر رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کی علمِ تعبیر میں مہارت کا راز کیا تھا؟

جواب     مہارت کا راز یہ  تھا کہ آپ نے یہ علم  براہِ راست بارگاہِ رسالت سے پایا ۔ حضور نبیِ کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا :  مجھے خوابوں کی تعبیر بتانے کا حکم دیا گیا ہے  اور یہ کہ  میں یہ علم ابوبکر کو سکھاؤں ۔  (  [11])

سوال      حضرت ابوبکر صدیق رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کاروبار کیا تھا؟

جواب     آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کپڑے کاکاروبار کیا کرتے تھے ۔  (  [12])

 



[1]     مواھب اللدنیة ، المقصد الاول ، مغازیہ وسرایاہ وبعوثہ صلی اللہ علیہ وسلم ، ۱ /  ۳۱۰ ۔

[2]     شرح المواھب ، باب غزوة الفتح الاعظم ، ۳ /  ۴۳۲ ۔

[3]     شرح المواھب ، الفصل الثانی فیما اکرمہ اللہ تعالی بہ ۔ ۔ ۔ الخ ، ۶ /  ۱۰۳ ۔

[4]     تاریخ ابن عساکر ، رقم۳۳۹۸ ، ابو بکر الصدیق ، ۳۰ /  ۴۷ ۔

[5]     معجم کبیر ، ۱ /  ۵۱ ، حدیث : ۱ ۔

[6]     معجم کبیر ، ۱ /  ۵۱ ، حدیث : ۱ ۔

[7]     بہار شریعت ، ۳ /  ۲۷ ۔

[8]