Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

جواب     حضرت سیِّدُنا سہل بن عبدُاللہ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہفرماتے ہیں :  سب سے بڑی کرامت یہ ہے کہ تو اپنے بُرے اخلا ق کو اچھے اخلاق سے بدل ڈال ۔  (  [1])

سوال      مومن کی نرم مزاجی اور شرافت کی انتہا کیا ہے ؟

جواب     حضرت سیدنا ابوہریرہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ سے روایت ہے کہ حضور تاجدارِ مدینہ ، راحتِ قلب وسینہ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم ارشادفرماتے ہیں : مومن اتنانرم مزاج اورشریف ہوتاہے کہ لوگ اُس کی شرافت کی وجہ سے اُسے اَحمق خیال کرتے ہیں ۔  (  [2])

سوال      اَخلاق کے کتنے حصے ہیں؟

جواب     حضرت سیدنا عثمان بن عفان رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہسے روایت ہے کہ حضور نبیِ رحمت ، شفیعِ اُمَّت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمنے ارشادفرمایا :  اللہ عَزَّوَجَلَّنے 100 مخلوقات بنائی ہیں اور 17قسم کے اخلاق پیدا کئے ہیں  تو جسے اللہتعالیٰ ان میں سے ایک سے بھی نوازتا ہے وہ جنت میں داخل ہوگا  ۔  (  [3])

سوال      حسنِ اَخلاق کی علامات بیان کیجئے ؟

جواب     حسنِ اَخلاق کی علامات کو یوں بیان فرمایاگیا ہے :  حسنِ اخلاق کا پیکر وہ ہے جوحد سے زیادہ حیا والا ہو ، بہت کم کسی کو اذیت دے ، نیکیوں کا جامع ہو ، سچ بولے ، گفتگوکم اورعمل زیادہ کرے اور وقت بھی کم ضائع کرے نیز بہت کم لَغْزِش کا شکار ہو ، وہ نیک ، پُروَقار ،  صابِر ، قضائے الٰہی پر راضی  رہے ، شکر گزار ، بُردبار ، نرم دل ، پاکدامن اور شفیق ہو نہ کہ عیب جُو ، گالیاں دینے والا ، غیبت کرنے والا ، جَلدباز ، کینہ پَروَر ، بخیل اور حاسد ہو بلکہ ہشاش بشاش رہتا ہو اللہ عَزَّ  وَجَلَّ کی خاطر محبت اور بغض رکھے اوراللہ عَزَّ وَجَلَّکی ہی خاطر کسی سے راضی یا ناراض ہو تو وہی شخص حسنِ اخلاق کا پیکر کہلانے کا حق رکھتا ہے ۔  (  [4])

سوال      کونسی تین چیزوں کے نہ ہونے پر ثواب کی امید نہ رکھنے کی وعید آئی ہے ؟

جواب     حضرت سیدتنااُمِّ سلمہرَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہَا سے مَرْوِی ہے کہ حضور نبیِ کریم ، رَءُوْفٌ رَّحیم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا : جس میں تین باتوں میں سے کوئی ایک بھی نہ پائی جائے تووہ اپنے کسی بھی عمل کے ثواب کی امید نہ رکھے :   (  1) حرام کاموں سے روکنے والا تقویٰ (  2) بے وقوفوں  سے روکنے والا حِلْم اور  (  3) ایسا حسنِ اخلاق جس کے ساتھ وہ لوگوں (  معاشرے ) میں زندگی بسر کرے ۔  (  [5])

سوال      بد اَخلاقی کے اَعمال پر کیا اثرات پڑتے ہیں؟

جواب     رسولُ اللہصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کا فرمانِ عالیشان ہے : بے شک بُرااخلاق عمل کو اس طرح خراب کرتاہے جیسے سرکہ شہدکو خراب کرتا ہے ۔  (  [6])

سوال      آدمی کی عزت ، مُرُوَّت اورشرافت کن چیزوں کو قرار دیا گیا ہے ؟

جواب     حضرت سیدناابو ہریرہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ حضورسید العالمین صَلَّی اللہ تَعَالٰی علیہ وَالہٖ وَسلَّم نے ارشاد فرمایا :  آدمی کی عزت اُس کا دین ہے ، اُس کی مروت اس کی عقل ہے اوراُس کی شرافت اس کا اخلاق ہے ۔  (  [7])

خوفِ خدا

سوال      قرآنِ پاک میں خوفِ خدا والوں کے لیے کونسی عظیم خوشخبریاں ہیں؟

جواب     قرآنِ کریم میں خوفِ خدا رکھنے والوں کے لیے بعض عظیم الشان خوشخبریاں یہ ہیں :  (  1) دوجنتوں کی بشارت[8])  (  2) آخرت میں بے خوفی[9])  (  3) اللہ تعالیٰ کی تائید ومدد[10])  (  4) اعمال کی قبولیت[11])  (  5) بارگاہِ الٰہی میں سب بڑھ کر عزت[12])  (  6) جہنم سے دُوری[13])  (  7) ذریعۂ نجات[14]) ۔

سوال      خوفِ خدا کی اقسام بیان کیجئے ؟

 



[1]     الروض الفائق ، المجلس السابع عشر فی اثبات کرمات الاولیاء ، ص ۱۰۲ ۔

[2]     شعب الایمان ، باب فی حسن الخلق ، فصل فی لین الجانب وسلامة الصدر ، ۶ /  ۲۷۲ ، حدیث : ۸۱۲۷ ۔

[3]     مسند طیالسی ، مسند عثمان بن عفان ، ص۱۴ ، حدیث : ۸۴ ۔

[4]     الزواجر عن اقتراف الکبائر ، الباب الاول فی الکبائر الباطنة ، الکبیرة الثامنة والثلاثون ، ۱ /  ۱۸۴ ۔

[5]     شعب الایمان ، باب فی حسن الخلق ، فصل فی الحلم والتؤدة ، ۶ /  ۳۳۹ ، حدیث : ۸۴۲۴ ۔

[6]     معجم اوسط ، ۱ / ۲۴۷ ، حدیث : ۸۵۰ ۔

[7]     مسندامام  احمد ، مسند ابی ہریرة ، ۳ / ۲۹۲ ، حدیث : ۸۷۸۲ ۔

[8]     پ۲۷ ، الرحمن : ۴۶ ۔

[9]     پ۲۵ ، الدخان : ۵۱ ۔

[10]     پ