Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

کے ذریعہ نیل یا سرمہ جسم میں لگاکرنقش و نگار کرانا یا اپنا نام لکھوانا یہ دونوں کام ممنوع ہیں ، طریقہ ٔمشرکین ہیں اور طریقہ کفّاروفجار ۔  (  [1])

سوال      صحابۂ کرامعَلَیْہِمُ الرِّضْوَان کے پاس تشریف لے جاتے وقت حضور رحمتِ عالَم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ کس طرح زینت فرماتے ؟

جواب     سرورِ کونَین ، شہنشاہِ دارَین صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم جب صحابۂ کرام عَلَیْہِمُ الرِّضْوَان کے پاس تشریف لے جانا چاہتے تو پانی میں دیکھ کر اپنے مبارک عمامے اورمُقَدَّس بالوں کو درست فرماتے ۔  حضرت سیدتناعائشہ صدیقہ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہا  نے عرض کی : کیا آپ بھی ایسا کرتے ہیں؟ ارشادفرمایا : ہاں ، بے شک اللہ عَزَّ  وَجَلَّ پسند فرماتا ہے کہ بندہ اپنے مسلمان بھائیوں کے پاس جانے کے لیے زِینت اِختیار کرے ۔  (  [2])

بیٹھنے ، سونے اورچلنے کے آداب

سوال      بیٹھتے وقت مُنہ کس سَمْت رکھنا سنّت ہے ؟

جواب     بیٹھتے وقت کَعْبَۃُ اللہ شریف کی سَمْت مُنہ رکھنا سنّت ہے ۔  (  [3])

سوال      اِحْتِبا کسے کہتے ہیں اور کیا یہ سنت ہے ؟

جواب     اِحْتِبا  (  بیٹھنے کا ایک انداز) کی صورت یہ ہے کہ آدمی سُرین کو زمین پر رکھ دے اور گُھٹنے کھڑے کرکے دونوں ہاتھوں سے گھیر لے اور ایک ہاتھ کو دوسرے سے پکڑ لے اس قسم کا بیٹھنا تواضع اور اِنکسار میں شمار ہوتا ہے ۔  (  [4]) حضرت ابوسعید خُدری رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے کہ حضورنبی کریم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلِہٖ وَسَلَّمَ جب مسجد میں بیٹھتے تو دونوں ہاتھوں سے اِحتبا کرتے ۔  (  [5])

سوال      کون سے  جانوروں کی کھال پر بیٹھنا منع ہے اور کیوں  ؟

جواب     شیر اور چیتے کی کھال پر بیٹھنا منع ہے کیونکہ اس سے غرورپیدا ہوتا ہے ۔  (  [6])

سوال      مجلس کے اِختتام پر کون سی دعاپڑھی جاتی ہے اور اس کی کیا فضیلت ہے ؟

جواب     حضور مُعلّمِ کائنات ، شاہِ موجودات صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا :  چند کلمات ہیں کہ جو شخص مجلس سے فارِغ ہوکر  ان کو تین مرتبہ کہہ لے گاتو یہ اُس کے گناہوں کے لیے کفّارہ ہوجاتے ہیں اور جو شخص مجلس خیر و مجلس ذکر میں ان کو کہے گاتو یہ اُس کے لیے تصدیق کی مُہر ہوجاتے ہیں جس طرح کسی تحریر پر انگوٹھی سے مُہْرلگائی جاتی ہے ۔  وہ کلمات یہ ہیں :  سُبْحَانَکَ اللّٰھُمَّ وَبِحَمْدِکَ لَآ اِلٰہَ اِلَّا اَنْتَ اَسْتَغْفِرُکَ وَاَتُوْبُ اِلَیْکَ ۔  (  [7])

سوال      حدیثِ پاک میں رات کے وقت بَرتن چُھپانے کا کیا حکم ہے ؟

جواب     حدیثِ پاک میں ہے کہ سال میں ایک رات ایسی ہوتی ہے کہ اس میں وبا اُترتی ہے ، اگر وہ ایسی جگہ سے گزرے جہاں کوئی بَرتن چُھپا  (  ڈھکا) ہوا نہ ہو یا مشک کا منہ بندھا ہوا نہ ہو تو وہ وبا اس میں اُتر جاتی ہے ۔  (  [8]) اسی لئے فرمایا گیا کہ شام کے وقت بَرتن چُھپا دو اور مشک کا منہ باندھ دو ، اگرکچھ نہ ملے تو بِسْمِ اﷲکہہ کر ایک لکڑی آڑی کرکے رکھ دے ۔  (  [9])

سوال      سوتے وقت کون سا عمل کرنے سے اِنْ شَآءَاللهُ عَزَّ  وَجَلَّ  ایمان پر خاتِمہ ہوگا؟

جواب     سوتے وقت اپنے سب اوراد کے بعد سورۂ کافرون روزانہ پڑھ لیا کیجئے اس کے بعد کلام وغیرہ نہ کیجئے ہاں اگرضرورت ہوتو کلام کرنے کے بعد پھر سورۂ کافرون تلاوت کرلیں ، اِنْ شَآءَاللهُ  تَعَالٰی خاتمہ ایمان پر ہوگا  ۔  (  [10])

سوال      سوتے وقت کون سا عمل کرنے سے ناگہانی آفات سے حفاظت ہوتی ہے ؟

جواب        اگر سوتے وقت آیۃ الکرسی پڑھ لے تورات بھر وہ مکان چوری ، آگ اور ناگہانی آفات سے محفوظ رہے گا اورپڑھنے والا بدخوابی اورجنّات کے خَلَل سے بچا رہے گا ۔  (  [11])

سوال      قرآنِ کریم میں نیک بندوں کے چلنے کا انداز کیا بتایا گیا ہے ؟

 



[1]     مرآۃ المناجیح ، ۴ / ۲۳۱ ۔

[2]     اتحاف السادة المتقین ، کتاب ذم الجاہ والریاء ، بیان حقیقةالریاء ۔ ۔ ۔ الخ ، ۱۰ /  ۹۳ ۔

[3]     ابو داود ، کتاب الجنائز ، باب الجلوس عند القبر ، ۳ /  ۲۸۶ ، حدیث : ۳۲۱۲ ، ماخوذاً ۔

[4]     بہارشریعت ، حصہ۱۶ ، ۳ /  ۴۳۲ ۔

[5]     مشکاة المصابیح ، کتاب الادب ، باب  الجلوس والنوم والمشی ، ۲ /  ۱۷۴ ، حدیث : ۴۷۱۳ ۔

[6]     اسلامی زندگی ، ص ۸۴ ۔

[7]     ابو داود ، کتاب الادب ، باب فی کفارة المجلس ، ۴ /  ۳۴۷ ، حدیث : ۴۸۵۷ ۔

[8]     مسلم ، کتاب الاشربة ، باب الامر بتغطیة الاناء ۔ ۔ ۔ الخ ، ص۸۵۹ ، حدیث : ۵۲۵۵ ۔

[9]     مسلم ، کتاب الاشربة ، باب الامر بتغطیة الاناء ۔ ۔ ۔ الخ ، ص۸۵۸ ، حدیث : ۵۲۴۶ ۔

[10]     ملفوظات اعلی حضرت ، ص۳۱۱ ۔

[11]     اسلامی زندگی ، ص ۱۳۰ ۔



Total Pages: 122

Go To