Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 02

جواب     محمد بن ابو فتح ہروی رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہفرماتے ہیں میں نے شیخ محی الدین عبد القادر رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ کی چالیس سال تک خدمت کی ، اس مدت میں آپ عشاء کے وضو سے صبح کی نماز پڑھتے اور آپ کا معمول تھا کہ جب بے وضو ہوتے تھے تو اسی وقت وضوفرماکر دو رکعت نمازنفل پڑھ لیتے تھے ۔   میں آپ کی خدمت میں چند راتیں سویا  ۔ آپ کا حال یہ تھا کہ اوّل  رات کچھ نفل پڑھتے پھر ذکر ومناجات کرتے  ، پھر کھڑے ہوکر قرآن شریف پڑھتے یہاں تک کہ رات کا دوسرا حصہ گزر جاتا ، آپ طویل سجدے کرتے پھر مُراقبہ ومُشاہدہ میں طلوعِ فجر تک  بیٹھے رہتے ، پھر نہایت عجز ونیاز اور خشوع کے ساتھ  دعا مانگتے ، اس وقت آپ کو ایسا نور ڈھانپ لیتا کہ نظروں سے غائب ہو جاتے یہاں تک کہ نمازِ فجر کے لیے خَلْوَت کَدے سے باہر نکلتے ۔  (  [1])

سوال      شیخ عبد القادر جیلانی رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہکا خوفِ خدا کیسا تھا؟

جواب     حضرتِ سیِّدُناشیخ شَرْفُ الدِّین سَعْدِی شیرازی رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ فرماتے ہیں کہ حضرتِ سیِّدُنا شیخ عبدُالقادِر جیلانی قُدِّس سِرُّہٗ النُّورانی کو حَرَمِ کعبہ میں دیکھا گیاکہ کنکریوں پرسر رکھے بارگاہِ ربُّ العزّت عَزَّوَجَلَّ میں عرض گزار ہیں : ”اے خُداوندِ کریم عَزَّ  وَجَلَّ ! مجھے بخش دے اور اگرمیں سزاکاحَقْدار ہوں تو بروزِ قِیامت مجھے اَندھا اُٹھاناتاکہ نیکوکارلوگوں کے سامنے شرمندہ نہ ہوں  ۔ “[2])

سوال      سرکارِ بغداد رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہکے دَسْتِ اَقدس پر کتنے لوگوں نے توبہ کی ؟

جواب     آپ رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہخودفرماتے ہیں  :  میرے ہاتھ پر پانچ سو سے زیادہ غیر مسلم مسلمان ہوئے اور ایک لاکھ سے زیادہ  بے عمل لوگوں نے توبہ کی  ۔  (  [3])

سوال      حضور غوثِ اعظم عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْاَکْرَم نے کس عمر میں وصال فرمایااور آپ کی نمازِ جنازہ کس نے پڑھائی؟

جواب     حضور غوثِ اعظم عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْاَکْرَم کاوصال91برس کی عمر میں ہوا اور آپ کی نمازِ جنازہ حضرت سید سیف الدِّین عبد الوھّاب عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الرَّزَّاق نے پڑھائی ۔  (  [4])

اَوْلِيَا و صَالِحِين رَحِمَہُمُ اللہُ تَعَالٰی

سوال      حضرت سیدناحسن بصری عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی کی کنیت کیا ہے ؟

جواب     حضرت سیدناحسن بصری عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْوَ لِی کی کنیت’’ابو سعید‘‘ہے  ۔  (  [5])

سوال      حضرت جنید بغدادی رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ کی شب بیداری کا احوال بیان کیجئے ؟

جواب     تیس سال تک آپ کا معمول تھا کہ عشاء کی نماز کے بعد کھڑے ہو کر صبح تک اللہ اللہ کہا کرتے اور اسی وضو سے صبح کی نماز ادا کرتے ۔  (  [6])

سوال      فرمانِ غوث پاک”میرا یہ قدم ہر ولی  کی گردن پر ہے ۔ “سن  کر بہت دُور غار میں  کس بزرگ نے اپنا سرجھکادیااور کیا عرض کی؟

جواب     وہ بُزرگ سلسلہ چشتیہ کے عظیم پیشوا حضرت خواجہ غریب نواز رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ ہیں کہ جب حضورِ غوثِ پاک  شیخ عبدالقادر جیلانی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْوَ الِی نے فرمایا کہ”میرا یہ قدم تمام اولیا کی گرد ن پرہے ۔ “تو آپ نے بہت دور غار میں آپ کایہ فرمان سُن کر عرض کی : بلکہ آپ کا قدم مبارک میری آنکھوں اورسر پر ہے ۔  (  [7])

سوال      حضرت ابوطالِب مکی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی کاتقویٰ کیسا تھا؟

جواب     عارِف بِاللہ ، امامِ اَجل حضرت سیّدُنا ابوطالِب مکی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْوَ لِیشکو ک و شبہات والی چیزوں سے پرہیز فرماتے اورگھاس کھانے پر اکتفاء کرنے کی وجہ سے اُن کے جسم مبارک کی رنگت سبز ہوگئی تھی ۔  (  [8])

سوال      حضرت محی الدین محمد بن صالح رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ کا مزار شریف کہاں ہے ؟

جواب     حضرت سیّدنا محی الدین محمد بن صالح عَلَیْہِ الرَّحْمَۃ کا مزار شریف اپنے پَردادا حضور غوث پاک رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ کے مدرسے کے احاطے میں ہے ۔  (  [9])

سوال      امام بوصیری رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہکو فالج سے کس طرح شفا ملی ؟

جواب   امام بوصیری رَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہپر فالج کا شدید حملہ ہوا جس کی وجہ سے ان کا نِصف جسم بے حِس وحرکت ہوگیا ۔ اسی حالت میں آپ نے رسولِ کونین صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلہٖ وسلَّمکی شان میں قصدیدہ بُردہ لکھا ۔ آپرَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہ فرماتے ہیں کہ جب قصیدہ ختم ہوا تو میرے خواب میں رسولِ کریم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلہٖ وسلَّم تشریف لائے ، اپنا دستِ مُبارک میرے جسم پر پھیرا اور اپنی مُبارک چادر میرے جسم پر ڈال دی جس کی بَرکت سے میں  فوراً صحتیاب ہوگیا ۔ جب میں  نیند سے بیدار ہوا تو اپنے آپ کو کھڑے ہونے اور



[1]     بھجة  الاسرار ، ص۲۵۰ ، ملخصاً ۔

[2]     گلستانِ سعدی ، ص۵۴ ۔

[3]     بھجة  الاسرار ، ص۱۸۴ ۔

[4]     شرح شجرہ قادریہ رضویہ عطاریہ ، ص۸۶ ۔

[5]     حلیة الاولیاء ، الحسن البصری ، ۲ /  ۱۵۳ ۔

[6]     شرح شجرہ قادریہ ، ص ۷۳ ۔

[7]     غوث پاک کے حالات ، ص۶۷ ۔

[8]     فیضان سنت ، ص۶۷۱ ۔

[9]     شرح شجرہ قادریہ رضویہ عطاریہ ، ص۹۲ ۔



Total Pages: 122

Go To