Book Name:Bahar-e-Niyat

کتاب کی خریدوفروخت کی سات نِیَّتَیْں

           (1) …اِس عمل سےظاہری وباطنی فائدہ اٹھاؤں گا۔ (2) …اپناوقت بھلائی کےکام میں صرف کروں گا۔ (3) …دوسروں کوخیروبھلائی  سیکھاؤں گا۔ (4) …علم کی حفاظت کروں گا۔ (5) …علم کو عام کروں گا۔ (6) …اِس عمل میں مشغول ہو کر فضول باتوں سےکنارہ کشی اختیارکروں گا۔ (7) …اگرکوئی رعایت طلب کرےگا تو اُس کے ساتھ تعاوُن کروں گا۔

اپنے پاس تسبیح رکھنےکی چھ نِیَّتَیْں

           (1) …صالحین کی پیروی کروں گا۔ (2) …نیک کام میں اِس سےمدد لوں گا۔  (3) …وقت کی حفاظت کرتےہوئےاللہتعالٰی کابکثرت ذکرکرنےوالابنوں گا۔

  (4) …سلف صالحین کی متابعت کروں گا۔ (5) …اِس کے ذریعے مختلف اَذکارکی تعدادیادرکھوں گا۔ (6) …اپنےاعضاء کواطاعت میں مشغول رکھوں گا۔

چادراستعمال کرنے کی10نِیَّتَیْں

           (1) …حضورنَبِیِّ اکرمصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکی اِتِّباع کروں گا۔ (2) …نماز کی سنتوں میں سےایک سنت پرعمل کروں گا۔ (3) …نیک بندوں کی پیروی کروں گا۔  (4) …صالحین سےمشابہت اِختیارکروں گا۔ (5) …نیکوکاروں کےگروہ میں اضافہ کروں گا۔ (6) …خودپراللہ تعالٰی کی نعمت کااظہار کروں گا۔  (7) …اپنے لباس کی تکمیل کروں گا۔  (8) …نمازکی تعظیم کےلیےزینت اختیارکروں گا۔ (9) …اپنے سِترکو چھپاؤں گا۔

چادراوڑھنےکی دعا:

           (10) …یہ دعاپڑھوں گا: اَلْحَمْدُلِلّٰہِ الَّذِیْ کَسَانِیْ ہٰذَاالثَّوْبَ وَرَزَقَنِیْہِ مِنْ غَیْرِ حَوْلٍ مِّنِّیْ وَلَاقُوَّۃٍیعنی سب خوبیاں اُساللہعَزَّ  وَجَلَّکےلیےجس نےمجھےیہ کپڑاپہنایااورمیری طاقت وقوت کے بغیر (محض اپنے فضل سے) یہ مجھے عطا فرمایا۔ ([1])

گھڑی استعمال کرنے کی چارنِیَّتَیْں

           (1) …اعمالِ خیرکےلیےاپنےاوقات کی حفاظت کروں گا۔ (2) …نمازکے اوقات کاخیال رکھوں گا۔ (3) …وقت کوتقسیم کاری کےساتھ چلاؤں گا۔ (4) …اپنے اوقات کا دھیان رکھوں گا۔

عجائب گھر وں اور تفریح گاہوں

کی پانچ نِیَّتَیْں  ([2])

           (1) …اپنےرفیقوں کےدلوں میں خوشی داخل کروں گا۔ (2) …اپنے دل کو راحت وسکون پہنچاؤں گا۔ (3)…مسلمان بھائیوں کی مددکرناسیکھوں گا۔ (4) …دوستوں سےرابطے مضبوط کروں گا۔ (5) …دوستوں میں اضافہ کروں گا۔

اَذان دینے کی12نِیَّتَیْں

           (1) …ایک عَمل خیر کروں گا۔ (2) …بآوازِ بلنداللہعَزَّ  وَجَلَّ کا ذکر کروں گا۔

 (3) …لوگوں کونماز کی حاضری پراُبھاروں گا۔ (4) …اِس نیت کےساتھ اَذان دوں گاکہ میری آوازسننےوالاہرکوئی گواہی دےگاکہ یہاللہتعالٰی کاذکرکرنےوالا ہے۔  (5) …نمازسےپیچھےرہ جانےکی بُرائی کوختم کروں گا۔ (6) …میری آواز سننے والا ہرکوئی میرےگواہی دینےپر گواہ ہوگا۔ (7) …اَمر بالمعروف کروں گا یعنی نیکی کا حکم دوں گا۔ (8) …خودکواللہتعالٰی کےذکرمیں مشغول کروں گا۔  (9)…غافلوں کےدرمیان ذکرِالٰہی کروں گا۔ (10) …شعائرِاسلام میں سےایک شعارکااظہارکروں گا۔ (11)…بھلائی کےکاموں پرمسلمانوں کی مددکروں گا۔ (12) …حضورنَبِیِّ  اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی سنت کااِتِّباع کروں گا۔

اَذان سنتے وقت  کی دعائیں:

       جب بندہ اَذان سنےتوجس طرح مُؤَذِّن کہےیہ بھی اُسی طرح کہتاجائے۔حضرت سیِّدُنایحییٰرَحْمَۃُ اللہِ تَعَالٰی عَلَیْہفرماتےہیں: ہمارےبعض اَحباب نےبیان کیاکہ جب مُؤَذِّنحَیَّ عَلَی الصَّلٰوۃ“کہےتوسننےوالاجواب میں یہ کہے: ”لَاحَوْلَ وَلَاقُوَّۃَ اِلَّا بِاللہ۔“اور انہوں نےفرمایاکہ ہم نےتمہارےنبیصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکواسی طرح جواب دیتےسناہے ([3]) اورجب اِقامت میں مُؤَذِّن”قَدْقَامَتِ الصَّلٰوۃ“کہےتوتم جواب میں یوں کہو: اَقَامَھَااللہُ وَاَدَامَھَامَادَامَتِ السَّمٰوَاتُ وَالْاَرْضُ (یعنی جب تک زمین وآسمان ہیںاللہعَزَّ  وَجَلَّاِسےقائم ودائم رکھے) اورجب اَذانِ فجرمیں مُؤَذِّن”اَلصَّلٰوۃُ خَیْرٌمِّنَ النَّوْمکہےتوتم یوں کہو: ”صَدَقْتَ وَبَرَرْتَ وَنَصَحْتَ (یعنی تونےسچ کہا، نیکی کی اورنصیحت کی)   ([4]) ۔“ ([5]  )

 



[1]    ابو داود،  کتاب اللباس،  باب ما یقول اذا لبس ثوبا جدیدا،  ۴ / ۵۹،  حدیث: ۴۰۲۳

[2]   یاد رہے کہ آج کل تفریح گاہوں اور پارکوں میں عموماًبے حیائی اوربے شرمی  کے کام ہوتے ہیں، بدنگاہی عام ہےاوروہاں طرح طرح کےگناہ ہوتےہیں لہٰذاایسی جگہوں میں جانا خودکوخطرے میں ڈالنا ہے۔البتہ اگر کسی تفریح گاہ یا پارک میں ایسانہیں ہوتاتوبیان کردہ  اوردیگراچھی نیتوں کےساتھ وہاں جانا یقیناً اجروثواب کا ذریعہ بن سکتا ہے۔(ازالمدینة العلمیہ)

[3]   بخاری،  کتاب الاذان،  باب مایقول اذا سمع المنادی،  ۱ / ۲۲۳،  حدیث: ۶۱۳

[4]   اَذان کا جواب دینے کا مفصل وآسان طریقہ نیز اَذان کے فضائل  وبَرکات جاننےکےلیے دعوتِ اسلامی کےاِشاعتی ادارےمکتبۃ المدینہ کی مطبوعہ4



Total Pages: 54

Go To