Book Name:Bahar-e-Niyat

لیے اُن پردُرودپڑھتاہوں کہ وہ اِس کےاَہل ہیں ۔اےاللہعَزَّ  وَجَلَّ!تواپنےفضل واِحسان سے اِس درود شریف کو قبول فرما، میرے دل سے غفلت کےپردے ہٹادے اورمجھے اپنے نیک بندوں میں شامل فرما۔

       اےربِّ کریم!اپنےمحبوبصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمکے اُس شرف میں اضافہ فرماجس سے تونے اُنہیں نوازا ہے اور اُس عزت کو بڑھا جو تونے انہیں عطا فرمائی ہے،  حضرات مُرسَلِیْنعَلَیْہِمُ السَّلَامکےمقامات میں اُن کےمقام کواورحضرات انبیاعَلَیْہِمُ السَّلَام کے درجات میں اُن کے درجے کو مزید اونچا فرما۔

       اے تمام جہانوں کےمالک!میں دنیاوآخرت میں عافیت کے ساتھ ساتھ تجھ سے تیری رضااورجنت کاسوال کرتاہوں اورقرآن وسنَّت اورجماعت (اہلسنت وجماعت)  نیزبغیر کسی تبَدُّل وتغیُّر کے کلمَۂ شہادت پر موت کا سوالی ہوں ۔اپنے فضل واحسان سے میرے گناہوں کو معاف فرمادے بے شک تو بہت زیادہ توبہ قبول فرمانے والا مہربان

ہےوَصَلَّی اللہُ عَلٰی سَیِّدِنَامُحَمَّدٍوَّاٰلِہٖ وَصَحْبِہٖ وَسَلَّمیعنیاللہتعالٰی ہمارےسردارحضرت محمداورآپ کےآل واصحاب پردُرودنازل فرمائے۔ (اٰمِیْن بِجَاہِ النَّبِیِّ الْاَمِیْنصَلَّی اللہُ عَلَیْہِ وَسَلَّم)

مَساجِدمیں تلاوتِ قرآن کی مَجالِس اور دورۂ قرآن میں حاضری کی42نِیَّتَیْں

       بلاشبہ ذکرکےحلقےاُن بڑی چیزوں میں سےہیں جن پراللہتعالٰی فرشتوں کے سامنےمُباہات (فخر) فرماتاہےاوراِس میں بھی شک نہیں کہ قرآنِ کریم کی تلاوت اور اُس کادورہ کرنااُن اَہم عِبادتوں میں سےہےجن کے ذریعے بندہ اپنے مولائے کریم کاقُرب حاصل کرتاہے۔اسی وجہ سے اِس اُمَّت کے گزشتہ وموجودہ نیک لوگوں نے  تلاوتِ قرآن کی مجلسوں کاانتظام کیا اور اِس کے ذریعے مسجدوں کو آباد کیا۔

       ہرمسلمان کو ان اجتماعات میں اچھی اچھی نیتوں کے ساتھ شرکت کرنی چاہیے تاکہ اِن  کی بدولت اپنے رب تعالٰی کا قُرب حاصل کرے۔جیسا کہ حضور تاجدارِختْمِ نبوتصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمنےارشادفرمایا: ”اعمال کامدارنیتوں پرہےاورہرشخص کو وہی ملے گا جس کی اُس نے نیت کی۔“ ([1])

       بندۂ مومن کو چاہیےکہ تلاوتِ قرآن کے اجتماعات میں درج ذیل نیتیں کرے:   (1) سلف صالحین کاطریقہ زندہ رکھوں گا۔ (2) مسجدکوآبادکروں گا۔  (3) …مسجدمیں اعتکاف کروں گا۔ (4)مسلمانوں کی تعدادمیں اضافہ کروں گا۔  (5) …مسجدکی آبادکاری اورقرآنِ کریم کی تلاوت پرمسلمانوں کی حوصلہ اَفزائی کروںگا۔ (6) …اپنےوقت کی حفاظت کرکےاُسےنیک عمل سےمعمورکروں گا۔ (7) …حفظِ قرآن میں دوسرےکی مددکروں گا۔ (8) اللہتعالٰی کےکلام سےنصیحت حاصل کروں گا۔ (9) قرآن سننےکافائدہ اٹھاؤں گا۔ (10) مسلمانوں کےباہمی روابط کومضبوط کروں گا۔ (11) رات میں تلاوت ہوئی تو شب بیداری کروں گا۔  (12) …جسےاللہتعالٰی نےعظمت عطاکی اُس کی تعظیم کروں گا۔ (13) …غیرحافظ کےدل میں حفظ کی اہمیت بٹھاؤں گااور اُسےقرآن سناؤں گا۔  (14) جس اجتماع کوفرشتے گھیرے ہوئے ہوتے ہیں اُس میں شرکت کروں گا۔  (15) …تلاوت سن کر اپنےایمان کومزید مضبوط کروں گا۔ (16) …مسلمان بھائیوں کےدلوں میں خوشی داخل کروں گا۔ (17) …قرآنِ  کریم سن کراپنے دل کومنوَّرکروں گا۔ (18) …تلاوت کی برکت سےاپنےسینےکوکشادہ کروں گا۔ (19) …تلاوت کرکےاجروثواب  پاؤں گا۔  (20) …قرآن  مجیدکودھیان سےسنوں گا۔ (21) …قرآنِ پاک کی طرف بلانے والےاوراِس پرمعاونت کرنےوالےکی بات توجہ سےسنوں گا۔ (22) ذِکْرُاللہ کےوقت نازل ہونےوالی برکات اور رحمت حاصل کروں گا۔ (23) نیک عمل کاجذبہ پانےکےلیےآخرت یاددلانےوالی آیتیں غورسےسنوںگا۔ (24) …نعمتوں سےتَعَلُّق رکھنےوالی آیاتِ مُقَدسَّہ سن کر خودپراللہتعالٰی کی نعمتوں کی معرفت حاصل کروں گا۔ (25) …قرآنِ کریم کےمعجزہ ہونےاور اُس کی عظمت وشان میں غوروفکر کروں گا۔ (26) …قرآن والےاللہ والےہیں لہٰذا خودکواُن میں شامل کروں گا۔  (27) …کلامِ الٰہی کےذریعےرِفعت وبلندی حاصل کروں گا۔  (28) …قرآنِ  حکیم کو ترتیل  اور تجوید کے ساتھ پڑھوں گا۔ (29) تلاوت کےاجتماع میں جاکردنیاویمصروفیات سےفراغت حاصل کروں گا۔ (30) …اللہعَزَّ  وَجَلَّکے ذکر سے دل کو سکون پہنچاؤں گا۔ (31) ایسی جگہ پہنچ کرعام اور سرکش شیاطین سے اپنی حفاظت کروں گا۔ (32) دورۂ قرآنِ کریم میں حضورنَبِیِّ کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی اِتِّباع کروں گاجیساکہ آپ حضرت سیِّدُناجبرائیلعَلَیْہِ السَّلَامکےساتھ کیاکرتےتھے۔  (33) قرآنِ پاک کے ذریعے خود کو نصیحت کروں گا۔  (34) …اپناحفظ اور قرآنِ پاک کی قراءت کو پختہ کروں گا۔ (35) …قرآن مجید (کےاحکامات) کودوسروں تک پہنچاؤں گاکیونکہ حضورنَبِیِّ اکرمصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نےارشادفرمایا: تم میں سےحاضروموجودغائب تک پہنچادے۔ ([2])  (36) …ایسی تجارت کروں گا جوبرباد نہیں ہوتی۔ (37) …تلاوتِ قرآن کےاجتماع میں جاکرثواب حاصل کروں گا۔ (38) …اللہ کریم کےمجھ پرہونےوالےفضل میں اضافہ چاہوں گا۔ (39) … اپنےگناہوں کی بخشش کروانےکی کوشش کروں گا۔ (40) اطاعت بجالاکراللہعَزَّ  وَجَلَّکی بارگاہ سے قبولیت کی امیدرکھوں گا۔

       اللہ ربُّ العزت ارشاد فرماتا ہے:

اِنَّ الَّذِیْنَ یَتْلُوْنَ كِتٰبَ اللّٰهِ وَ اَقَامُوا الصَّلٰوةَ وَ اَنْفَقُوْا مِمَّا رَزَقْنٰهُمْ سِرًّا وَّ عَلَانِیَةً یَّرْجُوْنَ تِجَارَةً لَّنْ تَبُوْرَۙ (۲۹)   (پ۲۲، فاطر: ۲۹)

 



[1]   بخاری،  کتاب بدء الوحی،  باب کیف کان بدء الوحی الی رسول اللّٰہ، ۱ / ۵،  حدیث: ۱

[2]   بخاری،  کتاب العلم،  باب لیبلغ العلم الشاھد الغائب،  ۱ / ۵۶،  حدیث: ۱۰۵



Total Pages: 54

Go To