Book Name:Qutub-e-Alam Ki Ajeeb Karamat Ma Deger Dilchasp Sawal Jawab

کھانا ہر طرح حلال ہے اگرچِہ فعلِ شکار ان ناجائز صورتوں سے ہوا  ہو۔ ([1]

کیا سرکار عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام نے مہندی لگائی؟

سُوال : مہندی لگانا قولی سُنَّت ہے تو کیا سرکار صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے اپنے مبارک بالوں میں کبھی بھی  مہندی نہیں لگائی؟

جواب:مہندی لگانے کی ضرورت اس وقت پڑتی ہے جب بال سفید ہوں جبکہ  ’’ بخاری شریف ‘‘ کی رِوایت کے مطابِق ہمارے پیارےآقا، مکی مدنی مصطفےٰ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ واٰلہٖ وَسَلَّم کی داڑھی مبارک اورسرِاقدس میں بیس بال بھی سفید نہ تھے۔  ([2])   مُفَسِّرِ شَہِیر، حکیم الاُمَّت حضرتِ مفتی احمد یار خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الْحَنَّان فرماتے ہیں: حضورِ انورصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے داڑھی شریف  میں کبھی خضاب نہ کیا کہ حضور  صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّمکے بال خضاب کی حد تک سفید نہ ہوئے صرف چند بال شریف سفید تھے، چند بار سر شریف میں مہندی لگائی تھی دردِسرکی وجہ سے۔ ([3]

سب سے پہلے مہندی کس نے لگائی؟

سُوال :سب سے پہلے مہندی اور کَتَم کا خِضاب کس نے کیا؟نیز سیاہ  خِضاب کس نے شروع کیا ؟

جواب:سب سے پہلے مہندی اور کَتَم کا خِضاب حضرتِ سیِّدُنا ابراہیم خلیلُ اللہ عَلٰی نَبِیِّنَا وَ عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام نے کیا جبکہ سیاہ خِضاب سب سے پہلے فرعون نے کیا جیسا کہ نبی مُکَرَّم، نُورِ مُجسَّم، شاہِ بنی آدم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے فرمایا: سب سے پہلے مہندی اور کَتَم کا خِضاب حضرت ابراہیم عَلَیْہِ الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَام  نے کیا اور سب سے پہلے سیاہ خِضاب فرعون نے کیا۔([4]

سفید داڑھی میں مہندی لگانے کی فضیلت

سُوال :کیا سفید داڑھی میں مہندی لگانے کی بھی کوئی فضیلت ہے؟

جواب:جی ہاں۔حضرتِ سیِّدُنا علّامہ جلالُ الدّین سُیوطی شافعی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہ ِ الْقَوِی  ’’ شرح الصُّدور ‘‘ میں نَقْل فرماتے ہیں کہ حضرتِ سیِّدُنا اَنَس رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے مرفوعاً رِوایت ہے:جوشخص اس حالت میں فوت ہوا کہ اس نے  ( کالے خِضاب کے علاوہ مثلاً لال یا زَرد مہندی کا)   خِضاب  کیا ہوا تھا،  منکر، نکیر اس سے قبر میں سوال نہیں کریں گے،  منکر کہے گا: اے نکیر!  اس سے سوال کرو۔ نکیر جواب دے گا کہ میں اس سے کیسے سوال کروں حالانکہ اس کے چہرے  پر اسلام کا نور



[1]    فتاویٰ رضویہ ، ۲۰ / ۳۴۳ ملتقطاً      

[2]    بخاری، کتاب المناقب، باب صفة النبی صلَّى الله عليه وسلم ، ۲ / ۴۸۷، حدیث: ۳۵۴۸ 

[3]    مرآۃ المناجیح، ۶ / ۱۵۰

[4]    فردوس الاخبار، باب الألف، ۱ / ۳۵، حدیث: ۴۷ دارالفکر بیروت  



Total Pages: 21

Go To