Book Name:Ijtimai Sunnat e itikaf ka Jadwal

اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ رَبِّ الْعٰلَمِیْنَ  وَالصَّلٰوۃُ  وَالسَّلَامُ  عَلٰی  سَیِّدِ الْمُرْسَلِیْنَ ط

اَمَّا بَعْدُ فَاَعُوْذُ بِاللہِ مِنَ الشَّیْطٰنِ الرَّجِیْمِ ط بِسْمِ اللہِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِیْمِ ط

اجتماعی  سنَّتِ اعتکاف کا جدول  

شیطان لاکھ سُستی دِلائے یہ رسالہ (۱۹۵صفحات)  مکمل پڑھ لیجیے۔اِنْ شَآءَ اللّٰہ عَزَّوَجَلَّ معلومات کا اَنمول خزانہ ہاتھ آئے گا۔

دُرُود شریف کی فضیلت

   مکی مَدَنی سلطان،سرورِ ذیشانصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم کا فرمانِ رحمت نشان ہے: جو مجھ پر ایک بار دُرُود بھیجے اللہتعالٰی اُس پر دس بار رَحمت نازِل فرمائے گا۔ ([1])  

صَلُّوْا  عَلَی الْحَبِیْب!         صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی  عَلٰی مُحَمَّد

   میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!اَلْحَمْدُ لِلّٰہ عَزَّوَجَلَّ ہم کتنے خوش نصیب ہیں کہ اللہ عَزَّوَجَلَّ  نے ہمیں جہاں دیگر بیشمار اِنعامات و اکرامات  سے نوازا ہے وہیں ایسے بابرکت  مہینے اور ایام بھی عطا فرمائے ہیں جن میں ہم  عبادات کر  کے مختصر وقت میں  زیادہ سے زیادہ نیکیاں کما کر اپنی قبر و آخرت کو بہتر سے بہترین بنا سکتے ہیں۔ انہیں بابرکت مہینوں میں سے ایک مہینا  رمضان المبارک کا بھی ہے ۔ یہ وہ مقدس اور محترم  مہینا  ہے جس کا نام قُرآنِ کریم میں صَراحَتاً ذکر کیا گیا ہے  اور اس کے فضائل بھی بیان ہوئے  ہیں جبکہ کسی اور مہینے کو یہ فضیلت حاصل نہیں۔ یہ اللہ عَزَّوَجَلَّ   کا مہینا ہے،اس مہینے  میں اللہ عَزَّوَجَلَّ    کی رحمتیں  چھما چھم  برستی ہیں، آسمانوں اور جنت کے دروازے کھول دیئے جاتے ہیں ،جہنم کےدروازے بند کر دیئے جاتے ہیں ، شیاطین کو قید کر لیا جاتا ہے۔اِس ماہِ مبارک  میں نیکیوں کا  اَجْر و ثَواب بڑھ جاتا ہے،نَفْل کا ثواب فَرض کے برابر اور فَرْض کا ثواب ستّر گُنا کر دیا جاتا ہے۔ ویسے تو یہ سارے کا سارا مہینا ہی رَحمت بَھرا ہے کہ اس کی ہرہرساعت اپنے جِلَو میں بےپایاں بَرَکتیں لیے ہوئے ہے مگر بطورِ خاص اس ماہِ مُحْتَرَم میں  شبِ قَدْربہت زیادہ اَہَمِیَّت کی حامِل ہے۔ اس کی اہمیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ  اللہ عَزَّوَجَلَّ   نے اس کی شانِ عظمت نشان  میں قرآنِ کریم کی ایک پوری سورت بنام ”سورۃُ القدر“ نازِل فرمائی جس میں اِرشاد فرمایا:)  لَیْلَةُ الْقَدْرِ ﳔ خَیْرٌ مِّنْ اَلْفِ شَهْرٍؕؔ (۳)   (  (پ۳۰، القدر:۳)   ترجمۂ کنز الایمان: شبِ قدر  ہزار مہینوں سے بہتر۔

پورے مہینے کا اعتِکاف

    شبِ قَدْر کو چونکہ اس  ماہِ مبارک میں پوشیدہ رکھا گیا ہے لہٰذا اس مبارَک رات کو پانے اور اس میں عبادت کے ذریعے خوب خوب اجر وثواب کمانے کے لیے ہمارے پیارے آقا،مکی مدنی مصطفےٰ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے ایک بار پورے ماہِ مبارَک کا اعتِکاف فرمایا جیسا کہ حضرتِ سیِّدُنا ابو سعید خُدْری رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ  سے روایت ہے کہ ایک مرتبہ نبیٔ کریمصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے یکم رَمَضان سے بیس رَمَضان تک اِعتِکاف کرنے کے بعد اِرشاد فرمایا: میں نے شبِ قدرکی تلاش کے لیے رَمَضان کے پہلے عَشرہ کا اعتِکاف کیا پھر درمیانی عَشرہ کا اعتِکاف کیا پھر مجھے بتایا گیا کہ شبِ قَدر آخِری عَشرہ میں ہے لہٰذا تم میں سے جو شخص میرے ساتھ اِعتِکاف کرنا چاہے وہ کر لے۔ ([2])

تُرکی خیمے میں اعتِکاف

        حضرتِسیِّدُنا ابوسعیدخُدریرَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ فرماتے ہیں کہ رسولِ کریمصَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلہٖ وَسَلَّم نے ایک تُرکی خیمے کے اندر رَمضانُ المُبارَک کے پہلے عَشرے کا اعتِکاف فرمایا، پھر درمیانی عَشرے کا، پھر سرِاقدس باہَر نکالا اور فرمایا: ”میں نے شبِ قدر تلاش کرنے کے لیے پہلے عَشرے کا اعتِکاف کیا،پھر اسی مقصد کے تَحت دوسرے عَشرے کا اعتِکاف بھی کیا، پھر مجھے اللہ تعالٰی کی طرف سے یہ خبر دی گئی کہ شبِ قَدْر آخِری عَشرے میں ہے  لہٰذا جوشخص میرے



[1]    مُسلِم، کتاب الصلاة، باب الصلاة علی النبی...الخ، ص۲۱۶، حدیث: ۴۰۸

2   مسلم، کتاب الصیام، باب فضل لیلة القدر ...الخ،  ص۵۹۴،  حدیث: ۱۱۶۷ ملتقطاً



Total Pages: 43

Go To