Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

جواب   حدیثِ مبارکہ میں ایسے شخص کو لعنتِ خداوندی کا مستحق قرار دیا گیا۔([1])اور ایک حدیثِ پاک  میں صحابۂ کرام کو اَذِیَّت دینے والے کو عذاب کی وعید سنائی گئی ہے۔([2])

سوال   حضرات صحابۂ کرام رِضْوَانُ اللّٰہِ تَعَالٰی عَلَیْہِمْ اَجْمَعِیْن کے متعلق ہمارا کیا عقیدہ ہے؟

جواب   تمام صحابۂ کرام(عَلَیْہِمُ الرِّضْوَان) آقائے دوعالَم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے جاں نثار،  سچے غلام اورجنتی ہیں،  ان کا ذکر عقیدت ومحبت کے ساتھ کرنا فرض ہے ،  ان کے متعلق برا خیال رکھنے والا بد مذہب گمراہ اور عذابِ  نار کا حقدار ہے کہ جو اُن پر زبان دراز کرے گویاوہ اللہ عَزَّ  وَجَلَّ کی حکمت وقدرت اور پیارے آقا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی رفعت ووجاہت اور شانِ محبوبی پر اعتراض کرتاہے،  تابعین سےقیامت تک کوئی بھی اُمتی کسی صحابی کے مرتبہ کو نہیں پہنچ سکتا۔([3])

سوال   سب سے پہلے صحابیٔ رسول کون ہیں؟

جواب   سب سے پہلے صحابیٔ رسول بننے کا شرف آزاد مَردوں میں حضرت سیدنا صدّیقِ اکبر ، بچوں میں حضرت سَیّدُناعلی المرتضیٰ، غلاموں میں حضرت سَیّدُنا زید بن حارثہ اور عورتوں میں حضرت سَیّدَتُنا خدیجۃُ الکُبریٰ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہُمْ کو حاصل ہے۔ ([4])

سوال   وہ  پہلے شہیدکون ہیں  جن کی نمازِ جنازہ حضورنبی پاک صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے پڑھائی ؟

جواب   حضرت سَیّدُناامیر حمزہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ ۔([5])

سوال   راہِ خدا میں شہید ہونے والی سب سے پہلی صحابیہ کا نام بتائیے؟

جواب   اُمِّ عمار حضرت سَیّدَتُنا سُمَیَّہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہَا۔([6])

سوال   ’’  غَسِیْلُ الْمَلَآئِکَہ“کونسے صحابی کا لقب ہے اور اس کی وجہ کیا ہے؟

جواب   وہ حضرت سَیّدُناحنظلہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہہیں اور اس لقب کی وجہ یہ ہے کہ جنگ میں شہادت کے بعد آپ کو فرشتوں نے غسل دیا تھا ۔([7])

سوال   حضرت ابوہریرہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کااصل  نام اور ”ابوہریرہ“ سے مشہور ہونے کی وجہ بتائیے؟

جواب   آپ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کا اصل نام ”عبد اللہ یا عبد الرحمٰن“ ہے۔([8]) ایک دن حضورنبی رحمتصَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے اِن کی آستین میں ایک بلی دیکھی تو آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے انہیں  ’’ یَااَبَا ھُرَیْرَہیعنی اے بلی والے!  ‘‘ کہہ کر پکارا، اسی دن سے آپ کا یہ لقب مشہور ہوگیا۔([9])

سوال   حضورنبی اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے کس کی کنیت  ’’ ابو حمزہ ‘‘  رکھی تھی؟

جواب   آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے حضرت انس بن مالک رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ کی کنیت  ’’ ابو حمزہ ‘‘ رکھی تھی۔([10])

سوال   کونسے صحابی ایک ہی رکعت میں پورا قرآن کریم تلاوت فرمالیتے تھے ؟  

جواب   حضرت سیدنا تمیم داری رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ۔([11])

اُمَّہات المؤمنین رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُنَّ  

سوال                 ازواجِ مطہرات کو”اُمہاتُ المؤمنین“کیوں کہا جاتا ہے؟

جواب     آقائے دوجہاں صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی ازواجِ مطہرات کو”امہات المؤمنین“اس لئے کہا جاتا ہے کہ قرآنِ مجید نے آپ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی ازواجِ مطہرات کو مؤمنوں کی ماں قرار دیا ہے،  فرمانِ باری تعالٰی ہے: (وَ اَزْوَاجُہٗۤ اُمَّہٰتُہُمْ) (پ۲۲، الاحزاب: ۶)ترجمۂ کنزالایمان: اور اس کی بیبیاں ان کی مائیں ہیں۔

سوال      امہات المؤمنین رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُنَّ کی تعداد کتنی ہے؟

جواب     امہاتالمؤمنین رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُنَّ کی تعدادمیں اختلاف ہےمگرجن گیارہ پر سب کا اتفاق ہے،  ان میں سے 6قبیلۂ قریش سے اور 4 عرب کے دیگر قبیلوں سے اور 1بنی اسرائیل کےقبیلہ بنو نضیر سے تعلق رکھتی ہیں جن کے اسماءِ گرامی بالترتیب یہ ہیں: (۱)حضرت سیدتناخدیجہ بنتِ خُوَیلد(۲)عائشہ بنتِ ابوبکر صدیق (۳)حفصہ بنتِ عمر فاروق(۴)اُم حَبیبہ بنتِ ابوسفیان(۵)ام سلمہ بنتِ ابو اُمیّہ (۶)سودہ بنتِ زمعہ (۷)زینب بنتِ جحش(۸)میمونہ بنتِ حارث (۹)زینب بنتِ خزیمہ(۱۰)جویریہ بنتِ حارث اور(۱۱)صفیہ بنتِ حُیَی رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُنَّ ۔([12])

 



4   معجم اوسط، من اسمہ عبد الرحمن، ۳/۳۳۶، حدیث:۴۷۷۱۔

5   ترمذی، کتاب المناقب، باب فی من سبّ أصحاب النبی، ۵/۴۶۳، حدیث:۳۸۸۸۔

1   بہارِ شریعت، حصہ ۱، ۱/۲۵۲-۲۵۴۔دس عقیدے، پانچواں عقیدہ، ص۷۷، ۷۸، ۸۷، ملخصاً۔

2   خازن، پ ۱۱، التوبۃ، تحت الآیۃ:۱۰۰، ۲/۲۷۴۔

3   اسد الغابة، حمزة بن عبد المطلب، ۲/۷۰۔

4   اسد الغابۃ، سمیۃ ام عمار، ۷/۱۶۷۔

1   الاصابة، حنظلة بن ابی عامر، ۲/۱۱۹۔

2   الاکمال فی اسماء الرجال، حرف الھاء، فصل فی الصحابة، ص۶۲۲

3   اسد الغابة، ابو ھ



Total Pages: 99

Go To