Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

سوال      آپس میں بھائی بھائی ہونے کا کیا نسخہ ہے؟

جواب     حضرت مفتی احمد یار خان عَلَیْہِ رَحْمَۃُ الرَّحْمٰن فرماتے ہیں: بدگمانی، حسد، بغض وغیرہ وہ چیزیں ہیں جن سے محبت ٹوٹتی ہے اور اِسلامی   بھائی چارہ محبت چاہتا ہےلہٰذا یہ عیوب چھوڑو تاکہ بھائی بھائی بن جاؤ۔([1])

سوال      کونسی خطا سب سے پہلے واقع ہوئی؟

جواب     جو خطاسب سے پہلے کی گئی وہ حسد ہے ۔([2])

سوال      سب سے پہلے حسد کس نے کیا تھا؟

جواب     سب سے پہلے حسدشیطان نےکیا۔([3])

سوال      شیطان نے کس سے کس معاملے میں حسد کیا تھا؟

جواب     اِبلیس ملعون نے حضرت آدم عَلَیْہِ السَّلَام کو سجدہ کرنے کے معاملے میں اُن سے حسد کیا۔([4])

 

سوال      حدیثِ پاک میں حسد کی کس طرح مذمت فرمائی گئی ہے؟

جواب     حضور جانِ عالَم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے فرمایا: حسد کرنے والا، چُغلی کھانے والا اور کاہِن (نجومی ، فال نکالنے والا)مجھ سے نہیں (یعنی میرے طریقہ پر نہیں) اور میں اُن سے نہیں۔([5])

سوال      حسد کرنے والا اللہ تعالٰی کی ناراضی کس طرح مول لیتا ہے؟

جواب     اللہتعالٰی نے بندوں پرنعمتوں کی جو تقسیم فرمائی ہے حسد کرنے والااس پر ناپسندیدگی کا اظہار کرتا ہے اور اس کے عدل وانصاف پر انگلی اٹھاتا ہے۔([6])  اس طرح وہ اللہ عَزَّ  وَجَلَّ کی ناراضی مول لیتا ہے۔

سوال      حسدسے نیکیوں کوکیانقصان پہنچتا  ہے؟

جواب     حضرت انس بن مالک رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہ سے روایت ہے کہ رسولُ اﷲ صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمنے فرمایا: حسد نیکیوں کو اس طرح کھا تا ہے جس طرح آگ لکڑی کو کھاتی ہے۔([7])

سوال      پچھلی اُمت سے اِس اُمت میں آنے والی باطنی بیماریاں کونسی ہیں؟

جواب     حضرت زبیر بن عوام رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہسے روایت ہے کہ حضور نبیٔ کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشادفرمایا: اگلی اُمت کی بیماری تمہاری طرف بھی آئی وہ بیماری حسدو بغض ہے۔([8])

سوال   حسد وبغض انسان کے دین پرکیا اثرات ڈالتے ہیں؟

جواب   یہ باطنی اَمراض  انسان کے دین کو تباہ کردیتے ہیں۔([9])

غصّہ

سوال   غصہ کسے کہتے ہیں ؟

جواب   حکیمُ الاُمت مفتی احمد یار خان نعیمی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْوَ لِیفرماتے ہیں : غضب یعنی غصّہ نفس کے اس جو ش کانام ہے جو دوسرے سے بدلہ لینے یا اسے دفع کرنے پر ابھارے ۔([10])

سوال   غصہ پینے کی کیا فضیلت ہے ؟

 جواب  حضور اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کا فرمان ہے: جو غصہ پی جائے گا حالانکہ وہ نافذ کرنے پر قدرت رکھتا تھا تو اللہعَزَّ وَجَلَّ   قیامت کے دن اس کے دل کو اپنی رضا سے معمور فرمادے گا۔([11])

سوال   کیا غصہ حرام ہے ؟

جواب   عوام میں یہ غلط مشہور ہے کہ غصہ حرام ہے ۔ غصہ ایک غیر اختیاری اَمر ہے،  انسان کو آہی جاتا ہے ،  اس میں اس کا قصور نہیں ،  ہاں غصہ کا بے جا استعمال برا ہے۔([12])

سوال   غصے کے سبب جنم لینے والی کوئی چھ بُرائیاں بیان کیجئے؟

جواب     غصے سے تقریباً ۱۶ برائیاں جنم لیتی ہیں جن میں سے چھ یہ ہیں : (۱)حسد (۲) غیبت (۳) چغلی(۴) قطع تعلق (۵) جھوٹ اور(۶) گالی گلوچ۔([13])

سوال      اگر غصہاللہعَزَّوَجَلَّکی ناراضی  پرختم ہوتو کیا وعید ہے؟

 



2   مرآۃ المناجیح ، ۶/۶۰۸۔

3   در منثور، پ۱، البقرۃ، تحت الآیۃ: ۳۴، ۱/۱۲۵۔

4   در منثور، پ۱، البقرۃ، تحت الآیۃ: ۳۴، ۱/۱۲۵۔

5   در منثور، پ۱، البقرۃ، تحت الآیۃ: ۳۴، ۱/۱۲۵۔

1   مجمع الزوائد، کتاب الادب، باب ما جاء فی الغیبۃ والنمیمۃ، ۸/۱۷۲، حدیث: ۱۳۱۲۶۔

2   احیاء العلوم، کتاب ذم الغضب والحقد والحسد، القول فی ذمّ الحسد وفی حقیقتہ۔۔۔الخ، ۳/۲۴۲۔

3   ابن ماجہ، کتاب الزھد، باب الحسد، ۴/۴۷۳، حدیث:۴۲۱۰۔

4   ترمذی، کتاب صفۃ القیامۃ۔۔۔الخ ، ۵۶-باب، ۴/۲۲۸، حدیث: ۲۵۱۸۔

1   ترمذی، کتاب صفۃ القیامۃ    الخ ، ۵۶-باب، ۴/۲۲۸، حدیث: ۲۵۱۸۔

2   مرآۃ المناجیح ، ۶/۶۵۵۔

3   کنز العمال، کتاب الاخلاق، قسم الاقوال، ۳/۱۶۳، حدیث: ۷۱۶۰۔

4