Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

جواب     بدگمانی کے حرام ہونے کی دوصورتیں : (1)بدگمانی کودل پر جمالینا۔علامہ بدرالدین عینی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی فرماتے ہیں: گمان وہ حرام ہے جس پر اِصرار کیا جائے اور اُسے اپنے دل پر جمالیا جائے۔([1]) (2)بدگمانی کو زبان پر لے آنا یا اس کے تقاضے پر عمل کرلینا۔علامہ عبدالغنی نابلسی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی فرماتے ہیں: بدگمانی اس صورت میں حرام ہے جب اس کا اثراعضاء پر ظاہر ہو ، یوں کہ اس کے تقاضے پر عمل کیا جائے ۔([2])

سوال      برے گمان کے دل میں جم جانے کی پہچان کیا ہے؟

جواب     جس کے بارے میں اسے بدگمانی ہے اس کے متعلق پہلے جیسی قلبی کیفیت نہ

  رہے،  اس سے بہت نفرت کرنے لگے،  اسے بوجھ تصور کرے ،  اس کے احوال کی رعایت اور اس کی عزت کرنا چھوڑدے۔([3])

سوال   بدگمانی سے  کونسے باطنی اَمراض پیدا ہوتے ہیں؟

جواب   بدگمانی سے بغض اور حسد جیسے باطنی اَمراض بھی پیدا ہوتے ہیں۔([4])

سوال   بدگمانی کو دور کرنے کا علاج  کیا ہے؟

جواب   بدگمانی سے توجہ ہٹادی جائے ۔حدیثِ پاک میں ہے  کہ جب تم بدگمانی کرو تو اس پر جمے نہ رہو۔([5])

سوال   حدیثِ پاک میں اچھے گمان  کے بارے میں کیا فرمایا گیا ہے؟

جواب             حضور نبیٔ مکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا: اچھا گمان اچھی عبادت  سے ہے۔([6])

سوال   بدترین جھوٹ  کیا ہے؟

جواب   حدیثِ پاک میں بدگُمانی کو بدترین جھوٹ فرمایا گیا ہے۔([7])

سوال   مسلمان سے بدگمانی پر حدیث شریف میں کیا وعید آئی ہے؟

جواب   حضور تاجدارِ رسالت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا: جس نے اپنے مسلمان بھائی سے بُرا گمان رکھا، بے شک اس نے اپنے ربّ عَزَّ  وَجَلَّ سے برا گُمان رکھا۔([8])

حرص

سوال   حرص کسے کہتے ہیں؟

جواب   ارادے میں خواہش کی زیادتی حرص کہلاتی ہے۔([9])دوسرے لفظوں میں ”کسی چیز سے جی نہ بھرنا اور ہمیشہ زیادتی کی خواہش کرنا حرص ہے۔“([10])

سوال   حدیث شریف میں حرص کی  کس طرح مذمت فرمائی گئی ہے ؟

جواب   حضور  نبیِّ رحمت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا: اگر انسان کے پاس سونے کی دو وادیاں ہوں تو وہ تیسری وادی کی خواہش کرے گا اور انسان کے پیٹ کو مٹی کے سوا کوئی چیز نہیں بھر سکتی اور جو شخص توبہ کرتا ہے اللہ عَزَّ  وَجَلَّ اس کی توبہ قبول فرماتا ہے۔([11])

سوال   کیاکبھی حرص  اچھی بھی ہوتی  ہے؟

جواب   جی  ہاں، حکیم الامت مفتی احمد یار خان نعیمی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی فرماتے ہیں: دنیاوی حرص بُری ہے دینی حرص اچھی ہے۔([12])

سوال      بُری حرص  کی وضاحت کیجئے؟

جواب   بُری حرص یہ ہے کہ اپنا حصہ حاصل کرلینے کے باوجود دوسرے کے حصے کی لالچ رکھے ۔ ([13])

سوال   کیا حرص کا معاملہ صرف د ولت ہی میں ہوا کرتا ہے؟

جواب   ایسا نہیں ہے۔لالچ اور حرص کا جذبہ خوراک ،  لباس،  مکان ،  سامان،  دولت،  عزت،  شہرت الغرض ہر نعمت میں ہوا کرتا ہے۔ ([14])

 



2   عمدۃ القاری، کتاب البروالصلۃ ، باب ماینھی ۔۔۔الخ، ۱۵/۲۱۸، تحت الحدیث:۶۰۶۵۔

3   حدیقۃ ندیۃ، الخلق الرابع والعشرون ، ۲/۱۳۔

1   احیاء العلوم، کتاب آفات اللسان ، الآفۃ الخامسۃ العشرۃالغیبۃ، بیان تحریم الغیبۃ بالقلب، ۳/۱۸۶۔

2   فتح الباری، کتاب الادب، باب ما ینہی عن التحاسد والتدابر، ۱۱/۴۱۰، تحت الحدیث: ۶۰۶۶۔

3   معجم کبیر، باب من اسمہ الحارث، حارثۃ بن النعمان ۔۔۔الخ ، ۳/۲۲۸، حدیث: ۳۲۲۷۔

4   ابوداود، کتاب الادب، باب  فی حسن الظن، ۴/۳۸۷، حدیث۴۹۹۳۔

5   بخاری، کتاب الادب، باب یا ایھا الذین آمنوا اجتنبوا کثیراً من الظن    الخ ، ۴/۱۱۷، حدیث: ۶۰۶۶۔

1   درمنثور، پ۲۶، الحجرات، تحت الآیۃ: ۱۲، ۷/۵۶۶۔

2   مرقاۃ المفاتیح ، کتاب الرقاق، باب الامل والحرص، ۹/ ۱۱۹۔

3   مرآۃ المناجیح، ۷/۸۶۔

4   مسلم، کتاب الزکاۃ، باب لو ان لابن آدم...الخ، ص ۵۲۱، حدیث: ۱۰۴۸۔

5   مرآۃ المناجیح، ۱/ ۲۲۲۔

1   مرقاۃ المفاتیح ، کتاب الرقاق، باب الامل والحرص، ۹/ ۱۱۹۔

2   جنتی زیور، ص۱۱۱۔



Total Pages: 99

Go To