Book Name:Dilchasp Malomaat Sawalan Jawaaban Part 01

جواب   اُم المؤ منین حضرت سیدتنا عائشہ صدیقہ رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہَافرماتی ہیں کہ حضور نبیِّ رحمت صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے مَحَلّوں میں مسجِدیں بنانے کا حکم دیا اور یہ کہ وہ صاف اور خوشبودار رکھی جائیں۔([1])

سوال      کونسے صحابی مسجدِنبوی شریف میں  خوشبو کی دھونی دیتے تھے؟

جواب     امیرالمومنین حضرت سیدنا فاروقِ اعظم رَضِیَ اللہُ تَعَالٰی عَنْہجمعۃ المبارک کے دن مسجدِ نبوی شریفعَلٰی صَاحِبِہَا الصَّلٰوۃُ وَالسَّلَاممیں خوشبو کی دھونی دیا کرتے تھے۔([2])

سوال      منہ میں  بدبو ہوتو کیا مسجد جاسکتے ہیں ؟

جواب     جی نہیں ! مُنہ میں بدبو ہو تو مسجِد میں جانا حرام ہے۔([3])

سوال      مسجد میں داخل ہوتے ہی سب سے پہلے کیا کرنا چاہئے؟

جواب     جب سے(مسجد میں) داخل ہو باہر آنے تک اعتکاف کی نیت کرلے انتظارِ نماز وادائے نماز کے ساتھ اعتکاف کا بھی ثواب پائے گا۔([4])

سوال      کچّا لہسن اور کچّی پیاز کھاکر مسجِد میں جانا کیسا؟

جواب     صدرُالشریعہ  حضرت مفتی محمد امجد علی اعظمی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللہِ الْقَوِی فرماتے ہیں: مسجِد میں کچا لہسن اور کچی پیاز کھانا یا کھاکر جانا جائز نہیں جب تک کہ بو باقی ہو۔([5])

سوال      مسجد میں کونسی بدبودار چیزوں کی ممانعت ہے؟

جواب     (۱)کچّا لہسن(۲)کچّی پیاز (۳)گَندنا (یہ لہسن سے ملتی جُلتی ترکاری ہے)(۴)مُولی (۵)کچّا گوشت  (۶)مِٹّی کا تیل(۷)وہ دِیا سَلائی جس کے رگڑنے میں بُو اُڑتی ہو (۸)رِیاح خارج کرنا  (۹)بدبودار زَخم      (۱۰)کوئی بدبودار دوا لگانا۔([6])

سوال   مسجد میں دنیاوی باتیں کرنے کا کیا حکم ہے؟

جواب   مسجد میں دنیا کی باتیں کرنی مکروہ ہیں۔ مسجد میں کلام کرنا نیکیوں کو اس طرح کھاتا ہے جس طرح آگ لکڑی کو کھاتی ہے،  یہ جائز کلام کے متعلق ہے ناجائز کلام کے گناہ کا کیا پوچھنا۔([7])

سوال   مسجد کے کچھ آداب بیان کریں؟

جواب   (۱)مسجِد میں دوڑنایازورسے قدم رکھنا، جس سے دَھمک پیداہومنع ہے۔(۲) مسجِدکے اندر کسی قسم کاکُوڑاہرگزنہ پھینکیں۔(۳)مسجِد میں جھاڑو دینے میں جو گَرد اور کُوڑا وغیرہ نکلے وہ ایسی جگہ مت ڈالئے جہاں بے اَدَبی ہو۔(۴) مسجِدکے فرش پرکوئی چیزپھینکی نہ جائے بلکہ آہِستہ سے رکھ دی جائے۔(۵) وُضُوکرنے کے بعد اَعضائے وُضُوسے ایک بھی چھینٹ پانی فرشِ مسجد پر نہ گرے۔(۶) مسجِدمیں اگرچھینک یاکھانسی آئے توکوشِش کریں آہِستہ آواز نکلے۔(۷) مسخرہ پن ویسے ہی ممنوع ہے اورمسجِدمیں سخت ناجائز۔ (۸)مسجِد میں کسی طرف پاؤں نہ پھیلائے۔([8])

کسب اور تجارت

سوال   سب سے بہترکمائی کونسی ہے؟

جواب   حضورِ اَنور صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمنےاِرشاد فرمایا: سب سے بہتر غذا وہ ہے جو انسان اپنے ہاتھوں کی کمائی سے کھائے ، حضرت داؤد عَلَیْہِ السَّلَام بھی اپنی کمائی سے کھاتے تھے۔([9])

سوال   اِسلام میں  حلال کمائی کی کیا اہمیت ہے؟

جواب   حضورنبی کریم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا: حلال روزی طلب کرنا فر ض کے بعد فرض ہے۔([10])

سوال   جھوٹ سے  رزق  میں کیا اثرپڑتا ہے؟

جواب   حضورِ اکرم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے فرمایا: والدین کے ساتھ نیک سلوک عمر میں اضافہ کرتا،  جھوٹ رزق میں کمی کرتا اور دعا قضا کو ٹال دیتی ہے۔([11])

سوال   تاجر کو کیسا ہونا چاہئے؟

جواب   حضوررحمتِ عالَم صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم نے ارشاد فرمایا: بے شک سب سے پاکیزہ کمائی ان تاجروں کی ہے جو بات کریں تو جھوٹ نہ بولیں،  جب ان کے پاس امانت رکھی جائے تو خیانت نہ کریں،  وعدہ کریں تو خلاف ورزی نہ کریں،  جب کوئی چیز خریدیں تو اس میں برائی نہ نکالیں اور جب کچھ بیچیں تو ا س کی بیجاتعریف نہ کریں،  جب ان پر کسی کا کچھ آتا ہو تو دینے میں پس وپیش نہ کریں اور جب انہوں نے کسی سے لینا ہو تو وصولی کے لیےتنگی نہ کریں۔([12])

سوال      کیا کمانے کے لیے بھی علمِ دین ضروری ہے؟

 



4   ابوداود، کتاب الصلاۃ، باب اتخاذ المساجد فی الدور، ۱/۱۹۷، حدیث:۴۵۵۔

1   مسند ابی یعلی، مسند عمر بن الخطاب، ۱/ ۱۰۳، حدیث: ۱۸۵۔

2   فتاوی رضویہ، ۷/ ۳۸۴، ملخصاً۔

3   فتاویٰ رضویہ، ۵/۶۷۴۔

4   بہار شریعت، حصہ۳، ۱/ ۶۴۸۔

5   ردالمحتار، کتاب الصلاۃ، مطلب فی الغرس فی المسجد، ۲/ ۵۲۵۔

1   بہار شریعت، حصہ ١٦، ۳/۴۹۹۔

2   نیکی کی دعوت، ص۴۱۷-۴۲۰ملخصاً وملتقطاً۔

1    بخاری ، کتاب البیوع ، باب کسب الرجل وعملہ بیدہ، ۲/۱۱، حدیث: ۲۰۷۲۔

2    شعب الایمان ، الستون من شعب الایمان     الخ، ۶/۴۲۰ ، حدیث: ۸۷۴۱۔

3   الکامل لابن عدی، ۶۰۰-خالد بن اسماعیل    الخ ، ۳/۴۷۹۔

4   شعب الایمان ، الرابع والثلاثون من شعب الایمان     الخ، ۴/۲۲۱ ، حدیث: ۴۸۵۴۔



Total Pages: 99

Go To